உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Cyclone Jawad: طوفان جواد کا خطرہ ہوا کم! لیکن اب بھی موسلادھار بارش کا الرٹ جاری

    اوڈیشہ کے راستے سمندری طوفان کمزور پڑ گیا ہے۔

    اوڈیشہ کے راستے سمندری طوفان کمزور پڑ گیا ہے۔

    آئی ایم ڈی کے ڈائرکٹر جنرل مرتیونجے موہاپاترا نے کہا کہ اوڈیشہ کے راستے سمندری طوفان کمزور پڑ گیا ہے۔ یہ اگلے 12 گھنٹوں میں شمال کی طرف بڑھے گا اور اڈیشہ کے ساحل کے ساتھ شمال-شمال مشرق کی طرف گہرے دباؤ کے طور پر اتوار کی دوپہر پوری تک پہنچے گا۔

    • Share this:
      ہندوستانی محکمہ موسمیات (IMD) نے کہا کہ سمندری طوفان جواد اڈیشہ کے راستے میں کمزور ہو کر گہرے ڈپریشن میں تبدیل ہو گیا، جس کی وجہ سے خطرہ کسی حد تک کم ہوگیا ہے۔ آج ریاست کے 13 اضلاع کے لیے بہت بھاری سے بھاری بارش کا الرٹ جاری کیا گیا ہے۔

      ہندوستانی محکمہ موسمیات نے پوری اور جگت سنگھ پور اضلاع کے لیے ریڈ الرٹ جاری کیا، جب کہ میور بھنج، بالیشور، بھدرک اور کیندر پاڑا اضلاع کے لیے اورنج الرٹ جاری کیا گیا۔ کیندوجھار، انوگل، ڈھینکنال، نیاگڑا، کھوردا، کٹک اور جاج پور اضلاع کے لیے یلو الرٹ جاری کیا گیا ہے۔ گنجام، پوری، جگت سنگھ پور اور کھوردھا اضلاع میں شدید بارش کا امکان ہے۔ کٹک اور بھونیشور میں زیادہ سے زیادہ بارش ہونے کا امکان ہے۔

      آئی ایم ڈی کے ڈائرکٹر جنرل مرتیونجے موہاپاترا نے کہا کہ اوڈیشہ کے راستے سمندری طوفان کمزور پڑ گیا ہے۔ یہ اگلے 12 گھنٹوں میں شمال کی طرف بڑھے گا اور اڈیشہ کے ساحل کے ساتھ شمال-شمال مشرق کی طرف گہرے دباؤ کے طور پر اتوار کی دوپہر پوری تک پہنچے گا۔ موہا پاترا نے کہا کہ طوفان کے مزید کمزور ہونے اور مغربی بنگال کے ساحل کی طرف شمال-شمال مشرق کی طرف بڑھنے کا امکان ہے۔ اگلے 12 گھنٹوں میں طوفان کمزور ہو کر گہرے ڈپریشن میں تبدیل ہو جائے گا۔

      تمام ضلع کلکٹرس کو ہدایت دی گئی ہے کہ وہ سات دنوں کے اندر نقصان کا تخمینہ ترجیحی بنیادوں پر کریں۔
      تمام ضلع کلکٹرس کو ہدایت دی گئی ہے کہ وہ سات دنوں کے اندر نقصان کا تخمینہ ترجیحی بنیادوں پر کریں۔


      انہوں نے کہا کہ ساحلی اضلاع میں شدید بارش کا امکان ہے۔ طوفان میں 55 سے 65 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے ہوا چل رہی تھی۔ آئی ایم ڈی نے ماہی گیروں کے لیے انتباہ جاری کیا ہے کہ وہ سمندر میں نہ جائیں حالانکہ بارش کی شدت کے لحاظ سے لوگوں کو نشیبی علاقوں سے نکالا جائے گا۔
      محکمہ موسمیات کے علاقائی ڈائریکٹر ایچ آر بسواس نے کہا کہ ’’سائیکلونک طوفان کمزور ہو گیا ہے اور آہستہ آہستہ کمزور ہو کر پوری ساحل پر پہنچ جائے گا۔ گہرے ڈپریشن میں تبدیل ہونے کے بعد یہ مغربی بنگال کی طرف بڑھے گا۔ صورتحال کے پیش نظر ماہی گیروں کو سمندر میں نہ جانے کا مشورہ دیا گیا ہے۔ اوڈیشہ کے ساحلی اضلاع میں بھاری سے بہت زیادہ بارش ہونے کا امکان ہے۔ تمام بندرگاہوں کے لیے سگنل نمبر 4 جاری کر دیا گیا ہے۔

      اگرچہ طوفان کا کوئی خطرہ نہیں ہے، لیکن ریاستی حکومت کسی بھی قسم کی صورتحال سے نمٹنے کے لیے اقدامات کر رہی ہے۔ انفراسٹرکچر کو نقصان پہنچنے کا امکان کم ہے۔ لیکن فصلوں کو کچھ نقصان ہو سکتا ہے۔ تقریباً 1500 لوگوں کو پہلے ہی نکالا جا چکا ہے، جن میں 300 حاملہ خواتین بھی شامل ہیں۔ مختلف مقامات پر ریسکیو اور ریلیف ٹیمیں بھی تعینات کر دی گئی ہیں۔

      تمام ضلع کلکٹرس کو ہدایت دی گئی ہے کہ وہ سات دنوں کے اندر نقصان کا تخمینہ ترجیحی بنیادوں پر کریں۔ اسپیشل ریلیف کمشنر پردیپ جینا نے کہا کہ ’’طوفان جواد کے کمزور ہونے کے آثار دکھائی دے رہے ہیں، جس کی پیش گوئی آئی ایم ڈی نے کی ہے۔ جب تک یہ پوری ساحل تک پہنچے گا، یہ ایک گہرا دباؤ بن جائے گا اور ہوا کی رفتار تقریباً 60 سے 70 کلومیٹر فی گھنٹہ ہوگی‘‘۔
      قومی، بین الااقوامی، جموں و کشمیر کی تازہ ترین خبروں کے علاوہ  تعلیم و روزگار اور بزنس  کی خبروں کے لیے  نیوز18 اردو کو ٹویٹر اور فیس بک پر فالو کریں۔ 
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: