உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Congress President: راہل گاندھی کو منانے میں لگی کانگریس، صدر عہدہ کے الیکشن میں تاخیر کا امکان!

    Congress President: راہل گاندھی کو منانے میں لگی کانگریس، صدر عہدہ کے الیکشن میں تاخیر کا امکان! ۔ فائل فوٹو ۔

    Congress President: راہل گاندھی کو منانے میں لگی کانگریس، صدر عہدہ کے الیکشن میں تاخیر کا امکان! ۔ فائل فوٹو ۔

    Rahul Gandhi Congress President: کانگریس کے پالیسی میکرس، سینئر لیڈر راہل گاندھی کو صدر کے عہدہ کیلئے الیکشن لڑنے کیلئے منانے میں اب تک ناکام رہے ہیں، جس کی وجہ سے کانگریس صدر عہدہ کے الیکشن میں تاخیر ہوسکتی ہے ۔

    • Share this:
      نئی دہلی : کانگریس کے پالیسی میکرس، سینئر لیڈر راہل گاندھی کو صدر کے عہدہ کیلئے الیکشن لڑنے کیلئے منانے میں اب تک ناکام رہے ہیں، جس کی وجہ سے کانگریس صدر عہدہ کے الیکشن میں تاخیر ہوسکتی ہے ۔ راہل گاندھی نے فی الحال الیکشن لڑنے کا کوئی واضح اشارہ نہیں دیا ہے ۔ راہل گاندھی کی طرف سے کوئی واضح جواب نہیں ملنے کی وجہ سے کانگریس ورکنگ کمیٹی کی میٹنگ نہیں بلائی جارہی ہے، جس میں الیکشن کی تاریخ کا اعلان ہونا ہے ۔ کانگریس کی سینٹرل الیکشن اتھاریٹی کے مطابق اس نے الیکشن کی پوری تیاری کرلی ہے ۔

       

      یہ بھی پڑھئے: اب طلاق احسن کو غیر قانونی اعلان کرنے کی اٹھی مانگ، SC نے کیا اہم تبصرہ


      مدھوسودن مستری کی قیادت والی سینٹرل الیکشن اتھاریٹی نے کہا ہے کہ وہ وقت پر الیکشن کیلئے تیار ہیں ۔ اب گیند کانگریس ورکنگ کمیٹی کے پالے میں اور اس کو ہی الیکشن کی تاریخوں کا اعلان کرنا ہے ۔ پارٹی کے پہلے سے اعلان شدہ پروگرام کے مطابق کانگریس صدر کے الیکشن کی کارروائی 21 اگست سے شروع ہونے والی تھی اور 20 ستمبر سے پہلے اس کو نیا صدر منتخب کرلینا تھا۔ ریاستوں کے پارٹی سربراہ بھی 20 اگست تک منتخب کرلئے جانے تھے، لیکن اب تک کسی ریاست میں یہ کارروائی پوری نہیں ہوئی ہے ۔

       

      یہ بھی پڑھئے: ممبئی پولیس کی بڑی کامیابی، 1026 کروڑ روپے کی 516 کلو ایم ڈی ڈرگس ضبط


      اترپردیش، بہار جیسی ریاستوں میں تو عرصے سے صدر ہی نہیں ہیں۔ یوپی میں تو ہے ہی نہیں اور بہار میں استعفی دینے کے بعد بھی مدن موہن ہی کام دیکھ رہے ہیں ۔ لیکن راہل گاندھی کے رخ کے واضح نہیں ہونے کی وجہ سے قیادت تذبذب میں ہے اور تنظیمی انتخابات وقت سے پورے ہونے پر تذبذب ہے ۔ راہل گاندھی کو سات ستمبر سے 'ہندوستان جوڑو یاترا' کی شروعات کنیا کماری سے کرنی ہے اور یہ یاترا طویل چلنے والی ہے، اس لئے اگر تب تک الیکشن نہیں ہوا تو اس میں مزید تاخیر ہونے کا امکان ہے ۔

      ویسے بھی راہل گاندھی کی قیادت سنبھالنے کی ہچک کے بعد کانگریس کے پالیسی میکرس نے کہا کہ اشوک گہلوت، ملکا ارجن کھڑکے ، مکل واسنک ، کماری شیلجہ اور کے سی وینوگوپال جیسے ناموں پر غور ہوسکتا ہے ۔ حالانکہ راہل کے نہ ماننے پر سونیا گاندھی کے ہی 2024 تک صدر کے عہدہ پر برقرار رہنے کا سب سے زیادہ امکان ہے ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: