உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    بی جے پی لیڈر رادھا موہن سنگھ نے اسدالدین اویسی کو بتایا ’وائرس‘، کہا- مودی راج میں ایسے لوگوں کے لئے ویکسین تیار

    بی جے پی لیڈر نے اسدالدین اویسی کو بتایا ’وائرس‘، کہا- مودی راج میں ایسے لوگوں کے لئے ویکسین تیار

    بی جے پی لیڈر نے اسدالدین اویسی کو بتایا ’وائرس‘، کہا- مودی راج میں ایسے لوگوں کے لئے ویکسین تیار

    بی جے پی کے قومی نائب صدر اور مشرقی چمپارن کے رکن پارلیمنٹ رادھا موہن سنگھ (Radha Mohan SIngh) نے آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین (اے آئی ایم آئی ایم) کے صدر اور حیدرآباد کے رکن پارلیمنٹ اسدالدین اویسی (Asaduddin Owaisi) پر نازیبا الفاظ کا استعمال کرتے ہوئے ملک کے لئے بانٹنے والا قرار دیتے ہوئے وائرس بتا دیا۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:
      دربھنگہ: بی جے پی کے قومی نائب صدر اور مشرقی چمپارن کے رکن پارلیمنٹ رادھا موہن سنگھ (Radha Mohan SIngh) نے آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین (اے آئی ایم آئی ایم) کے صدر اور حیدرآباد کے رکن پارلیمنٹ اسدالدین اویسی (Asaduddin Owaisi) پر نازیبا الفاظ کا استعمال کرتے ہوئے ملک کے لئے بانٹنے والا قرار دیتے ہوئے وائرس بتا دیا۔ دربھنگہ (Darbhanga) میں میڈیا اہلکاروں کے سامنے انہوں نے اسی بیان کو دوہرایا، جو موتیہاری (Motihari) میں دیا تھا۔ رادھا موہن سنگھ نے اے آئی ایم آئی ایم (AIMIM) کے سربراہ اسد الدین اویسی (Asaduddin Owaisi) کو وائرس بتاتے ہوئے ملک کو بانٹنے کی تیاری کرنے والا الزام لگایا۔

      بی جے پی لیڈر رادھا موہن سنگھ (Radha Mohan SIngh) نے کہا کہ ایسے لوگ وائرس ہیں اور مودی راج میں ایسے عناصر کے لئے بھی ویکسین (Vaccine) تیار ہوگئی ہے۔ ایسے لوگوں کو چن چن کر مودی جی کا ٹیکہ لگایا جا رہا ہے اور آنے والے دنوں میں لگتا رہے گا۔ واضح رہے کہ رادھا موہن سنگھ دربھنگہ میں دو روزہ کسان مورچہ کمیٹی کی میٹنگ میں شامل ہونے دربھنگہ پہنچے تھے۔ وہاں انہوں نے دربھنگہ ریلوے اسٹیشن کا جائزہ لینے کے ضمن میں موتیہاری میں دیئے بیان کو دوہرایا۔ رادھا موہن سنگھ سے پہلے مدھیہ پردیش حکومت میں وزیر وشواس سارنگ نے گزشتہ جمعہ کو اسدالدین اویسی سے متعلق نازیبا الفاظ کا استعمال کیا تھا۔ انہوں نے اسدالدین اویسی کو وارننگ دیتے ہوئے کہا تھا کہ وہ محمد علی جناح کی طرح نہ بنیں۔

      اسدالدین اویسی نے حال ہی میں اترپردیش کا دورہ کرکے آئندہ اسمبلی انتخابات میں تال ٹھوکنے کی بات کہی تھی۔ اپنے تین روزہ دورہ پر انہوں نے ریاست کے الگ الگ حصوں میں جاکر عوامی جلسے کئے تھے۔
      اسدالدین اویسی نے حال ہی میں اترپردیش کا دورہ کرکے آئندہ اسمبلی انتخابات میں تال ٹھوکنے کی بات کہی تھی۔ اپنے تین روزہ دورہ پر انہوں نے ریاست کے الگ الگ حصوں میں جاکر عوامی جلسے کئے تھے۔


      اترپردیش میں اسمبلی انتخابات لڑنے کی تیاری میں ہے اے آئی ایم آئی ایم

      دراصل، اسدالدین اویسی نے حال ہی میں اترپردیش کا دورہ کرکے آئندہ اسمبلی انتخابات میں تال ٹھوکنے کی بات کہی تھی۔ اپنے تین روزہ دورہ پر انہوں نے ریاست کے الگ الگ حصوں میں جاکر عوامی جلسے کئے تھے۔ اس دوران انہوں نے اعلان کیا تھا کہ ان کی پارٹی اے آئی ایم آئی ایم 100 اسمبلی سیٹوں پر الیکشن لڑے گی۔ اسد الدین اویسی نے اپنے عوامی جلسے میں کہا تھا کہ اترپردیش میں 110 اسمبلی علاقوں میں مسلم طبقے کی آبادی 39-30 فیصد ہے، جبکہ 44 سیٹوں پر یہ 49-40 فیصد اور 11 سیٹوں پر 65-50 فیصد تک ہے۔ واضح رہے کہ ان کا فوکس انہیں سیٹوں پر زیادہ ہے۔

      اسد الدین اویسی کا منصوبہ بہار کی طرح ہی اترپردیش میں اپنے امیدوار اتار کر الیکشن میں کچھ سیٹیں حاصل کرنے کا ہے۔ واضح رہے کہ بہار اسمبلی انتخابات 2020 میں اے آئی ایم آئی ایم نے مسلم اکثریتی علاقوں میں پانچ سیٹوں پر جیت حاصل کی تھی۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: