عدالت کا حکم، کٹھوعہ کیس کی ایس آئی ٹی کے خلاف معاملہ درج کیا جائے

عدالت نے پولیس کوایس آئی ٹی کے ان 6 اراکین کے خلاف ایف آئی آر درج کئے جانے کے احکامات دیئے۔

Oct 23, 2019 12:03 AM IST | Updated on: Oct 23, 2019 12:03 AM IST
عدالت کا حکم، کٹھوعہ کیس کی ایس آئی ٹی کے خلاف معاملہ درج کیا جائے

عدالت نے ایس آئی ٹی کے خلاف جانچ کا حکم دیا۔

جموں: جموں وکشمیرکی ایک عدالت نےکٹھوعہ میں 2018 میں ایک معصوم بچی کی آبروریزی اورقتل معاملے کی جانچ کرنے والے خصوصی جانچ ٹیم کے 6 اراکین کے خلاف ایف آئی آر درج کئے جانے کا منگل کو پولیس کو حکم دے دیا۔

عدالت نے پولیس کوایس آئی ٹی کے ان 6 اراکین کے خلاف ایف آئی آر درج کئے جانے کے احکامات دیئے جنہوں نے 2018 میں کٹھوعہ کےایک گاؤں میں 8 سالہ ایک لڑکی کے ساتھ آبروریزی اورقتل معاملے کی جانچ کی تھی اورگواہوں کو جھوٹے بیان دینےکے لئے مبینہ طورپران کا استحصال کیا تھا اورانہیں مجبورکیا۔

Loading...

گواہوں کی عرضی پردیئے احکامات

عدالتی مجسٹریٹ پریم ساگرنے معاملے کے گواہوں سچن شرما، نیرج شرما اورساحل شرما کی ایک عرضی پرجموں کے اے ایس پی کو کو حکم دیتے ہوئے کہا کہ ان 6 لوگوں کے خلاف سنگین جرم بنتا ہے۔عدالت نے اس وقت کے ایس ایس پی آرکے جلا (اب ریٹائرڈ)، اے ایس پی پیرزادہ نوید، ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ پولیس شتمبری شرما اورنثارحسین، پولیس کی پولیس کی کرائم برانچ کے سب انسپکٹر عرفان وانی اورکیول کشورکے خلاف ایف آئی آردرج کرنے کے احکامات دیئے اورجموں کے ایس ایس پی سے 11 نومبر کومعاملے کی اگلی سماعت پرتعمیل رپورٹ دینے کو کہا۔

Loading...