ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

لوک سبھا میں کانگریس رکن پارلیمنٹ کا بڑا الزام- پولس نے اراکین پارلیمنٹ کے ساتھ کی مارپیٹ

کانگریس کے رکن پارلیمنٹ رونیت سنگھ نے آج لوک سبھا اسپیکر اوم برلا کے سامنے اراکین پارلیمنٹ کی مراعات کا معاملہ اٹھاتے ہوئے کہا کہ دہلی پولس نے ان پر طاقت کا استعمال کیا۔ اس پر لوک سبھا اسپیکر نے تحریری شکایت پر رپورٹ طلب کی ہے۔

  • Share this:
لوک سبھا میں کانگریس رکن پارلیمنٹ کا بڑا الزام- پولس نے اراکین پارلیمنٹ کے ساتھ کی مارپیٹ
لوک سبھا میں کانگریس رکن پارلیمنٹ کا بڑا الزام- پولس نے اراکین پارلیمنٹ کے ساتھ کی مارپیٹ

نئی دہلی: کانگریس کے رکن پارلیمنٹ رونیت سنگھ نے آج لوک سبھا اسپیکر اوم برلا کے سامنے اراکین پارلیمنٹ کی مراعات کا معاملہ اٹھاتے ہوئے کہا کہ دہلی پولس نے ان پر طاقت کا استعمال کیا۔ لوک سبھا میں آج کارروائی شروع ہوتے ہی رکن پارلیمنٹ رونیت سنگھ نے کہا کہ پیر کی شام سات بجے وہ اور ان کے ساتھ تین دیگر اراکین پارلیمنٹ کمپلیکس کے صدر دروازے کے باہر کسان بل کے خلاف پرامن طور پر کینڈل مارچ کے لیے گئے۔ اسی دوران تقریباً 100 کی تعداد میں پولس اہلکار وہاں پہنچے اور ان کے ساتھ زور- زبردستی کی، جس کی وجہ سے انھیں جسمانی چوٹ پہنچی۔



کانگریس رکن پارلیمنٹ رونیت سنگھ نے کہا کہ چاروں ممبران پارلیمنٹ کے باہر وجے چوک کے علاقے میں صرف موم بتیاں لے کرعلامتی مظاہرے کی شکل میں جانا چاہتے تھے۔ رکن پارلیمنٹ کی حیثت اپنی شناخت ظاہر کرنے کے باوجود پولس نے ان کے ساتھ مارپیٹ کی۔ انہوں نے کہا کہ جب دہلی پولس ممبران پارلیمنٹ کے ساتھ ایسی بد سلوکی کر سکتی ہے تو پھر وہ عام کسانوں اور لوگوں کے ساتھ کیسا سلوک کرتی ہوگی۔

لوک سبھا اسپیکر اوم برلا نے کہا کہ انہوں نے رونیت سنگھ کی تحریری شکایت پر رپورٹ طلب کی ہے، جس میں اس واقعہ سے متعلق ضروری معلومات دینےکو کہا گیا ہے۔ اسپیکر اوم برلا نے کہا کہ ممبروں کی حفاظت کو یقینی بنانا ان کی ذمہ داری ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ اراکین پارلیمنٹ کو اپنی حفاظت کے لئے یقین دہانی کے ساتھ ساتھ یہ یقین بھی دلاتے ہیں کہ پارلیمنٹ اجلاس کے دوران اور پارلیمنٹ کے باہران کے حقوق کا تحفظ کیا جائے گا۔


نیوز ایجنسی یو این آئی اردو کے اِن پُٹ کے ساتھ۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Sep 22, 2020 06:24 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading