ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

بہار میں روز ٹوٹ رہا ہےکورونا کا ریکارڈ، ایک دن میں 1700 سے زیادہ کورونا کے مریض، ۲۳ ہزارکو پارکیا کورونا مریضوں کی تعداد

بہار میں کورونا تیزی سے اپنا پاؤں پھیلا رہا ہے۔ صوبہ میں ۲۳ ہزار تین سو کورونا مریضوں کی تعداد ہوگئی ہے۔ کورونا وبا اب جان لیوا ثابت ہورہا ہے۔ اب تک 167 لوگوں کی موت ہوچکی ہے۔

  • Share this:
بہار میں روز ٹوٹ رہا ہےکورونا کا ریکارڈ، ایک دن میں 1700 سے زیادہ کورونا کے مریض، ۲۳ ہزارکو پارکیا کورونا مریضوں کی تعداد
بہار میں روز ٹوٹ رہا ہےکورونا کا ریکارڈ، ایک دن میں 1700 سے زیادہ کورونا کے مریض

پٹنہ: بہار میں کورونا تیزی سے اپنا پاؤں پھیلا رہا ہے۔ صوبہ میں ۲۳ ہزار تین سو کورونا مریضوں کی تعداد ہوگئی ہے۔ کورونا وبا اب جان لیوا ثابت ہورہا ہے۔ اب تک 167 لوگوں کی موت ہوچکی ہے۔ خاص بات یہ ہے کہ کورونا کے علاج کے لئے بنائے گئے اسپتالوں میں اب بیڈ کم پڑنے لگا ہے۔ مریضوں کی تعداد زیادہ ہے اور سہولت کے نام پرکچھ خاص انتظام نہیں ہے۔ حالانکہ حکومت اپنا پیٹھ خود تھپ تھپا رہی ہے اور لوگوں کو بھروسہ دلایا جارہا ہے کہ حکومت اس وبا کو روکنے کی ہر ممکن کوشش کررہی ہے لیکن بہار کی دارالحکومت پٹنہ کے سب سے بڑے اسپتال پی ایم سی ایچ میں بھی کورونا کے علاج کا معقول انتظام نہیں ہے۔


علاج کرانے پہنچ رہے لوگوں کو بھاری مصیبت اٹھانا پڑ رہا ہے۔ اسپتالوں میں جگہ نہیں ہونے کے سبب متاثرہ افراد کا ٹھیک سے علاج نہیں ہو پارہا ہے۔ اس مسئلہ کو حل کرنے کے لئے حکومت کی جانب سے پورے صوبہ میں ۳۱ جولائی تک کے لئے لاک ڈاون لگایا گیا ہے اور لاک ڈاون کو سختی سے فالو بھی کرایا جارہا ہے۔ خاص بات یہ بھی ہے کہ لوگ پہلے کے مقابلہ لاک ڈاون قانون پر پورے طریقہ سے عمل کررہے ہیں۔ دہشت کے ماحول میں جی رہے لوگوں کو سمجھ میں نہیں آرہا ہیکہ وہ کیا کرے۔ حکومت عام لوگوں کو مطمئین کرا پانےمیں ناکام ہورہی ہے۔


بہار میں صوبہ میں ۲۳ ہزار تین سو کورونا مریضوں کی تعداد ہوگئی ہے۔ کورونا وبا اب جان لیوا ثابت ہورہا ہے۔ اب تک 167 لوگوں کی موت ہوچکی ہے۔
بہار میں صوبہ میں ۲۳ ہزار تین سو کورونا مریضوں کی تعداد ہوگئی ہے۔ کورونا وبا اب جان لیوا ثابت ہورہا ہے۔ اب تک 167 لوگوں کی موت ہوچکی ہے۔


دوسری جانب پٹنہ میں کورونا قہر برپا کررہا ہے۔ پٹنہ کے زیادہ تر حصہ میں کورونا اپنا پاؤں پھیلا چکا ہے۔ لوگوں کو لوگوں سے اب ڈر لگنے لگا ہے۔ کورونا کے متاثرہ محلہ میں سینٹائز کا کام جاری ہے لیکن حالات معمول پر نہیں آرہا ہے۔ مقامی لوگوں کے مطابق حکومت اس سلسلے میں سنجیدہ پہل نہیں کررہے ہے جبکہ حکومت کے سامنے کورونا اور سیلاب کے قہر سے نپٹنے کی زمیداری ہے۔ وزیر اعلیٰ نتیش کمار نے اس مسلہ کو حل کرنے کے لئے صحت سے جڑے تمام لوگوں کو الرٹ پر لگایا ہے وہیں تمام ضلع انتظامیہ کو کورونا سے نپٹنے اور ضلع میں لاک ڈاون کے نفاذ کو یقینی بنانے پر زور دیا ہے۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Jul 17, 2020 11:55 PM IST