ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

پری پیڈ ، بجلی اور کتاب کی دکان سمیت وزارت داخلہ نے ان شعبوں میں دی رعایت ، دیکھیں پوری فہرست

وزارت صحت کے مطابق ملک میں 78 اضلاع میں گزشتہ 14 دنوں میں کورونا وائرس کا کوئی نیا معاملہ سامنے نہیں آیا ہے ۔

  • Share this:
پری پیڈ ، بجلی اور کتاب کی دکان سمیت وزارت داخلہ نے ان شعبوں میں دی رعایت ، دیکھیں پوری فہرست
فائل فوٹو ۔ رائٹر

حکومت کی طرف سے کورونا وائرس پر ہونے والی یومیہ پریس کانفرنس میں جمعرات کی شام کو وزارت داخلہ نے کہا کہ دیہی علاقوں میں معیشت کو رفتار بنائے رکھنے کیلئے زراعتی کاموں کی اجازت دی گئی ہے ۔ سینئر سیٹیزنس کی بیک سائیڈ اٹینڈنٹ اور دیکھ بھال خدمات کو پابندی سے چھوٹ دی گئی ہے ۔ علاوہ ازیں پری پیڈ موبائل ریچارج کی دکانیں ، شہروں میں دودھ اور بریڈ فیکٹریوں اور دال آٹا ملوں میں کام کی چھوٹ دی گئی ہے ۔ کتاب اور بجلی کے سامان کی دکانوں کو بھی چھوٹ دی گئی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ سڑک کی تعمیر اور اینٹ بھٹے بھی کھل پائیں گے ۔


وزارت داخلہ نے ریاستوں سے کہا ہے کہ طبی عملہ کو وافر سیکورٹی دی جائے ۔ اگر ان کے خلاف کسی بھی طرح کا تشدد کا واقعہ پیش آتا ہے ، تو ڈیزاسٹر مینجمنٹ ایکٹ کے تحت سخت سے سخت کارروائی کی جائے ۔ انہوں نے کہا کہ ملک میں ابھی تک لاک ڈاون اطمینان بخش طریقہ سے چل رہا ہے ۔


وزارت صحت کے جوائنٹ سکریٹری لو اگرول نے کہا کہ گزشتہ 24 گھنٹوں میں کرونا وائرس کے 1409 معاملات سامنے آئے ہیں ۔ متاثرین کی تعداد 21393 تک پہنچ گئی ہے ۔ کووڈ 19 سے متاثر 4257 افراد اب تک ٹھیک ہوچکے ہیں ۔ یہ اعداد و شمار 19.89 فیصدی ہے ۔


وزارت صحت کے مطابق ملک میں 78 اضلاع میں گزشتہ 14 دنوں میں کورونا وائرس کا کوئی نیا معاملہ سامنے نہیں آیا ہے ۔ ہم لاک ڈاون کے 30 دنوں میں وائرس کے پھیلاو میں کمی کرنے میں کامیاب رہے ہیں ۔ وزارت نے کہا کہ لاک ڈاون لاگو ہونے کے بعد جانچ میں 24 گنا اضافہ ہوا ہے ۔ جبکہ نئے معاملات کی تعداد میں 16 گنا اضافہ ہوا ہے ۔ گزشتہ ماہ کے مقابلہ میں کووڈ 19 کیلئے مختص اسپتال کی تعداد 3.5 گنا بڑھی ہے ۔

وہیں آئی سی ایم آر نے کہا کہ کورونا وائرس کے چیلنج کو لے کر ہمارا اصلی منتر ہے زندگی کیسے بچائیں ۔ اس کو لے کر ہم ٹیسٹنگ بڑھانے پر زور دے رہے ہیں ۔ آئی سی ایم آر کے ڈائریکٹر سی کے مشرا نے کہا کہ 23 مارچ کو ہم نے 14915 ٹیسٹ کئے اور 22 اپریل تک ہم نے پانچ لاکھ سے زیادہ ٹیسٹ کئے ہیں ۔
First published: Apr 23, 2020 10:58 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading