ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

یوروپ میں بلڈ کلاوٹنگ کی شکایتوں کے بعد اب کووی شیلڈ ویکسین کا جائزہ لے گا ہندوستان

یوروپ میں کچھ معاملات میں بلڈ کلاوٹنگ کی پریشانی دیکھے جانے کے بعد تشویش کا اظہار کیا گیا ہے ۔ ان تشویشات کے پیش نظر ہندوستان بھی اب اس ویکیسن کا جائزہ لے گا ۔ آکسفورڈ ۔ ایسٹریزینکا کے اس پروجیکٹ میں ہندوستان کی دوا ساز کمپنی سیرم انسٹی ٹیوٹ آف انڈیا بھی پارٹنر رہی ہے ۔ سیرم انسٹی ٹیوٹ اس ویکسین کو کووی شیلڈ کے نام سے بیچ رہا ہے ۔

  • Share this:
یوروپ میں بلڈ کلاوٹنگ کی شکایتوں کے بعد اب کووی شیلڈ ویکسین کا جائزہ لے گا ہندوستان
یوروپ میں بلڈ کلاوٹنگ کی شکایتوں کے بعد کووی شیلڈ ویکسین کا جائزہ لے گا ہندوستان

فارما کمپنی ایسٹریزینکا اور آکسفورڈ یونیورسٹی کے ذریعہ تیار کی گئی کورونا ویکسین کو لے کر یوروپ میں کچھ سنگین سائیڈ افیکٹ نظر آرہے ہیں ۔ کچھ معاملات میں بلڈ کلاوٹنگ کی پریشانی دیکھے جانے کے بعد تشویش کا اظہار کیا گیا ہے ۔ ان تشویشات کے پیش نظر ہندوستان بھی اب اس ویکیسن کا جائزہ لے گا ۔ آکسفورڈ ۔ ایسٹریزینکا کے اس پروجیکٹ میں ہندوستان کی دوا ساز کمپنی سیرم انسٹی ٹیوٹ آف انڈیا بھی پارٹنر رہی ہے ۔ سیرم انسٹی ٹیوٹ اس ویکسین کو کووی شیلڈ کے نام سے بیچ رہا ہے ۔


غور طلب ہے کہ یوروپ کے کئی ممالک میں بلڈ کلاوٹنگ کے ڈر کی وجہ سے کووی شیلڈ کا ویکسینیشن روک دیا گیا ہے ۔ یوروپی ممالک ڈنمارک ، ناروے اور آئس لینڈ نے اپنے یہاں آکسفورڈ ایسٹریزینکا ویکسین سے ویکسینیشن پر فوری روک لگادی ہے ۔


نیشنل ٹاسک ٹیم کے رکن نے کیا کہا ؟


دی منٹ میں شائع ایک رپورٹ کے مطابق کورونا ویکسین کیلئے ہندوستان کی نیشنل ٹاسک فورس کے رکن این کے اروڑہ نے کہا کہ ہم مخالف حالات والے واقعات پر دھیان دے رہے ہیں ۔ خاص طور پر ویکسین کے بعد موت اور اسپتال میں بھرتی کرائے جانے جیسے واقعات پر ۔ ہم اس بارے میں ضرور مطلع کریں گے اگر کوئی سنگین بات نظر آئے گی ۔

حالانکہ اروڑہ نے یہ بھی کہا کہ فوری طور پر تشویش کی کوئی بات نظر نہیں آرہی ہے ۔ کیونکہ ملک میں سنگین سائیڈ افیکٹ کے انتہائی کم معاملات سامنے آئے ہیں ۔ اب ہم بلڈ کلاوٹنگ کی پریشانیوں پر بھی نگاہ بنائے ہوئے ہیں ۔

جمعہ کو 20 لاکھ لوگوں کو دی گئی ویکسین

اس سے پہلے وزارت صحت نے ہفتہ کو بتایا کہ ملک میں کورونا وائرس سے بچاو کیلئے ایک دن پہلے یعنی جمعہ کو 20 لاکھ سے زیادہ ڈوز لوگوں کو دی گئی ہیں ۔ ایک دن میں ٹیکے کی یہ سب سے زیادہ ڈوز ہے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Mar 13, 2021 06:00 PM IST