ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

Lockdown in India:ملک کی کئی ریاستوں میں لاک ڈاؤن، یہاں جانئےکہاں ہےکیا پابندیاں؟

کورونا وائرس کی چین کو توڑنے اور اس سے حفاظت کے لیے بہت ساری ریاستوں میں مکمل لاک ڈاؤن نافذ کیا گیا یا اس طرح کی پابندیاں متعارف کروائی گئی۔ اب مخلتف ریاستیں دوسری تمام پابندیوں کو واپس لانے میں ہچکچاہٹ کا شکار ہیں۔ کئی ریاستوں میں سخت پابندیوں کے ساتھ ساتھ چھوٹ بھی دی گئی ہے۔

  • Share this:
Lockdown in India:ملک کی کئی ریاستوں میں لاک ڈاؤن، یہاں جانئےکہاں ہےکیا پابندیاں؟
لاک ڈاون میں ایک مرتبہ پھر توسیع

ہندوستان میں عالمی وبا کورونا وائرس (Covid-19) کے کیسوں میں پہلے کے مقابلے میں اب روزانہ کے کیسوں میں کمی ریکارڈ کی جارہی ہے۔ وہیں موجودہ دوسری لہر میں اموات کی تعداد میں کی شرح میں بھی کسی حد تک کمی واقع ہوئی ہے۔کورونا وائرس کی چین کو توڑنے اور اس سے حفاظت کے لیے بہت ساری ریاستوں میں مکمل لاک ڈاؤن نافذ کیا گیا یا اس طرح کی پابندیاں متعارف کروائی گئی۔ اب مخلتف ریاستیں دوسری تمام پابندیوں کو واپس لانے میں ہچکچاہٹ کا شکار ہیں۔ کئی ریاستوں میں سخت پابندیوں کے ساتھ ساتھ چھوٹ بھی دی گئی ہے۔ دہلی میں بھی اس طرح کے حالات درپیش ہیں، اسی ضمن میں ریاستوں کے اعتبار سے جون میں پیش آنے والی صورت حال کو پیش کیا جارہا ہے:


  • نئی دہلی


قومی دارالحکومت میں نئے کیس 29 مئی 2021 کو ایک ہزار سے بھی کم واقع ہوئے۔ شہر میں 20 اپریل (7 دن کی اوسط) میں 28000 سے زیادہ کیس سامنے آئے تھے۔ اس سے عام آدمی پارٹی کی حکومت 31 مئی سے قواعد میں کچھ نرمی کا اعلان کرتی ہوئی نظر آ رہی ہے حالانکہ عام لاک ڈاؤن کو 7 جون تک بڑھا دیا گیا ہے۔


دہلی میٹرو خدمات کی معطلی اور عوامی مقامات اور تمام ہول سیل اور خوردہ بازاروں میں شادیوں پر پابندی سمیت تمام موجودہ پابندیاں 7 جون تک برقرار رہیں گی۔ اس کے علاوہ افراد کی نقل و حرکت پر پابندی ہے سوائے ان افراد کے جو لازمی اور اجازت شدہ سرگرمیوں میں مصروف ہیں۔ ایسے کارکنوں کو دہلی حکومت کی ویب سائٹ سے ای پاس حاصل کرنے کی ضرورت ہے۔

  • مہاراشترا:


وہ ریاست جہاں اپریل کے وسط میں روزانہ نئے کیسوں کی سات دن کی اوسط تعداد 70000 کے قریب تھی ، اب یہاں لگ بھگ 20000 کیس ہی آرہے ہیں۔ لیکن ہندوستان میں سب سے زیادہ مجموعی کیس اور اس کی سب سے زیادہ اموات کے ساتھ ادھو ٹھاکرے کی زیرقیادت مخلوط حکومت نے 15 جون تک پابندیوں کا سلسلہ جاری رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔ یہ 14 اپریل کو متعارف کرایا گیا تھا، ابتدائی طور پر یکم جون تک یہ پابندیاں چلنی تھیں۔ جس کی تاریخ میں اضافہ کیا گیا۔

تاہم ، اس بار ریاستی حکومت نے کہا ہے کہ پابندی کے اس مرحلے کے لئے یکم جون کو نئی ہدایات جاری کی جائیں گی، جس میں غیر ضروری اشیاء فروخت کرنے والی دکانیں کھولنا بھی شامل ہے۔

ممبئی میں لاک ڈاؤن کا منظر
ممبئی میں لاک ڈاؤن کا منظر


  • کرناٹک:


کارناٹک میں بھی 7 جون تک لاک ڈاؤن نافذ رہا گا۔ اس کے لیے احکامات جاری کیے جائیں گے۔ صرف 10 مئی سے 24 مئی تک مکمل طور پر لاک ڈاؤن کے لئے 27 اپریل کو پابندیوں کا اعلان کیا گیا تھا۔ اس کے بعد وزیر اعلی بی ایس یدی یورپا نے یہ کہتے ہوئے 7 جون تک توسیع کردی تھی کہ ریاست میں کورونا کی خطرناک صورت حال ہے۔

  • کیرالا:


کیرالہ نے بھی احتیاط کی طرف جھکاؤ رکھنے کا فیصلہ کیا ہے اور اپنا لاک ڈاؤن 9 جون تک بڑھا دیا ہے ، حالانکہ ریاستی حکومت نے کچھ مراعات دی ہیں۔

ہفتہ کو یہ اعلان کرتے ہوئے وزیراعلیٰ پنارائی وجےان نے کہا کہ اگرچہ ریاست میں اس مرض کے پھیلاؤ میں نمایاں کمی آرہی ہے ، لیکن اب بھی پابندیوں کو دور کرنے کا وقت نہیں آیا ہے اور یہ لاک ڈاؤن "31 مئی سے 9 جون تک تمام اضلاع میں جاری رہے گا"۔

  • تمل ناڈو:


پچھلے ہفتے تامل ناڈو نے اپنے لاک ڈاون میں 7 جون تک توسیع کردی تھی۔ ہندوستان کی چوتھے سب سے زیادہ کیسوں والی ریاست نے 10 مئی کو روک تھام کی تھی، جس میں 24 مئی کو مزید ایک ہفتے کی توسیع کی گئی تھی۔ لیکن ریاست میں روزانہ 30000 سے زیادہ نئے کیس کی تعداد دیکھنے میں آرہی ہے۔ اسی دوران سی ایم ایم کے اسٹالن نے فیصلہ کیا ہے کہ لاک ڈاؤن کو اپنی جگہ پر برقرار رکھنے کی ضرورت ہے۔
نیز بینکوں اور دیگر مالی خدمات کو تیسرا عملہ کے ساتھ کام کرنے کی اجازت ہوگی۔

  • یوپی:


ریاست میں کیسوں میں اضافے اور صحت کے نظام کے دباؤ میں پڑنے کی اطلاعات کے درمیان ریاست نے 30 اپریل کو لاک ڈاؤن کا اعلان کیا تھا۔ اس کے بعد میں اس نے جزوی طور پر لاک ڈاؤن کو 31 مئی تک بڑھا دیا تھا۔ لیکن 30 مئی تک ریاستی حکومت مبینہ طور پر نرمی روک رہی تھی لاک ڈاؤن قوانین میں داخل ہوگئی ہے

انٹیگریٹڈ کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹرز (آئی سی سی سی) کی کاوشوں کے ساتھ سی ایم یوگی آدتیہ ناتھ کی میٹنگوں میں ریاست کے دیہی اور شہری دونوں علاقوں میں کوڈ کی صورتحال کا بغور جائزہ لینے سے اس کے پھیلاؤ پر قابو پانا ممکن ہوگیا۔

  • تلنگانہ


تلنگانہ میں لاک ڈاون میں ایک مرتبہ پھر توسیع کی گئی ہے۔ آج دوپہر وزیراعلیٰ چندرشیکھرراو کی زیرصدارت ریاستی کابینہ کا اجلاس کیمپ آفس پرگتی بھون میں منعقد کیا گیا۔ اس طویل اجلاس میں ریاست میں لاک ڈاون کی صورتحال کا تفصیلی جائزہ لیتے ہوئے کابینہ نے آئندہ دس دنوں تک لاک ڈاون میں توسیع کا فیصلہ کیا ہے۔

البتہ لاک ڈاون میں چھوٹ کے اوقات صبح6بجے تا 10بجے بڑھاکر 1 بجے دن کردیئے گئے ہیں تاکہ محدود معاشی سرگرمیوں کا احیاء کیا جاسکے۔ اس سلسلہ میں رہنمایانہ خطوط جاری کئے جائیں گے۔ عوام کو 2بجے دن تک گھر جانے کی اجازت رہے گی تاہم 2بجے دن کے بعد لاک ڈاون میں مزید سختی کی جائے گی۔ دکانات ایک بجے دن بند کردی جائیں گی۔ اس سلسلہ میں و،زیرانفارمیشن ٹکنالوجی تارک راماراو نے ایک ٹوئٹ بھی کیا ہے۔
Published by: Mohammad Rahman Pasha
First published: May 31, 2021 02:10 PM IST