உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Delhi Corona Update: کورونا کے بڑھتے معاملوں کے درمیان دہلی میں بڑھائی گئی پابندی، سبھی نجی دفاتر رہیں گے بند

    Delhi Corona Cases: دہلی ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی (DDMA) نے یہ حکم جاری کیا ہے۔ اس حکم کے مطابق، صرف جن کو چھوٹ ہے Exempted Category)، وہی نجی دفتر کھل سکیں گے۔ یعنی دہلی کے باقی سب نجی دفاتر کے ملازم ورک فرام ہوم (WFH) کریں گے۔

    Delhi Corona Cases: دہلی ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی (DDMA) نے یہ حکم جاری کیا ہے۔ اس حکم کے مطابق، صرف جن کو چھوٹ ہے Exempted Category)، وہی نجی دفتر کھل سکیں گے۔ یعنی دہلی کے باقی سب نجی دفاتر کے ملازم ورک فرام ہوم (WFH) کریں گے۔

    Delhi Corona Cases: دہلی ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی (DDMA) نے یہ حکم جاری کیا ہے۔ اس حکم کے مطابق، صرف جن کو چھوٹ ہے Exempted Category)، وہی نجی دفتر کھل سکیں گے۔ یعنی دہلی کے باقی سب نجی دفاتر کے ملازم ورک فرام ہوم (WFH) کریں گے۔

    • Share this:
      نئی دہلی: ملک کی راجدھانی دہلی میں کورونا کے معاملے ہر دن تیزی سے بڑھتے جا رہے ہیں۔ دہلی میں روزانہ 20 ہزار سے زیادہ معاملے رپورٹ کئے جا رہے ہیں۔ دہلی میں کورونا انفیکشن پر قابو پانے کے لئے نائٹ کرفیو (Night Curfew) اور ویکنڈ کرفیو (Weekend Lockdown) جیسی پابندیاں لگائی گئی تھی۔ پیر کو ڈی ڈی ایم اے کی میٹنگ (DDMA Meeting) میں دہلی میں پابندیوں کو مزید سخت کرنے کا فیصلہ لیا گیا۔ دہلی کے سبھی نجی دفاتر کو بند رکھنے کا فیصلہ لیا گیا ہے۔

      دہلی ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی نے یہ حکم جاری کیا ہے۔ اس حکم کے مطابق، صرف جن کو چھوٹ ہے، وہی نجی دفتر کھل سکیں گے۔ یعنی دہلی کے باقی سب نجی دفاتر کے ملازم ورک فرام ہوم کریں گے۔ ابھی نجی دفاتر 50 فیصد صلاحیت کے ساتھ چل رہے تھے، 50 فیصد ملازم گھر سے ہی کام کر رہے تھے۔

      اب چھوٹ حاصل کرنے والے نجی دفاتر کو چھوڑ کر باقی سبھی دفاتر بند رہیں گے اور سبھی ملازم گھر سے ہی کام کریں گے۔ وہیں دہلی میں سبھی ریسٹورنٹ اور بار بھی بند کردیئے گئے ہیں۔ صرف ریسٹورنٹس سے فوڈ آئٹم کی ہوم ڈیلیوری اور ٹیک اوے کی سہولت رہے گی۔

      واضح رہے کہ دہلی میں پیر کو کورونا کے 19166 نئے معاملے سامنے آئے۔ وہیں 14076 مریضوں کو چھٹی دی گئی، جبکہ 17 مریضوں نے کورونا کے سبب دم توڑ دیا۔ دہلی میں ابھی تک 15,68,896 لوگ کورونا متاثر ہوچکے ہیں۔ ان میں سے 14,77,913 مریض ٹھیک ہوچکے ہیں، جبکہ 25177 مریضوں نے کورونا کے سبب دم توڑ دیا۔ دہلی میں کورونا سے اموات کی شرح گھٹ کر 1.60 فیصد رہی۔

      پیر کو کورونا کی انفیکشن شرح بڑھ کر 25 فیصد تک پہنچ گئی ہے۔ یعنی دہلی میں جانچ کرانے والے ہر چوتھے شخص کی جانچ رپورٹ میں کورونا انفیکشن کی تصدیق ہوئی ہے۔ پیر کے روز کورونا متاثرہ 17 مریضوں کی موت ہوگئی۔ وہیں سرگرم مریضوں کی تعداد بڑھ کر 66 ہزار کے قریب پہجچ گئی ہے۔

       
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: