اگرمیں قتل وغارت گری پراترآؤں گا تو کوئی نہیں بچےگا: مغربی بنگال کے بی جے پی صدرکا متنازعہ بیان

دلیپ گھوش نے کہا کہ بنگال میں اب اس طرح کی سیاست نہیں چلے گی۔22 ہزار کیس بی جے پی ورکروں کے خلاف حالیہ دنوں میں درج کیے گئے ہیں اور یہ سب کے سب جعلی اور بےبنیاد ہیں۔

Aug 27, 2019 10:02 PM IST | Updated on: Aug 27, 2019 10:02 PM IST
اگرمیں قتل وغارت گری پراترآؤں گا تو کوئی نہیں بچےگا: مغربی بنگال کے بی جے پی صدرکا متنازعہ بیان

مغربی بنگال کے بی جے پی صدردلیپ گھوش کا متنازعہ بیان۔ فائل فوٹو

کلکتہ: تنازعات کی ہمیشہ سرخیوں میں رہنے والے بنگال بی جے پی کےصدردلیپ گھوش نےایک بارپھرمتنازع بیان دیتےہوئےکہا ہےکہ ”اگرمیں قتل وغارت گری پراترآؤں گا تو کوئی نہیں بچے گا“۔ دراصل گھوش بی جے پی ورکروں اورلیڈروں کے خلاف مبینہ جعلی کیس پر تبصرہ کرتے ہوئےکہا کہ بی جے پی لیڈر وں کے خلاف بے بنیاد الزامات کےتحت پولس مقدمہ قائم کررہی ہے اگر ہم اس پراترآئیں گے تو کوئی نہیں بچے گا۔

مشرقی مدنی پورکےایک میٹنگ سے خطاب کرتے ہوئےدلیپ گھوش نےکہا کہ بنگال میں اب اس طرح کی سیاست نہیں چلےگی۔22 ہزار کیس بی جے پی ورکروں کے خلاف حالیہ دنوں میں درج کئے گئے ہیں اوریہ سب کے سب جعلی اوربےبنیاد ہیں۔ ہم لوگ قتل وغارت گری میں یقین نہیں رکھتے ہیں اگر اس پرآمادہ ہوگئےتوکچھ بھی نہیں بچےگا۔ کوئی بھی اپنے بچوں کا چہرہ نہیں دیکھےگا۔ خیال رہےکہ اس سےقبل بھی بی جے پی کے ریاستی صدردلیپ گھوش متنازعہ بیان دے چکے ہیں۔

Loading...

Loading...