உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    J&K Congress:غلام نبی آزاد نے کانگریس کمپین کمیٹی چیف کا عہدہ ٹھکرایا، کچھ گھنٹے پہلے ہی کیا گیا تھا تقرر

    Youtube Video

    بات اتنی بڑھ گئی تھی کہ کانگریس قیادت نے غلام نبی آزاد کو راجیہ سبھا کا ٹکٹ تک نہیں دیا۔ پارٹی نے اب غلام نبی آزاد کو انتخابی مہم کمیٹی کا چیئرمین بنانے کے ساتھ ساتھ سیاسی امور کمیٹی اور رابطہ کمیٹی کا سربراہ بھی بنایا ہے۔

    • Share this:
      Jammu Kashmir Congress: کانگریس کے سینئر لیڈر غلام نبی آزاد نے جموں و کشمیر کانگریس کی مہم کمیٹی کے سربراہ کا عہدہ ٹھکرا دیا ہے۔ منگل کو ہی کانگریس نے غلام نبی آزاد کو کشمیر میں مہم کمیٹی سمیت کئی کمیٹیوں کا سربراہ بنانے کا اعلان کیا تھا۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ غلام نبی آزاد ناراض ہیں کہ ان کی سفارشات کو یکسر نظر انداز کیا گیا، اس لیے انہوں نے انتخابی مہم اور سیاسی کمیٹی دونوں سے استعفیٰ دے دیا۔

      غلام نبی آزاد کے قریبی ذرائع نے یہ بھی بتایا کہ وہ پارٹی قیادت پر اپنا ارادہ پہلے ہی واضح کر چکے ہیں کہ وہ کوئی عہدہ نہیں چاہتے۔ اس کے بعد بھی ان کے نام کا اعلان کیا گیا۔ جموں و کشمیر کانگریس کے نئے صدر وقار رسول وانی، جنہیں منگل کو ہی مقرر کیا گیا، غلام نبی آزاد کے بے حد خاص مانے جاتے ہیں۔

      کانگریس نے ریاستی یونٹ ازسرنو تشکیل دی
      غور طلب ہے کہ جموں و کشمیر میں اسمبلی انتخابات کے درمیان کانگریس نے بگل بجاتے ہوئے ریاستی یونٹ کی تشکیل نو کی ہے۔ کانگریس نے سابق وزیر اعلیٰ غلام نبی آزاد کو جموں و کشمیر کی مہم کمیٹی کا سربراہ مقرر کیا تھا۔ کانگریس صدر سونیا گاندھی کا یہ فیصلہ اس لحاظ سے خاص مانا جا رہا تھا کہ سابق کانگریس لیڈر کپل سبل اور سینئر کانگریس لیڈر آنند شرما اور دیگر کے ساتھ غلام نبی آزاد نے ہی ایک طرح سے پارٹی قیادت کے خلاف مورچہ کھول دیا تھا۔

      یہ بھی پڑھیں:

      Grenade Attack: کشمیر میں دہشت گردوں نے دو مقامات پرکیا حملہ، پولیس اہلکار سمیت دولوگ زخمی

      یہ بھی پڑھیں:
      Jammu and Kashmir: ہڑتال اور پتھراو کو اب پیچھے چھوڑ دیا ہے: منوج سنہا

      بات اتنی بڑھ گئی تھی کہ کانگریس قیادت نے غلام نبی آزاد کو راجیہ سبھا کا ٹکٹ تک نہیں دیا۔ پارٹی نے اب غلام نبی آزاد کو انتخابی مہم کمیٹی کا چیئرمین بنانے کے ساتھ ساتھ سیاسی امور کمیٹی اور رابطہ کمیٹی کا سربراہ بھی بنایا ہے۔ تاہم اب غلام نبی آزاد کی جانب سے اس عہدے کو مسترد کیے جانے کے بعد بحثوں کا بازار گرم ہونا لازمی ہے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: