ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

کورونا وائرس لاک ڈاون : شوہر کے ساتھ بھوکے ہی 100 کلو میٹر پیدل چلی 8 ماہ کی حاملہ خاتون ، ہوئی یہ حالت

یاسمین نے پولیس کو بتایا کہ فیکٹری کے مالک نے انہیں رہنے کیلئے کمرہ دیا تھا ، لیکن لاک ڈاون کا اعلان ہونے کے بعد اس نے ہمیں کمرہ خالی کرنے کیلئے کہا اور ہمیں گاوں جانے کیلئے پیسہ دینے سے بھی انکار کردیا ۔

  • Share this:
کورونا وائرس لاک ڈاون : شوہر کے ساتھ بھوکے ہی 100 کلو میٹر پیدل چلی 8 ماہ کی حاملہ خاتون ، ہوئی یہ حالت
لاک ڈاون : شوہر کے ساتھ بھوکے ہی 100 کلو میٹر پیدل چلی حاملہ خاتون ، ہوئی یہ حالت

آٹھ ماہ کی حاملہ خاتون اور اس کا شوہر کھائے پیئے بغیر ہی اپنے گھر کیلئے چل پڑے ۔ 100 کلو میٹر کا سفر طے کرنے کے بعد جوڑا جب میرٹھ پہنچا تو وہ بے حال ہوچکا تھا ۔ میرٹھ کے لوگوں نے مالی مدد اور ایمبولینس کی پیش کش کی ۔ شوہر وکیل سہارنپور کی ایک فیکٹری میں کام کرتا تھا اور اس کے مالک نے لاک ڈاون کا اعلان ہونے کے بعد اس کو پیسے دئے بغیر ہی گھر جانے کیلئے کہہ دیا ۔ یہی وجہ ہے کہ جوڑا مجبوری میں سہارنپور سے بلند شہر اپنے گاوں کیلئے نکل پڑا تھا ۔


مقامی رہائشی نوین کمار اور رویندر ہفتہ کو میرٹھ کے سہراب گیٹ بس اڈے پر پہنچے ، تو اس جوڑے کو خستہ حالت میں دیکھا ۔ انہوں نے جوڑے سے بات چیت کی اور اس کی پریشانی سنی ، جس کے بعد نوین اور رویندر نے میرٹھ کے نوچندی پولیس اسٹیشن کے سب انسپکٹر پریم لال سنگھ کو اس کی اطلاع دی ۔


نوچندی پولیس اسٹیشن کے انچارج آشوتوش کمار نے بتایا کہ سنگھ اور مقامی لوگوں نے جوڑے کو کچھ کھانے اور کچھ نقد رقم دینے کے علاوہ ایمبولنس سے انہیں ان کے گاوں امرگڑھ بلند شہر تک چھوڑنے کا بندوبست کیا ۔ تھانہ انچارج کمار نے کہا کہ وکیل ایک کارخانے میں کام کرتا تھا اور اس نے دو دنوں میں اپنی اہلیہ کے ساتھ 100 کلو میٹر کی مسافت طے کی ۔


وکیل کی اہلیہ یاسمین نے پولیس کو بتایا کہ فیکٹری کے مالک نے انہیں رہنے کیلئے کمرہ دیا تھا ، لیکن لاک ڈاون کا اعلان ہونے کے بعد اس نے ہمیں کمرہ خالی کرنے کیلئے کہا اور ہمیں گاوں جانے کیلئے پیسہ دینے سے بھی انکار کردیا ۔

یاسمین نے بتایا کہ ان کے پاس کوئی متبادل نہیں بچا تھا ۔ ایسے میں ہم دونوں جمعرات کو سہارنپور سے اپنے گاوں جانے کیلئے پیدل ہی چل پڑے ۔ اس نے بتایا کہ قومی شاہراہ کے کنارے ریستوراں اور ڈھابے بند ہونے کی وجہ سے گزشتہ دو دنوں سے انہوں نے اناج کا ایک دانا بھی نہیں کھایا ہے ۔ خیال رہے کہ کورونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے کیلئے تین ہفتوں کے لاک ڈاون نے لاکھوں مزدوروں کو بے روزگار کردیا ہے ۔ یہ مزدور اپنا وجود بچانے کیلئے پیدل ہی اپنے گاوں جانے پر مجبور ہوگئے ہیں ۔
First published: Mar 30, 2020 06:59 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading