ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

پابندیوں میں نرمی ، لیکن پروٹیکشن میں نہیں : ہل اسٹیشنوں پر بڑھتی بھیڑ سے ریاستی سرکاروں کی تشویش میں اضافہ

مرکزی داخلہ سکریٹری نے ہل اسٹیشنوں اور سیاسی مقامات پر کورونا کے مناسب پروٹوکول نہیں ہونے کی خبروں کے پیش نظر تشویش کا اظہار کیا ۔ اجے بھلا نے کہا کہ کووڈ کی دوسری لہر ابھی ختم نہیں ہوئی ہے اور ریاستوں کو ماسک پہننے ، سماجی فاصلہ اور دیگر احتیاطی تدابیر کو اپنانے کے سلسلہ میں طے پروٹوکول پر سختی سے عمل کرنا چاہئے ۔

  • Share this:
پابندیوں میں نرمی ، لیکن پروٹیکشن میں نہیں : ہل اسٹیشنوں پر بڑھتی بھیڑ سے ریاستی سرکاروں کی تشویش میں اضافہ
پابندیوں میں نرمی ، لیکن پروٹیکشن میں نہیں : ہل اسٹیشنوں پر بھیڑ بڑھی اور تشویش بھی ۔ فائل فوٹو ۔

نئی دہلی : مرکزی داخلہ سکریٹری اجے بھلا نے ہل اسٹیشنوں اور دیگر سیاحتی مقامات پر کورونا سے متعلق پروٹوکول نہیں اپنائے جانے کے معاملہ پر ہفتہ کو تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ وبا کی دوسری لہر ابھی پوری طرح سے ختم نہیں ہوئی ہے ۔ وزارت داخلہ نے ایک بیان میں کہا کہ داخلہ سکریٹری نے ہل اسٹیشنوں اور دیگر سیاحتی مقامات پر کورونا کو پھیلنے سے روکنے کیلئے ریاستی سرکاروں کے ذریعہ اٹھائے گئے اقدامات کا جائزہ لیا ۔ میٹنگ میں گوا ، ہماچل پردیش ، کیرالہ ، مہاراشٹر ، راجستھان ، تمل ناڈو ، اتراکھنڈ اور مغربی بنگال میں کورونا کے حالات اور ٹیکہ کاری کے انتظامات پر تبادلہ خیال کیا گیا ۔


پریس نوٹ کے مطابق میٹنگ میں یہ پیغام دیا گیا کہ ملک میں مختلف ریاستوں اور مرکز کے زیر انتظام خطوں میں دوسری لہر الگ الگ سطح پر موجود ہے اور کل ملا کر انفیکشن کی شرح میں گراوٹ آئی ہوسکتی ہے ، لیکن راجستھان ، کیرالہ ، مہاراشٹر ، تمل ناڈو ، مغربی بنگال ، اتراکھنڈ اور ہماچل پردیش میں انفیکشن کی شرح دس فیصد سے زیادہ ہے ، جو تشویش کی بات ہے ۔


بیان کے مطابق مرکزی داخلہ سکریٹری نے ہل اسٹیشنوں اور سیاسی مقامات پر کورونا کے مناسب پروٹوکول نہیں ہونے کی خبروں کے پیش نظر تشویش کا اظہار کیا ۔ اجے بھلا نے کہا کہ کووڈ کی دوسری لہر ابھی ختم نہیں ہوئی ہے اور ریاستوں کو ماسک پہننے ، سماجی فاصلہ اور دیگر احتیاطی تدابیر کو اپنانے کے سلسلہ میں طے پروٹوکول پر سختی سے عمل کرنا چاہئے ۔


ملک میں ایک دن میں 1200 سے زائد اموات

بتادیں کہ ملک میں کووڈ ۔ 19 کے یومیہ کیسز میں معمولی کمی رہی ، لیکن اس کی وجہ سے ہونے والی اموات سے دل میں دہشت پھیل رہی ہے ۔ کیونکہ گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران اس مہلک وائرس سے 1200 سے زیادہ افراد اپنی زندگی سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں۔  دریں اثنا جمعہ کو 30 لاکھ 55 ہزار 802 لوگوں کو کورونا ویکسین دی گئی۔ ملک میں اب تک 37 کروڑ 20 لاکھ 47 ہزار 24 افراد کی ٹیکہ کاری کی جا چکی ہے۔ ملک میں فعال کیسز کی شرح کم ہوکر 1.48 فیصد، بازیابی کی شرح بڑھ کر 97.20 فیصد اور اموات کی شرح 1.32 ہوگئی ہے۔

مرکزی وزارت صحت کی جانب سے ہفتہ کی صبح جاری اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا کے 42766 نئے کیسز سامنے آنے سے متاثرہ افراد کی تعداد تین کروڑ سات لاکھ 95 ہزار 716 ہوگئی ہے۔ اس دوران 44 ہزار 254 مریضوں کی بازیابی کے بعد اس وبا کو شکست دینے والے افراد کی مجموعی تعداد دو کروڑ 99 لاکھ 32 ہزار 538 ہوگئی ہے۔ فعال کیسز 3694 سے گھٹ کر 4 لاکھ 55 ہزار 33 رہ گئے ہیں۔ اس دوران 1206 مریضوں کے فوت ہوجانے سے اموات کی تعداد بڑھ کر چار لاکھ سات ہزار 145 ہوگئی ہے۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Jul 10, 2021 09:23 PM IST