کانگریس رکن اسمبلی آدیتی سنگھ بولیں۔ پارٹی مخالف سرگرمیوں میں ملوث رہنماؤں کو نوٹس کیوں نہیں بھیجا

اترپردیش میں کانگریس کے واحد بچے گڑھ رائے بریلی سے پارٹی کی رکن اسمبلی آدیتی سنگھ کے تیور باغیانہ بنے ہوئے ہیں۔ پارٹی کی طرف سے ملے وجہ بتاو نوٹس کا ایک طرح سے انہوں نے مذاق اڑایا اور سوال کھڑا کردیا کہ کہاں ہے نوٹس۔

Oct 05, 2019 12:34 PM IST | Updated on: Oct 05, 2019 12:36 PM IST
کانگریس رکن اسمبلی آدیتی سنگھ بولیں۔ پارٹی مخالف سرگرمیوں میں ملوث رہنماؤں کو نوٹس کیوں نہیں بھیجا

کانگریس رکن اسمبلی آدیتی سنگھ

لکھنئو۔ اترپردیش میں کانگریس کے واحد بچے گڑھ رائے بریلی سے پارٹی کی رکن اسمبلی آدیتی سنگھ کے تیور باغیانہ بنے ہوئے ہیں۔ پارٹی کی طرف سے ملے وجہ بتاو نوٹس کا ایک طرح سے انہوں نے مذاق اڑایا اور سوال کھڑا کردیا کہ کہاں ہے نوٹس۔

پارٹی کے بائیکاٹ کے بعد بھی مہاتما گاندھی کے یوم پیدائش پر اسمبلی کے خصوصی اجلاس میں شامل ہونے والی آدیتی سنگھ کو کانگریس قانون ساز پارٹی کے لیڈر نے کل جمعہ کو نوٹس بھیج کر دو دن میں جواب مانگا ہے۔ اس نوٹس کے تعلق سے انہوں نے کہا کہ ان کو کوئی نوٹس نہیں ملا ہے۔ پارٹی کے لیڈر نے میڈیا میں نوٹس دیا ہوگا۔ ان کے تیور پارٹی کے اس سلوک کی وجہ سے کافی تلخ ہیں۔

مہاتما گاندھی کے 150ویں یوم پیدائش پر بلائے گئے مقننہ کے خصوصی اجلاس پر کانگریس میں گھمسان تیز ہوگیا ہے۔ بائیکاٹ کے باوجود ایوان کی کارروائی میں شامل ہونے پر پارٹی کی رکن اسمبلی آدیتی سنگھ کو کانگریس قانون ساز پارٹی کے لیڈر اجیت کما ر للو نے نظم و ضبط توڑنے کا نوٹس بھیجتے ہوئے دو دن میں جواب مانگا ہے۔ ادھر رائے بریلی میں کانگریسیوں نے آدیتی کے دفتر کے باہر مظاہرہ بھی کیا۔

آدیتی سنگھ نے کہا کہ اسمبلی کے خصوصی اجلاس میں رکن اسمبلی راجیش سنگھ اور قانون ساز کونسل کے رکن دنیش سنگھ بھی شامل ہوئے تھے۔ قانون ساز پارٹی کے لیڈر  نے کیا انہیں بھی نوٹس بھیجا ہے۔ اسمبلی کے 2 اکتوبر کو 36گھنٹے خصوصی اجلاس کے کانگریس کے بائیکاٹ کے باوجود آدیتی سنگھ نے ایوان میں پہنچ کرتمام کو چونکا دیا تھا۔ ایوان میں آدیتی نے کہا تھا کہ وہ ایک تعلیم یافتہ رکن اسمبلی ہیں اور یہاں ترقی پر بحث ہورہی ہے اس لئے انہوں نے آنا ضروری سمجھا۔

Loading...

آدیتی نے اس سے پہلے پارٹی لائن سے الگ جموں کشمیر سے دفعہ 370ہٹائے جانے کے مرکزی حکومت کے فیصلہ کی حمایت کی تھی۔ کانگریس قانون ساز پارٹی کے لیڈر اجے کمار للو نے آدیتی سنگھ کو نوٹس جاری کرکے دو دن میں جواب مانگا ہے۔ اجیت کمار اور ایک دیگر رکن اسمبلی انوراگ مشرا نے کہا کہ آدیتی کو پارٹی کے نظم و ضبط کو ماننا ہی ہوگا۔ نظم و ضبط کی خلاف ورزی کسی بھی طرح برداشت نہیں ہوگی۔ کانگریس کی رکن اسمبلی ہوتے ہوئے وہ پارٹی کی رائے سے الگ نہیں ہوسکتیں۔ اس سے اچھا ہے کہ وہ پارٹی سے استعفی دے دیں۔

Loading...