உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Madhya Pradesh کے اسکولی نصاب میں طلبا کو رام چرت مانس پڑھانے کا فیصلہ

    مدھیہ پردیش میں شیوراج سنگھ حکومت کے ذریعہ اسکولی نصاب میں رام چرت مانس کو شامل کرنے اور طلبا کو بھگوان رام کے تعلق سے تعلیم دینے کے فیصلہ کی مخالفت شروع ہوگئی ہے۔ حکومت کے ذریعہ جہاں رام چرت مانس کو اسکول نصاب میں شامل کرنے کو وقت کی ضرورت سے تعبیر کیا جا رہا ہے۔

    مدھیہ پردیش میں شیوراج سنگھ حکومت کے ذریعہ اسکولی نصاب میں رام چرت مانس کو شامل کرنے اور طلبا کو بھگوان رام کے تعلق سے تعلیم دینے کے فیصلہ کی مخالفت شروع ہوگئی ہے۔ حکومت کے ذریعہ جہاں رام چرت مانس کو اسکول نصاب میں شامل کرنے کو وقت کی ضرورت سے تعبیر کیا جا رہا ہے۔

    مدھیہ پردیش میں شیوراج سنگھ حکومت کے ذریعہ اسکولی نصاب میں رام چرت مانس کو شامل کرنے اور طلبا کو بھگوان رام کے تعلق سے تعلیم دینے کے فیصلہ کی مخالفت شروع ہوگئی ہے۔ حکومت کے ذریعہ جہاں رام چرت مانس کو اسکول نصاب میں شامل کرنے کو وقت کی ضرورت سے تعبیر کیا جا رہا ہے۔

    • Share this:
    بھوپال: مدھیہ پردیش میں شیوراج سنگھ حکومت کے ذریعہ اسکولی نصاب میں رام چرت مانس کو شامل کرنے اور طلبا کو بھگوان رام کے تعلق سے تعلیم دینے کے فیصلہ کی مخالفت شروع ہوگئی ہے۔ حکومت کے ذریعہ جہاں رام چرت مانس کو اسکول نصاب میں شامل کرنے کو وقت کی ضرورت سے تعبیر کیا جا رہا ہے۔

    وہیں مدھیہ پردیش جمعیت علما نے حکومت کے فیصلہ کو آئین کی خلاف ورزی سے تعبیرکرتے ہوئے ایک مذہب کی تعلیم کو دوسرے مذاہب کے طلبا پر زبردستی تھوپنے کا الزام لگایا ہے۔ حکومت کے ذریعہ صوبہ میں شری رام سنگھرالیہ بھی بنانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

    وزیر اعلی شیوراج سنگھ کہتے ہیں کہ بھگوان رام سے جڑے جو تاریخی واقعات ہیں، اپنی روایت اور اعلی قدریں، اپنی تہذیب اورسنسکارکی تشہیر کرنےکا کام کیا جا رہا ہے۔ میٹنگ میں ہم لوگ آگے اور کیا کریں اس پرغور کیا گیا ہے۔ ایودھیا کے واقعہ پر مضمون نویسی مقابلہ کا بھی انعقاد کیا جا رہا ہے، بچے رام چرت مانس پڑھیں، رام چرت مانس کو سمجھیں، بھگوان رام کی سوانح کے بارے میں جانیں  اور اس کو اپنی زندگی کا حصہ بنائیں اور بھگوان رام کی تعلیمات پر چل کر اپنی زندگی کو روشن کریں۔ اسی کے ساتھ ایک شری رام سنھگرالیہ بھی بنانے کا خاکہ بھی میٹنگ میں تیار کیا گیا ہے۔ بھگوان شری رام اور ان کی تعلیمات پر سنگھرالیہ مبنی ہوگا تاکہ اس کو دیکھ کر بھی لوگ اپنی زندگی میں تبدیلی لا سکیں۔

     وزیر اعلی شیوراج سنگھ کہتے ہیں کہ بھگوان رام سے جڑے جو تاریخی واقعات ہیں، اپنی روایت اور اعلی قدریں، اپنی تہذیب اورسنسکارکی تشہیر کرنےکا کام کیا جا رہا ہے۔

    وزیر اعلی شیوراج سنگھ کہتے ہیں کہ بھگوان رام سے جڑے جو تاریخی واقعات ہیں، اپنی روایت اور اعلی قدریں، اپنی تہذیب اورسنسکارکی تشہیر کرنےکا کام کیا جا رہا ہے۔


    وہیں مدھیہ پردیش جمیعت علما نے شیوراج سرکار کے فیصلہ کو ایک مذہب کی مذہبی تعلیم کو طلبا پر زبردستی تھوپنے کا الزام لگایا ہے۔ مدھیہ پردیش جمعیت علما کے صدر حاجی محمد ہارون کا کہنا ہے کہ ہندوستان ایک کثیر لسانی اور کثیرالمذاہب ملک ہے اور یہاں کی قدریں مشترک ہیں۔ ایسے میں اسکولی نصاب میں صرف ایک مذہب کی مذہبی تعلیم کو طلبا پر تھوپنا نہ صرف جمہوری اقدار کے خلاف ہے بلکہ آئین کی بھی خلاف ورزی ہے۔

    انہوں نے کہا کہ ہم حکومت کے اس فیصلہ کی مذمت کرتے ہیں اور حکومت سے اس فیصلہ کو واپس لینے کا مطالبہ کرتے ہیں۔ ہم یہاں یہ بتانا چاہتے ہیں کہ ہم رام چرت مانس پڑھانے کے خلاف نہیں ہیں بلکہ ہم چاہتے ہیں کہ طلبا کو رام چرت مانس کے ساتھ دوسرے مذاہب کی اعلی قدروں کی بھی تعلیم یکساں طور پر دی جائے۔ اس کے لئے جمہوریت ہر محاذ پر قانون لڑائی لڑے گی۔
    Published by:Nisar Ahmad
    First published: