உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    جے این یو تشدد پر راہل گاندھی نے کیا ٹویٹ ، کہا : بہادر طلبہ کی آواز سے ڈر رہے ہیں کچھ لوگ

    جے این یو تشدد پر راہل گاندھی نے کیا ٹویٹ ، کہا : بہادر طلبہ کے آواز سے ڈر رہے ہیں کچھ لوگ

    جے این یو تشدد پر راہل گاندھی نے کیا ٹویٹ ، کہا : بہادر طلبہ کے آواز سے ڈر رہے ہیں کچھ لوگ

    راہل گاندھی نے ٹویٹ کیا کہ ہمارا ملک فسطائی طاقتوں کے قابو میں ہے ، جے این یو میں جو آج ہوا یہ اسی کی عکاسی کررہا ہے ۔

    • Share this:
      جواہر لال نہرو یونیورسٹی میں طلبہ اور اساتذہ پر ہوئے حملے کے بعد کانگریس کے سینئر لیڈر اور سابق صدر راہل گاندھی نے اپنا رد عمل ظاہر کیا ہے ۔ راہل گاندھی نے ٹویٹ کیا کہ ہمارا ملک فسطائی طاقتوں کے قابو میں ہے ، جے این یو میں جو آج ہوا یہ اسی کی عکاسی کررہا ہے ۔ راہل گاندھی نے کہا کہ نقاب پوشوں کے ذریعہ جے این یو کے طلبہ اور ٹیچروں پر کیا گیا بے رحمانہ حملہ ، جس میں کئی سنگین طور پر زخمی ہوگئے ، چونکانے والا ہے ۔


      خیال رہے کہ جواہر لال نہرو یونیورسٹی انتظامیہ نے اتوار کو کہا کہ لاٹھی سے لیس کچھ نقاب پوش بدمعاش یونیورسٹی کیمپس میں گھوم رہے تھے اور وہاں کی املاک کو نقصان پہنچانے کے ساتھ لوگوں پر حملہ کررہے تھے ، جس کے بعد لا اینڈر آرڈر کو برقرار رکھنے کیلئے پولیس کو بلانا پڑا ۔



      جے این یو کیمپس میں تشدد کے بعد جے این یو رجسٹرار پرمود کمار نے ایک بیان میں کہا کہ پورے جے این یو کمیونٹی کیلئے ضروری پیغام ہے اور کمپلیکس میں لا اینڈر آرڈر کی پریشانی پیدا ہوگئی ہے ۔ جے این یو انتظامیہ نے حالات قابو میں رکھنے کیلئے پولیس کو بلایا ہے ۔ یہ امن برقرار رکھنے اور محتاط رہنے کا وقت ہے ۔ شرپسندوں سے نمٹنے کی کوشش جاری ہے ۔


      ادھر دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے ایل جی انل بیجل سے اس معاملہ پر بات چیت کی ۔ کیجریوال نے ٹویٹ کرکے اس کی جانکاری دی ۔ کیجریوال نے لکھا کہ میں نے ایل جی سے بات کی اور ان سے امن بحال کرنے کیلئے فورا حکم جاری کرنے کیلئے کہا ۔ انہوں نے کہا کہ وہ اس معاملہ کو نزدیکی سے دیکھ رہے ہیں اور اس کو لے کر سبھی ضروری قدم اٹھا رہے ہیں ۔
      First published: