ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

نئی تشویش : رپورٹ میں دعوی ، ملک کی یہ تین ریاستیں بن سکتی ہیں اگلا کووڈ ہاٹ اسپاٹ

Coronavirus in India: اینالیسسس میں ریاست اور ضلع سطح پر اسٹیٹسٹکس ڈیٹا بتاتا ہے کہ مشرقی علاقوں کے مقابلہ ملک کے مغربی علاقوں میں معاملات تیزی سے بڑھ رہے ہیں ۔ مہاراشٹر میں حالات کافی تشویشناک ہیں ۔

  • Share this:
نئی تشویش : رپورٹ میں دعوی ، ملک کی یہ تین ریاستیں بن سکتی ہیں اگلا کووڈ ہاٹ اسپاٹ
نئی تشویش : رپورٹ میں دعوی ، ملک کی یہ تین ریاستیں بن سکتی ہیں اگلا کووڈ ہاٹ اسپاٹ۔ علامتی تصویر ۔ Shutterstock ۔

کورونا وائرس متاثرین کے اعداد و شمار بڑھ رہے ہیں ۔ اسی درمیان ایک ڈرانے والی خبر سامنے آئی ہے ۔ مہاراشٹر کے علاوہ ملک کی تین اور ریاستیں کورونا ہاٹ اسپاٹ کے طور پر ابھرتی نظر آرہی ہیں ۔ ان ریاستوں سے مل رہے کورونا کے اعداد و شمار ڈرانے والے ہیں ۔ روازنہ مثبت معاملات کے علاوہ ملک کی پازیٹیویٹی شرح میں بھی کافی اضافہ دیکھا گیا ہے ۔


ہندوستان ٹائمس کا اینالیسس ڈیٹا بتاتا ہے کہ پنجاب ، ہریانہ اور مدھیہ پردیش تین ریاستوں میں حالات خراب ہورہے ہیں ۔ اینالیسس کے مطابق ان تینوں ریاستوں پر وائرس کا اگلا ہاٹ اسپاٹ بننے کا خطرہ منڈلا رہا ہے ۔ ملک کے نئے ہاٹ اسپاٹ کا پتہ کرنے کیلئے 20 لاکھ سے زیادہ آبادی والے علاقوں کا ڈیٹا تیار کیا گیا تھا ۔ اس دوران رپورٹ میں تین باتیں پازیٹیویٹی ریٹ میں اضافہ ، یومیہ معاملات میں اچھال اور فی 10 لاکھ لوگوں پر کم ٹیسٹنگ کو شامل کیا گیا تھا ۔


اینالیسسس میں ریاست اور ضلع سطح پر اسٹیٹسٹکس ڈیٹا بتاتا ہے کہ مشرقی علاقوں کے مقابلہ ملک کے مغربی علاقوں میں معاملات تیزی سے بڑھ رہے ہیں ۔ مہاراشٹر میں حالات کافی تشویشناک ہیں ۔ ملک کی کئی ریاستوں میں سرکار کووڈ ضوابط سخت کررہی ہے ۔ کئی اضلاع میں نائٹ کرفیو کا اعلان کیا جاچکا ہے ۔ حال ہی میں گجرات حکومت نے ریاست کے آٹھ بڑے شہروں میں اسکولوں میں جاری آف لائن کلاسیز کو 10 اپریل تک بند کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔


ان تین ریاستوں میں خطرے کی گھنٹی

تین ریاستوں میں سب سے زیادہ قابل تشویش حالات پنجاب کے ہیں ۔ گزشتہ 30 دنوں میں ریاست میں روزانہ سامنے آرہے معاملات میں 531 فیصد کا اضافہ ہوا ہے ۔ وہیں اس دوران ہفتہ وار پازیٹیویٹی شر 4.7 فیصدی تک بڑھ گئی ہے ۔ ملک میں مہاراشٹر کے علاوہ دیگر دوسرا سب سے بڑا اضافہ ہے ۔ پنجاب اور مہاراشٹر کے بعد ہریانہ میں معاملات بڑھنے کی شرح سب سے زیادہ ہے ۔

ہریانہ میں گزشتہ 30 دنوں میں 398 فیصد کی شرح سے معاملات میں اضافہ ہوا ہے ۔ یہاں اوسط پازیٹیویٹی شرح 2.2 فیصدی پر ہے ۔ مدھیہ پردیش میں روز سامنے آرہے معاملات کی شرح 277 فیصدی پر پہنچ گئی ہے ۔ یہاں پازیٹیویٹی کی شرح 3.3 فیصد تک بڑھ گئی ہے ۔ مدھیہ پردیش میں ٹیسٹنگ کی شرح بھی پریشان کرنے والی ہے ۔ یہاں فی دس لاکھ لوگوں پر 191 ٹیسٹ ہوئے ہیں ۔

گزشتہ 30 دنوں میں ہندوستان میں کورونا کے نئے معاملات سات دنوں میں اوسط 140 فیصد کی شرح سے بڑھے ہیں ۔ یہ اعداد و شمار کورونا کی دوسری لہر کی جانب اشارہ کررہے ہیں ۔ ان چار ریاستوں کے علاوہ آندھر پردیش ، دہلی اور گجرات کے اعداد و شمار بھی تشویش پیدا کرنے والے ہیں ۔ جبکہ کیرالہ ، بہار اور اوڈیشہ میں کورونا معاملات کے سات دنوں کے اوسط میں گراوٹ آئی ہے ۔ گزشتہ ایک مہینے میں ملک کی صرف انہیں ریاستوں میں معاملات کے اضافہ میں کمی آئی ہے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Mar 19, 2021 12:34 PM IST