ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

بلیک فنگس کے قہرپرسونیاگاندھی نےجتائی تشویش، وزیراعظم نریندرمودی کولکھا خط

سونیا گاندھی نے ہفتے کے روز وزیر اعظم کو لکھے گئے خط میں کہا کہ مرکزی حکومت نے ریاستوں سے بلیک فنگس کو وبا اعلان کرنے کو کہا ہے لیکن اس سے نمٹنے کے لئے اتنے وسائل دستیاب نہیں ہیں۔انہوں نے کہا کہ اطلاعات کے مطابق وبا کے علاج کے لئے درکار ادویات کی بازار میں بہت قلت ہے

  • Share this:
بلیک فنگس کے قہرپرسونیاگاندھی نےجتائی تشویش، وزیراعظم نریندرمودی کولکھا خط
سونیا گاندھی کی فائل فوٹو۔

کانگریس کی صدر سونیا گاندھی نے وزیر اعظم نریندر مودی کو خط لکھ کر بلیک فنگس کے بڑھتے ہوئے قہر پر تشویش کا اظہار کیا اور حکومت سے مطالبہ کیا کہ اس کے علاج معالجے کے مناسب انتظامات کرکے متاثرین کو فوری راحت دی جائے ۔ سونیا گاندھی نے ہفتے کے روز وزیر اعظم کو لکھے گئے خط میں کہا کہ مرکزی حکومت نے ریاستوں سے بلیک فنگس کو وبا اعلان کرنے کو کہا ہے لیکن اس سے نمٹنے کے لئے اتنے وسائل دستیاب نہیں ہیں۔انہوں نے کہا کہ اطلاعات کے مطابق وبا کے علاج کے لئے درکار ادویات کی بازار میں بہت قلت ہے اور ایسی صورتحال میں اس وبا کو بغیر کسی تیاری کے اعلان کر کے کیسے نمٹا جاسکتا ہے۔کانگریس کی صدر نے کہا کہ ادویہ کی شدید قلت کے ساتھ ہی، اس وبا کو آج تک آیوشمان بھارت جیسی صحت کی اسکیموں سے نہیں جوڑا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مرکزی حکومت کو چاہئے کہ وہ اس سمت میں فوری اقدامات کرے اور لوگوں کو راحت فراہم کرنی چاہئے



ہندوستان کی کئی ریاستوں کو بلیک فنگس دوائی کی قلت کا سامنا ہے۔ پچھلے کچھ دنوں میں دارالحکومت دہلی ، مہاراشٹر اور گجرات سمیت متعدد ریاستوں سے سپلائی بڑھانے کا مطالبہ کیا جارہا ہے۔ اس نایاب انفیکشن کے سب سے زیادہ تعداد مہاراشٹرا میں پائے جارہے ہیں۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق ، ملک میں بلیک فنگس کے قریب نو ہزار کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔

کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی نے بلیک فنگس کے وبا پر حکومت پر حملہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ کورونا کے ساتھ نیا وبا صرف مودی حکومت کی بدانتظامی کی وجہ سے ہندوستان میں پھیل رہا ہے۔سونیا گاندھی نے وبا کے پھیلاؤ کو روکنے کے لئے گذشتہ سال لاک ڈاؤن شروع کرنے سے پہلے وزیر اعظم نریندر مودی کے تالی اور تالی بجانے کی اپیل پر چٹکی لیتے ہوئے کہا کہ مسٹر مودی کبھی بھی اس بار بلیک فنگس کے وبا سے نمٹنے کے لئے دوبارہ تالیاں بجانے کا اعلان کرسکتے ہیں۔ راہل نے ٹویٹ کیا "مودی سسٹم کی بدانتظامی کی وجہ سے ،صرف ہندوستان میں کورونا کے ساتھ ساتھ بلیک فنگس کا وبا ہے۔ یہاںویکسین کی قلت تو ہے ہی،" اس نئے وبا کی دواؤں کی بھی بہت بڑی قلت ہے۔ اس سے نمٹنے کے لئے وزیر اعظم کو تالی تھالی بجانے کا اعلان کرتے ہی ہوں گے۔

mucarmycosis کیا ہے؟

بیماریوں کے کنٹرول اور روک تھام کے لئے امریکی محکمہ صحت کے مراکز کے مطابق ، mucarmycosis ایک سنگین انفیکشن ہے۔ اس کی بنیادی وجہ موچارامیسیٹس نامی مولڈوں کے ایک گروپ ہے۔ یہ سانچے پورے ماحول میں رہتے ہیں۔ یہ بیماری عام طور پر لوگوں کو اپنی گرفت میں لیتی ہے ، جو ایسی دوائیں لے رہے ہیں ، جو جسم میں جراثیم اور بیماریوں سے لڑنے کی صلاحیت کو کم کرتی ہے۔
Published by: Mohammad Rahman Pasha
First published: May 22, 2021 03:41 PM IST