ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

کانگریس لیڈر کپل سبل کی وزیراعظم مودی پر تنقید، کہا- انہیں اب بدعنوانی پر غصہ نہیں آتا

کانگریس کے سینئر لیڈر کپل سبل نےکہا کہ گجرات ہائی کورٹ کے اس فیصلے سے واضح ہوگیا ہے کہ وزیراعظم نریندر مودی کو اب بدعنوانی پرغصہ نہیں آتا۔

  • UNI
  • Last Updated: May 13, 2020 01:43 AM IST
  • Share this:
کانگریس لیڈر کپل سبل کی وزیراعظم مودی پر تنقید، کہا- انہیں اب بدعنوانی پر غصہ نہیں آتا
کانگریس لیڈر کپل سبل نے کہا- مودی کو بدعنوانی پر اب غصہ نہیں آتا۔

نئی دہلی: کانگریس نے مرکزی حکومت پر آئینی ڈھانچہ کو کمزور کرنے کا الزام لگاتے ہوئے کہا ہے کہ ملک کی باگ ڈور سنبھالنے سے پہلے بدعنوانی کے خلاف سڑکوں پر اترنے کی بات کرنے والے وزیراعظم نریندر مودی اس پر خاموش ہیں اور بدعنوانی کے سلسلے میں اب انہیں غصہ نہیں آتا ہے۔ کانگریس کے سینئر لیڈر کپل سبل نے منگل کو یہاں نامہ نگاروں کی کانفرنس میں کہا ہے کہ گجرات ہائی کورٹ نے ریاست میں برسراقتدار بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کی قیادت والی حکومت کے وزیر تعلیم بھوپندر سنگھ چڈاسما کو اسمبلی انتخابات میں ڈھولکا سیٹ پر ملی جیت کو رد کردیا ہے۔ اس فیصلے کو بی جے پی کی بدعنوانی کی جیتی جاگتی مثال قرار دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ چڈاسما کے خلاف فوری طور سے سخت کارروائی ہونی چاہئے۔


کانگریس لیڈر کپل سبل نےکہا کہ گجرات ہائی کورٹ کے اس فیصلے سے واضح ہوگیا ہے کہ وزیراعظم نریندر مودی کو اب بدعنوانی پرغصہ نہیں آتا۔ اگر حقیقت میں وزیر اعظم مودی بدعنوانی کے خلاف ہیں اور وہ بدعنوانی کو ختم کرنا چاہتے ہیں تو انہیں گجرات حکومت کے اس وزیر کو فوری طور سے عہدہ سے برخاست کرکے ان کے خلاف قانونی کارروائی کرنی چاہئے اور فیصلہ کرنا چاہئے کہ فیصلے کو چیلنج نہیں کیاجائے گا۔


کانگریس لیڈر کپل سبل نے کہا کہ گجرات ہائی کورٹ کے اس فیصلے سے واضح ہوگیا ہے کہ وزیراعظم نریندر مودی کو اب بدعنوانی پرغصہ نہیں آتا۔
کانگریس لیڈر کپل سبل نے کہا کہ گجرات ہائی کورٹ کے اس فیصلے سے واضح ہوگیا ہے کہ وزیراعظم نریندر مودی کو اب بدعنوانی پرغصہ نہیں آتا۔


واضح رہے کہ گجرات میں بی جے پی کے کافی طاقتور لیڈر مانے جانے والے 71 سالہ بھوپندر سنگھ  چڈاسما نے گزشتہ اسمبلی انتخابات میں کانگریس کے اشوک راٹھور کو 327 ووٹوں سے ہرایا تھا اور انتخابی افسر نے 429 پوسٹل بیلٹ کو خارج کرکے انہیں ووٹنگ میں شامل نہیں کیا تھا۔ اشوک راٹھور نے اسے انتخابی گڑبڑی قرار دیتے ہوئے گجرات ہائی کورٹ کا دروازہ کھٹکھٹایا تھا، جہاں آج فیصلہ ان کے حق میں آیا ہے۔
First published: May 13, 2020 01:39 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading