உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کانگریس لیڈر کیرتی آزاد آج دہلی میں ٹی ایم سی میں ہوں گے شامل: ذرائع

    کانگریس لیڈر کیرتی آزاد آج دہلی میں ٹی ایم سی میں ہوں گے شامل

    کانگریس لیڈر کیرتی آزاد آج دہلی میں ٹی ایم سی میں ہوں گے شامل

    Congress leader Kirti Azad to join TMC today: کانگریس لیڈر اور سابق رکن پارلیمنٹ کیرتی آزاد (kirti azad) دہلی ترنمول کانگریس (Trinamool Congress) میں شامل ہوسکتے ہیں۔ ذرائع کے مطابق، کیرتی آزاد آج دہلی میں ترنمول کانگریس کی رکنیت حاصل کرسکتے ہیں۔

    • Share this:
      نئی دہلی: کانگریس لیڈر اور سابق رکن پارلیمنٹ کیرتی آزاد (kirti azad) دہلی ترنمول کانگریس (Trinamool Congress) میں شامل ہوسکتے ہیں۔ ذرائع کے مطابق، کیرتی آزاد آج دہلی میں ترنمول کانگریس کی رکنیت حاصل کرسکتے ہیں۔ واضح رہے کہ مغربی بنگال (West Bengal) کی وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی (Mamata Banerjee) تین دن کے دورے پر دہلی آئی ہوئی ہیں۔ ایسا مانا جا رہا تھا کہ ممتا بنرجی اپنے اس دورے میں کانگریس صدر سونیا گاندھی سے ملاقات کرسکتی تھیں۔ اس ملاقات سے پہلے ہی ٹی ایم سی نے کانگریس کو بڑا جھٹکا دے دیا ہے۔

      گوا کے کئی لیڈران کے ٹی ایم سی میں جانے سے پہلے ہی کانگریس اور ترنمول کانگریس کے رشتوں میں تلخی آچکی ہے۔ ایسے میں کیرتی آزاد کا ٹی ایم سی میں جانا دونوں ہی پارٹیوں کے درمیان کی دوری کو مزید بڑھا سکتا ہے۔



      واضح رہے کہ کیرتی آزاد بہار کا بڑا چہرہ ہیں۔ ایسے میں اگر کیرتی آزاد کانگریس کا ہاتھ چھڑا کر ٹی ایم سی کے پالے میں چلے جاتے ہیں تو ترنمول کانگریس کو بہار میں ایک بڑا چہرہ مل جائے گا۔ کیرتی آزاد کے والد کانگریس کے سینئر لیڈر اور بہار کے وزیر اعلیٰ رہ چکے ہیں۔ کھیل کے میدان سے سیاست کی میدان میں قدم رکھنے والے کیرتی آزاد نے اپنے سیاسی سفر کا آغاز بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے ساتھ کیا تھا۔ حالانکہ بی جے پی لیڈر ارون جیٹلی سے ان کے رشتوں میں تلخیاں اس قدر بڑھیں کہ انہوں نے گزشتہ لوک سبھا الیکشن سے پہلے کانگریس کا دامن تھام لیا۔

      سال 2019 میں کیرتی آزاد نے کانگریس کی ٹکٹ پر الیکشن لڑا تھا، لیکن وہ جیت نہیں سکے۔ گزشتہ کافی وقت سے ایسی خبر آرہی تھی کہ کیرتی آزاد کانگریس میں لمبے وقت سے نظر انداز کئے جا رہے تھے۔ اس تعلق میں انہوں نے پارٹی کے اعلیٰ افسران سے بات بھی کی تھی۔ بیچ میں ایسی بھی جانکاری آئی تھی کہ انہیں دہلی کانگریس کا صدر بنایا جاسکتا ہے۔ حالانکہ پارٹی کے فیصلوں میں ہو رہی تاخیر کے بعد اب انہوں نے ٹی ایم سی میں جانے کا فیصلہ کرلیا ہے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: