ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

کورونا وائرس : لاک ڈاؤن کی وجہ سے میرٹھ میں انسان کیا جانور بھی متاثر

کورونا وائرس لاک ڈاون کی وجہ سے دودھ کی سپلائی متاثر ہونے سے ڈیری مالکان اونے پونے داموں میں دودھ فروخت کرنے پر مجبور ہیں ۔

  • Share this:
کورونا وائرس : لاک ڈاؤن کی وجہ سے میرٹھ میں انسان کیا جانور بھی متاثر
کورونا وائرس : لاک ڈاؤن کی وجہ سے میرٹھ میں انسان کیا جانور بھی متاثر

لاک ڈاؤن کی وجہ سے سماج کا غریب اور مزدور طبقہ ہی پریشان نہیں ہے ، بلکہ جانوروں کی خوراک کا بھی مسئلہ پیدا ہو گیا ہے ۔ جانوروں کا چارہ دستیاب نہ ہونے سی گائے اور بھینس پال کر دودھ کا کاروبار کرنے والے بھی پریشان ہیں ۔ لاک ڈاؤن کے حالات نے جہاں سماج کے غریب اور دیہاڑی مزدور طبقے کو مفلوج کردیا ہے ۔ وہیں جانوروں کے لیے بھی یہ وقت بڑا سخت ثابت ہو رہا ہے ۔ دودھ کے کاروبار سے وابستہ گائے اور بھینس پالنے والے کاروباری جانوروں کا چارہ دستیاب نہ ہونے سے کافی پریشان ہیں اور جانوروں کی خوراک میں کمی کرکے لاک ڈاؤن کے وقت کو گزارنے کے کوشش کر رہے ہیں ۔


وہیں دودھ کی سپلائی متاثر ہونے سے ڈیری مالکان اونے پونے داموں میں دودھ فروخت کرنے پر مجبور ہیں ۔ ڈیری مالکان کا کہنا ہے کہ دودھ دینے والے جانور کا دودھ نکالنا ان کی مجبوری ہے لیکن لاک ڈاؤن کی وجہ سے سپلائی نہیں ہو پا رہی ہے ۔ پہلے دودھ کی سپلائی دودھ ڈپو پر کی جاتی تھی ، جولاک ڈاؤن کے لاگو ہونے کے بعد سے ہی بند ہے ۔ اب ایسے میں جانور کا دودھ نکالنا تو جاری ہے ، لیکن سپلائی رک گئی ہے ، وہیں جانوروں کو چارہ کھلانا بھی ضروری ہے ۔ جبکہ چارہ دستیاب نہیں ہے اور جو مل بھی رہا ہے ، وہ بہت زیادہ مہنگا ہو گیا ہے ۔ ایسے حالات میں جانوروں کی دیکھ ریکھ کافی مشکل ہو گئی ہے ۔


کورونا کے خطرے سی نمٹنے کے لئے لاک ڈاؤن کی احتیاطی تدابیر پر عمل کرنا ضروری ہے ، لیکن اس عمل کو کامیاب بنانے کے لیےعوام تک اشیائے ضروریہ کی فراہمی کو یقینی بنانا بھی ضروری ہے ۔

First published: Apr 04, 2020 09:16 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading