ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

دہلی اسمبلی انتخابات : منوج تیواری کا بڑا دعوی ، ایگزٹ پول تین بجے تک کا ، بی جے پی کو ملیں گی اتنی سیٹیں

دہلی بی جے پی کے صدر منوج تیواری نے کہا کہ بی جے پی 48 پلس سیٹوں کے ساتھ حکومت بنانے جارہی ہے ۔

  • Share this:
دہلی اسمبلی انتخابات : منوج تیواری کا بڑا دعوی ، ایگزٹ پول تین بجے تک کا ، بی جے پی کو ملیں گی اتنی سیٹیں
منوج تیواری ۔ تصویر : اے این آئی ۔

دہلی اسمبلی انتخابات کیلئے ہفتہ کو ووٹنگ ہوئی ۔ ووٹنگ کے بعد ایگزٹ پولس کا دور شروع ہوا ، جس میں عام آدمی پارٹی کو بڑی سبقت دکھائی گئی ہے ۔ ادھر بی جے پی کے ریاستی صدر منوج تیواری نے ایک مرتبہ پھر دہلی میں بی جے پی کی حکومت بننے کا دعوی کیا ہے۔


دہلی بی جے پی کے صدر منوج تیواری نے نیوز ایجنسی اے این آئی سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ بی جے پی 48 پلس سیٹوں کے ساتھ حکومت بنانے جارہی ہے ۔ انہوں نے دلیل دی کہ یہ ایگزٹ پولس تین بجے تک کے ہیں ، اس کے بعد سات ساڑھے سات بجے تک ووٹنگ ہوئی ۔ ساتھ ہی انہوں نے عام آدمی پارٹی پر بھی نشانہ سادھا ۔ منوج تیواری نے کہا کہ اے اے پی والے کیوں پریشان ہورہے ہیں ، ایگزٹ پولس میں تو ان کو 44 سیٹیں دی گئی ہیں ، پھر بھی ان کی سانس لٹکی ہوئی ہے ۔ ابھی سے ان کو ای وی ایم کو قصوروار ٹھہرانے کی بے چینی شروع ہوگئی ہے ۔



منوج تیواری نے کہا کہ ہم تو یہی بول رہے ہیں کہ ای وی ایم کا رونا کیوں رو رہے ہو ، مطلب اگر اے اے پی جیت گئی تو ای وی ایم ٹھیک ہے اور اگر بی جے پی جیت گئی تو ای وی ایم خراب ہے ۔ جھارکھنڈ میں ہم نہیں جیت پائے تو ہم نے ای وی ایم کو قصوروار ٹھہرایا کیا ؟ اپنے کاموں کو ذمہ دار ٹھہراو ۔

خیال رہے کہ ہفتہ کو ووٹنگ ختم ہونے کے بعد راجیہ سبھا کے رکن سنجے سنگھ نے ایک ویڈیو ٹویٹ کرکے پوچھا کہ الیکشن کمیشن اس واقعہ کا نوٹس لے ۔ یہ کس جگہ ای وی ایم اتاری جارہی ہے ۔ آس پاس تو کوئی سینٹر نہیں ہے ۔ اے اے پی لیڈر گوپال رائے نے بھی الزام لگایا کہ بابرپور کے سرسوتی ودیا مندر اسکول میں ایک ملازم ای وی ایم کے ساتھ پکڑا گیا ۔ سنجے سنگھ اور گوپال رائے نے بتایا کہ اے اے پی کے کارکنان اب 11 فروری تک اسٹرانگ روم کے باہر بیٹھ کر کے نگرانی بھی کریں گے ۔
First published: Feb 09, 2020 11:03 PM IST