உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Delhi Violence:گرفتاری کے ڈر سے دلی فساد کے ملزم نے لی پیشگی ضمانت، دکان میں آگ لگانے اور توڑپھوڑ کا ہے الزام

    دہلی تشدد معاملے کے ملزم نے لی پیشگی ضمانت۔

    دہلی تشدد معاملے کے ملزم نے لی پیشگی ضمانت۔

    ملزم نے سوچا کہ اگر وہ متعلقہ عدالت میں پیش ہوتا ہے تو اسے حراست میں لیا جاسکتا ہے۔ ملزم کے وکیل نے آگے کہا کہ درخواست گزار کو اندیشہ ہے کہ اسے ایل ڈی کی جانب سے حراست میں لیا جاسکتا ہے۔

    • Share this:
      نئی دہلی:دارالحکومت دہلی (Delhi) کی ایک عدالت نے ہفتہ کو شمال مشرقی دہلی تشدد معاملے میں ایک ملزم کو پیشگی ضمانت (Anticipatory Bail) دے دی۔ وہیں، ایڈیشنل سیشن جج ویریندر بھٹ نے شمال مشرقی دلی تشدد معاملے میں کراول نگر پولیس اسٹیشن میں درج FIR میں ایک ملزم محمد دانش کو راحت دی ہے۔ اس دوران عدالت نے حکم دیا ہے کہ گرفتاری کے بعد، ملزم کو ضمانتپر رہا کیا جائے گا، بشرطیکہ وہ ایک ضمانت رقم کے ساتھ 30,000 روپے کا نجلی مچلکہ جمع کرے۔ بتادیں کہ ملزم محمد دانش پر دنگوں اور دیگر متعلقہ جرائم سے متعلق کیس درج کیا گیا تھا۔ پولیس نے FIR درج کرلی ہے۔

      دراصل، دلی کی ایک عدالت میں بحث کےدوران، ملزم کے وکیل نے کہا کہ وہ اس معاملے کی جانچ میں شامل ہوگیا تھا اور اس کی گرفتاری کے بغیر ہی چارج شیٹ دائر کی جاچکی تھی۔ اس دوران پولیس نے جانچ کے دوران ملزم کو گرفتار نہیں کیا اور چارج شیٹ داخل کردی ہے۔ ملزم نے سوچا کہ اگر وہ متعلقہ عدالت میں پیش ہوتا ہے تو اسے حراست میں لیا جاسکتا ہے۔ ملزم کے وکیل نے آگے کہا کہ درخواست گزار کو اندیشہ ہے کہ اسے ایل ڈی کی جانب سے حراست میں لیا جاسکتا ہے۔ سی ایم ایم (نارتھ ایسٹ)، اگر وہ اس معاملے میں سمن کیے جانےپر اس عدالت کے سامنے پیش ہوتا ہے۔ جب کہ دلی تشدد سے جڑے ایک دیگر معاملے میں ملزم کے خلاف تعزیرات ہند (IPC)کی دفعات147,148 149, 188, 34, 436 اور 427 کے تحت ایف آئی آر درج کی گئی تھی۔

      دلی تشدد معاملے میں HC نے 6 ملزمین کو دی ضمانت
      بتادیں کہ گزشتہ دنوں دلی ہائی کورٹ (Delhi High Court) نے شمال مشرقی دہلی تشدد (Delhi Violence) سے متعلق ایک کیس میں 6 ملزمین کو ضمانت (6 Accused Bail) دے دی۔ ان پر الزام لگایا گیا تھا کہ ہجوم نے ایک مٹھائی کی دکان میں توڑ پھوڑ کی اور اس میں آگ لگادی۔ اس کے نتیجے میں جلنے اور چوٹ لگنے سے ایک 22 سالہ لڑکے دلبر نیگی کی موت ہوگئی۔ عدالت نے اس معاملے میں محمد طاہر، شاہ رخ، محمد فیضل، محمد شعیب، راشد اور پرویز کو ضمانت دے دی۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: