ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

کورونا وائرس کے خطرات سے بچنے کے لئے مدھیہ پردیش کے 33 اضلاع کو کیا گیا لاک ڈاؤن

بھوپال کمشنر کلپنا سریواستو کہتی ہیں کہ کورونا وائرس کو مذاق میں نہیں لینا چاہیئے ۔ یہ پوری انسانیت کیلئے خطرناک ہے ۔

  • Share this:
کورونا وائرس کے خطرات سے بچنے کے لئے مدھیہ پردیش کے 33 اضلاع کو کیا گیا لاک ڈاؤن
کورونا وائرس کے خطرات سے بچنے کے لئے مدھیہ پردیش کے 33 اضلاع کو کیا گیا لاک ڈاؤن

کورونا وائرس کے خطرات سے لوگوں کو بچانے کے لئے مرکزی اور صوبائی حکومتوں نے سخت احتیاطی اقدامات اٹھائے ہیں ۔ ملک کے سات سو بیس اضَلاع میں سے چار سو تین اضلاع کو لاک ڈاؤن کردیا گیا ہے ۔ مدھیہ پردیش کے 52 اضلاع میں سے 33 اضلاع کو لاک ڈاؤن کردیا گیا ہے۔  مدھیہ پردیش میں کورونا وائرس کے اب تک چھ معاملوں کی نشاندہی ہوچکی ہے ۔ اس میں سے پانچ  کا تعلق سنسکرا دھانی جبل پورسے ہے تو ایک معاملہ کا تعلق راجدھانی بھوپال سے ہے۔ بھوپال میں کورونا وائرس کا ایک معاملہ سامنے کے بعد راجدھانی کو لاک ڈاؤن کرنے کی مدت میں توسیع کردی گئی ہے ۔ بھوپال کلکٹر ترون پتھوڑے نے کل جہاں بھوپال میں 72 گھنٹے کے لاک ڈاؤن کا اعلان کیا تھا ، وہیں آج معاملہ کی سنجیدگی کو دیکھتے ہوئے راجدھانی بھوپال کو لاک ڈاؤن کرنے کی مدت میں توسیع کرتے ہوئے اس کو 31 مارچ تک لاک ڈاؤن کئے جانے کا اعلان کردیا ۔


مدھیہ پردیش میں پبلک ٹرانسپورٹ کو جہاں پوری طرح سے بند کردیا گیا ہے ، وہیں دوسری ریاستوں سے مدھیہ پردیش میں آنے والی گاڑیوں کو بھی بند کردیا گیا ہے ۔ راجدھانی بھوپال میں پولیس کے گشت میں تیزی پیدا کرنے کے ساتھ کورونا وائرس کے خطرات سے بچنے کیلئے انتظامیہ کی جانب سے جگہ جگہ پر اعلان کیا جا رہا ہے ۔ بھوپال میں لاک ڈاؤن کی خلاف ورزی کرنے والے سات لوگوں کے خلاف کاروائی بھی کی گئی ہے۔ بھوپا ل میں سخت حفاظتی انتظامات کے درمیان معمولات زندگی اپنی جگہ رواں دواں ہے ۔ شہر کی 95 فیصد دکانیں بند ہیں ۔ سبزی منڈی اور فروٹ منڈی کھلی ہوئی ہے ، لیکن یہاں پر خریدار ندارد ہیں۔


بھوپال کمشنر کلپنا سریواستو کہتی ہیں کہ کورونا وائرس کو مذاق میں نہیں لینا چاہیئے ۔ یہ پوری انسانیت کیلئے خطرناک ہے ۔ انتظامیہ نے ہر جگہ اسلئے حفاظتی انتظامات کے ساتھ سختی کر رکھی ہے ۔ تاکہ شہریوں کو اس خطرناک وائرس سے بچایا جا سکے ۔ شہریوں کو بھی اس مشکل لمحہ میں ہر قدم پر احتیاط کی ضرورت ہے ۔ جب ضروری ہو تبھی گھر سے ماسک لگا کر نکلیں اور بھیڑ بھاڑ میں جانے سے گریز کریں اور جتنا ہو سکے سینیٹائزر کا استعمال کریں۔ بیداری اور آپسی تعاون سے اس بیماری پر قابو پایا جا سکتا ہے ۔

First published: Mar 23, 2020 09:29 PM IST