ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

مہاراشٹر میں کورونا وبا کے سبب بیسٹ بس مسافروں میں کورونا پھیلنے کا خطرہ لاحق

ممبئی شہر اور مضافاتی علاقوں میں مقیم مسافروں کو ٹرین سروسیز بند ہونے کی وجہ سے کافی پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے، کئی کاروباری اور مسافروں کا ٹرین سروسیز بند ہونےکی وجہ سے روزی روٹی کا مسئلہ پیدا ہوگیا ہے۔

  • Share this:
مہاراشٹر میں کورونا وبا کے سبب بیسٹ بس مسافروں میں کورونا پھیلنے کا خطرہ لاحق
مہاراشٹر میں کورونا وبا کے سبب بیسٹ بس مسافروں میں کورونا پھیلنے کا خطرہ لاحق

ممبئی شہر اور مضافاتی علاقوں میں مقیم مسافروں کو ٹرین سروسیز بند ہونے کی وجہ سے کافی پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے، کئی کاروباری اور مسافروں کا ٹرین سروسیز بند ہونےکی وجہ سے روزی روٹی کا مسئلہ پیدا ہوگیا ہے۔ مسافروں نے ایک مرتبہ پھر عام مسافروں کیلئے ٹرین سروسیز شروع کرنے کا مطالبہ کیا ہے، لیکن ٹرین سروسیز کے دوبارہ تمام مسافروں کیلئے بحال کئے جانے پرکورونا کے پھیلاؤ کا خطرہ ہے، اس لئے سرکار اور بی ایم سی انتظامیہ ٹرین سروسیز شروع کرنے سے قاصر ہے۔ بیسٹ بسوں سے کورونا وائرس پھیلاؤ کا خطرہ ٹرین سروسیز کے بند ہونے کی وجہ سے مسافروں کی بھیڑ بسوں میں امنڈ پڑتی ہے، اس لئے مسافروں نے اب یہ سوال اٹھانا شروع کردیا ہے کہ کیا بیسٹ بسوں میں سفر کرنے سے کورونا نہیں پھیلتا ہے۔


بیسٹ پی آر او منوج وراڈے نے بتایا کہ بیسٹ بسوں میں معاشرتی فاصلہ کا خیال رکھا جاتا ہے اور استطاعت اور وضع کردہ اصولوں کے مطابق ہی مسافروں کو بسوں میں بٹھایا جاتا ہے، لیکن منوج وراڈے کے دعوی ان دنوں جھوٹے ثابت ہو رہے ہیں۔ کیونکہ بسوں میں مسافروں کی بھیڑ سے اب ہر کوئی پریشان حال ہے، لیکن بیسٹ کے پی آر او اپنے موقف پر قائم ہے کہ بیسٹ معاشرتی فاصلہ قوانین پر عمل پیرا ہے، جو کہ اب مشکل ہی نہیں بلکہ ناممکن ہوگیا ہے اور بیسٹ بسوں میں مسافروں کی بھیڑ روز افزوں بڑھ رہی ہے یہ بیسٹ کی تساہلی اور مجرمانہ غفلت ہے آئندہ دنوں میں بیسٹ بسوں کے سبب مسافروں میں کورونا وائرس کے پھیلاؤ کا خطرہ لاحق ہوگا یہ دعویٰ مسافروں نے کیا ہے۔

بیسٹ بسوں سے سفر کرنے والے مسافروں کا کہنا  ہے کہ کورونا وائرس کے پھیلاؤ کے خطرہ کے سبب ٹرین کو عام مسافروں کیلئے بند کیا گیا ہے، لیکن اب بیسٹ بس کورونا پھیلاؤ کا سبب بن سکتی ہے یہ بات بیسٹ انتظامیہ کو قبول کرنی چاہئے کیونکہ اس میں بھیڑ اب ٹرینوں سے بھی زیادہ ہوتی ہے۔ مہاراشٹر میں سب سے زیادہ کورونا متاثرین مریض سب سے زیادہ شفایاب ہوئے ہیں۔ 10 لاکھ سے زائد مریض اب تک کورونا سے صحتیاب ہوکرگھر واپس آئے ہیں۔ ہفتہ کے روز 23 ہزار 644 مریض صحتیاب ہوکرگھر واپسی کئے ہیں۔ اعداد و شمار کے مطابق اب تک 10 لاکھ 16 ہزار 450 مریض صحتیاب ہوئے ہیں۔


یہ اطلاع آج مہاراشٹر کے وزیر صحت راجیش ٹوپے نے دی ہے۔ 24 اگست تا 26 ستمبر تک پانچ لاکھ سے زائد کورونا مریض صحتیاب ہوئے ہیں۔ ریاست میں فعال کورونا مریضوں کی تعداد میں کمی واقع ہوئی ہے۔ ریاست میں اموات سے زیادہ صحتیاب ہونے والوں کی تعداد میں اضافہ درج کیا گیا ہے۔ ریاست میں صحتیاب ہونے والے مریضوں کی تعداد 76 فیصد ہے۔ ریاست میں 9  مارچ کو کورونا کے پہلا مریض پایا گیا تھا۔ 25 مارچ کو دو مریض صحتیاب ہو کرگھر واپس گئے تھے، اس کے بعد کورونا سے نجات پانے والوں کی تعداد میں روزافزوں اضافہ درج کیا جا رہا ہے۔ راجیش ٹوپے نے اس پر اطمینان کا اظہارکیا ہے جبکہ ابھی عام مسافروں کے لئے ٹرین خدمات شروع کرنے سے سرکار نے انکارکیا ہے اور فروری تک کوئی راحت ملنے کی امید نہیں ہے۔ میونسپل کمشنر اقبال سنگھ چہل نے بتایا کہ کورونا مریضوں کی صحتیابی کے باوجود ٹرین سروسیز شروع کرنے کا اب تک کوئی فیصلہ نہیں لیا گیا ہے۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Sep 28, 2020 12:00 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading