پی او کے میں کارروائی کے بعد ستیہ پال ملک نے کہا : پاکستان باز نہیں آیا تو ہم اندر جاکر کریں گے کارروائی

جموں وکشمیر کے گورنر ستیہ پال ملک نے 'جنگ' کو ایک بری چیز قرار دیتے ہوئے وارننگ دی کہ پاکستان اپنی حرکتوں سے باز نہیں آیا تو ہم اندر جاکر کارروائی کریں گے۔

Oct 21, 2019 05:28 PM IST | Updated on: Oct 21, 2019 05:28 PM IST
پی او کے میں کارروائی کے بعد ستیہ پال ملک نے کہا : پاکستان باز نہیں آیا تو ہم اندر جاکر کریں گے کارروائی

پی او کے میں کارروائی کے بعد ستیہ پال ملک نے کہا : ہم پاکستان میں دہشت گردانہ کیمپوں کو پوری طرح ختم کردیں گے

جموں وکشمیر کے گورنر ستیہ پال ملک نے 'جنگ' کو ایک بری چیز قرار دیتے ہوئے وارننگ دی کہ پاکستان اپنی حرکتوں سے باز نہیں آیا تو ہم اندر جاکر کارروائی کریں گے۔ انہوں نے کشمیری ملی ٹینٹوں سے واپسی اختیار کرنے کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ انہیں اپنی کارروائیوں سے کچھ حاصل نہیں ہوگا۔ ساتھ ہی یہ بھی کہا کہ یکم نومبر سے ایک 'نیا کشمیر' معرض وجود میں آئے گا۔

گورنر نے ان باتوں کا اظہار پیر کے روز سری نگر کے مضافاتی علاقہ زیون میں واقع جموں وکشمیر آرمڈ پولیس کمپلیکس میں منعقدہ پولیس کے یادگاری دن کے پریڈ کی تقریب کے حاشئے پر نامہ نگاروں کے سوالات کا جواب دیتے ہوئے کیا۔ گورنر نے سرحدوں پر پاکستان کے خلاف بوفورس ٹینکوں کے استعمال سے متعلق ایک سوال کے جواب میں کہا لپ ٹینکوں کا استعمال کیوں نہیں ہوگا۔ اگر نہیں کریں گے تو وہ روز جنگ بندی معاہدی کی خلاف ورزی کریں گے۔ اس کو اب روکنا پڑے گا۔

Loading...

ان کا مزید کہنا تھا کہ ہم دہشت گردوں کے کیمپوں کو برباد کردیں گے۔ اگر پاکستان باز نہیں آیا تو ہم اندر جائیں گے۔ گورنر ستیہ پال ملک نے جنگ کو ایک بری چیز قرار دیتے ہوئے کہا کہ جنگ ایک بری چیز ہے۔ اگر پاکستان باز نہیں آیا تو کل جو ہوا ہے اس سے زیادہ ہوگا ۔ انہوں نے کہا کہ یہاں کے لوگوں کو میں یہ کہنا چاہتا ہوں کہ پہلی تاریخ سے ایک نیا کشمیر ہوگا ۔ اس میں حصہ داری کریں اور اس کو آگے بڑھائیں۔

گورنر نے کشمیری ملی ٹینٹوں سے واپسی اختیار کرنے کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ انہیں اپنی کارروائیوں سے کچھ حاصل نہیں ہوگا۔ ان کا کہنا تھا کہ یہ جو لڑکے گھوم رہے ہیں ، میں ان سے بھی اپیل کرتا ہوں کہ اب تک آپ کو کیا حاصل ہوا۔ آپ آگے آئیے اور اپنی ریاست کو آگے بڑھایئے۔

Loading...