اپنا ضلع منتخب کریں۔

    اسٹیئرنگ کمیٹی کی میٹنگ کےبعد کانگریس کااعلان، 'ہاتھ سے ہاتھ جوڑیں' مہم ہوگی شروع، پرینکا کو ملے گی بڑی ذمہ داری

    کانگریس کے صدر ملکارجن کھرگے نے اسٹیئرنگ کمیٹی کے اجلاس میں اوپر سے نیچے تک تنظیمی جوابدہی پر زور دیا

    کانگریس کے صدر ملکارجن کھرگے نے اسٹیئرنگ کمیٹی کے اجلاس میں اوپر سے نیچے تک تنظیمی جوابدہی پر زور دیا

    کھرگے کے صدر منتخب ہونے کے بعد اسٹیئرنگ کمیٹی کی یہ پہلی بڑی میٹنگ تھی۔ اس میٹنگ کے بعد بتایا گیاکہ 26 جنوری کے قریب بھارت جوڑو یاترا سری نگر پہنچے گی۔ اس کے بعد 26 جنوری سے ہاتھ سے ہاتھ جوڑو مہم کا آغازکیاجائیگا۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • New Delhi, India
    • Share this:
      آل انڈیا نیشنل کانگریس کمیٹی کے صدر ملکارجن کھرگے نے کانگریس اسٹیئرنگ کمیٹی کی میٹنگ طلب کی تھی۔ جس میں انہوں نے پارٹی کے تمام عہدیداران کو اپنے اپنے اضلاع کا احتساب کرنے کا مشورہ دیا اور کہا کہ ہر صورت عوام کے لئے کام کرنے ہوں گے۔ اس میٹنگ میں کانگریس کی سابق صدر سونیا گاندھی، اشوک گہلوت اور کئی بڑے لیڈر شامل تھے۔ اجلاس میں پارٹی کے حوالے سے بھی کئی فیصلے کیے گئے ہیں۔ جس میں یہ اعلان کیا گیا ہے کہ بھارت جوڑو یاترا کے بعد کانگریس ہاتھ سے ہاتھ جوڑو مہم شروع کرے گی۔ اس کے ساتھ ہی پرینکا گاندھی کو بھی ایک بڑی ذمہ داری سونپنے کی بات کہی گئی ہے۔

      کانگریس کا منصوبہ کیا ہے؟

      کھرگے کے صدر منتخب ہونے کے بعد اسٹیئرنگ کمیٹی کی یہ پہلی بڑی میٹنگ تھی۔ اس میٹنگ کے بعد بتایا گیاکہ 26 جنوری کے قریب بھارت جوڑو یاترا سری نگر پہنچے گی۔ اس کے بعد 26 جنوری سے ہاتھ سے ہاتھ جوڑو مہم کا آغازکیاجائیگا۔ دو ماہ تک جاری رہنے والی اس مہم کے تحت بلاک سطح پرسفر، ضلع سطح پر اورریاستی سطح پر کنونشن منعقد کیے جائیں گے۔ جس میں بھارت جوڑو یاترا اور مودی حکومت کے خلاف چارج شیٹ کا پیغام عام لوگوں تک پہنچایا جائے گا۔ کھرگے سمیت پارٹی کے تمام بڑے لیڈران ان پروگراموں میں شرکت کریں گے۔ کانگریس نے اعلان کیا ہے کہ پرینکا گاندھی ہر ریاست میں خواتین کے مارچ کی قیادت کریں گی۔

       



      کھرگے نے اسٹیئرنگ کمیٹی کی میٹنگ میں زمینی سطح پر ہونے والی تبدیلیوں کے بارے میں جانکاری حاصل کی ہے۔اس دوران ملکارجن کھرگے نے میٹنگ میں موجود تمام جنرل سکریٹریوں اور انچارجز سے زمینی سطح پر ہونے والی تبدیلیوں کے بارے میں سوال کیا۔ انہوں نے سوال کیا کہ کیا آپ تمام اضلاع کا دورہ کرتے ہیں؟ کیا آپ کو مقامی مسائل کا علم ہے؟ انہوں نے یہ بھی پوچھا کہ کتنے یونٹ ایسے ہیں جہاں پچھلے پانچ سالوں میں ضلع اور بلاک تبدیل نہیں ہوئے؟

      کانگریس کے صدر ملکارجن کھرگے نے اسٹیئرنگ کمیٹی کے اجلاس میں اوپر سے نیچے تک تنظیمی جوابدہی پر زور دیا اور کہا کہ جو لوگ اپنی ذمہ داریاں نبھانے سے قاصر ہیں انہیں اپنے ساتھیوں کے لیے راستہ بنانا ہوگا۔ ملکارجن کھرگے نے مزید کہا کہ میرا ماننا ہے کہ پارٹی اور ملک کے تئیں ہماری ذمہ داری کا سب سے بڑا حصہ اوپر سے نیچے تک تنظیمی جوابدہی ہے۔ اگر کانگریس تنظیم عوام کی امیدوں پر پورا اترتی ہے تو ہم الیکشن جیت کر ملک کے عوام کی خدمت کر سکیں گے۔

      اس موقع پر ملکارجن کھرگے نے وزیر اعظم نریندر مودی اور ان کی حکومت پر تنقید کی۔ کھرگے نے کہا کہ مودی حکومت ملک کے لوگوں، ان کے حقوق، ان کی امیدوں پر حملہ کررہی ہے اور ان کی حفاظت کرنا کانگریس کی ذمہ داری ہے۔ کھرگے نے کہا کہ جب غریب یا متوسط ​​طبقے کا ماہانہ بجٹ خراب ہوجاتا ہے تو یہ ان کی زندگی پر حملہ ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ملکی معیشت تیزی سے نیچے آ گئی ہے اور حکومت کے کریڈٹ کے ساتھ ساتھ ملکی روپیہ بھی گرتا جارہاہے۔ یہ ملک کی تعمیر و ترقی پر حملہ ہے۔ ملک کے کروڑوں قابل نوجوانوں کے لیے روزگار نہیں ہے اور موجودہ ملازمتیں بھی کم ہو رہی ہیں۔
      Published by:Mirzaghani Baig
      First published: