உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    اروند کیجریوال پر تبصرہ کرنے سے متعلق دہلی اسمبلی میں ہنگامہ، اسپیکر نے BJP کے 3 اراکین اسمبلی کو کیا معطل

    اروند کیجریوال پر تبصرہ کرنے کو لے اسمبلی میں ہنگامہ، اسپیکر نے BJP کے 3 اراکین اسمبلی کو کیا معطل

    اروند کیجریوال پر تبصرہ کرنے کو لے اسمبلی میں ہنگامہ، اسپیکر نے BJP کے 3 اراکین اسمبلی کو کیا معطل

    Delhi Assembly News: اسمبلی اسپیکر رام نواس گوئل (Ram Niwas Goel) نے بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کی شہر یونٹ کے صدر آدیش کمار کے ذریعہ وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال (Arvind Kejriwal) کے خلاف کئے گئے مبینہ ’قابل توہین‘ تبصرہ کو لے کر ایوان میں عام آدمی پارٹی کے اراکین اسمبلی کی مخالفت ظاہر کئے جانے کے درمیان بی جے پی کے تین اراکین اسمبلی کو پیر کے روز معطل کردیا گیا۔

    • Share this:
      نئی دہلی: دہلی اسمبلی (Delhi Assembly) میں وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال کے خلاف تبصرہ پر جم کر ہنگامہ ہوا۔ اسمبلی اسپیکر رام نواس گوئل (Ram Niwas Goel) نے بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کی شہر یونٹ کے صدر آدیش کمار کے ذریعہ وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال (Arvind Kejriwal) کے خلاف کئے گئے مبینہ ’قابل توہین‘ تبصرہ کو لے کر ایوان میں عام آدمی پارٹی کے اراکین اسمبلی کی مخالفت ظاہر کئے جانے کے درمیان بی جے پی کے تین اراکین اسمبلی کو پیر کے روز معطل کردیا گیا۔

      دراصل، اسمبلی کی کارروائی کے دوران بی جے پی کے اراکین اسمبلی انل باجپئی، جتیندر مہاجن اور اجے مہاویر اپنے مقامات پر کھڑے ہوگئے تھے، جس کے بعد اسپیکر نے ان سے بیٹھنے کی اپیل کی۔ جب وہ نہیں مانے تو پھر اسپیکر نے انہیں ایوان سے باہر جانے کو کہہ دیا۔ اس کے بعد ایک بار پھر ایوان کی کارروائی 15 منٹ کے لئے ملتوی کردی گئی۔ اس سے پہلے صبح بھی کارروائی کو 15 منٹ کے لئے ملتوی کیا گیا تھا۔

      صبح ایوان کی کارروائی شروع ہوتے ہی عام آدمی پارٹی (آپ) کے اراکین اسمبلی آسن کے پاس آگئے تھے اور اروند کیجریوال کے خلاف بی جے پی کے لیڈر کے تبصرہ کی مخالفت میں نعرے بازی کرنے لگے تھے۔ عام آدمی پارٹی کے رکن اسمبلی موہندر گوئل نے مطالبہ کیا کہ آدیش گپتا معافی مانگیں۔ انہوں نے آدیش گپتا کے خلاف مذمتی قرار داد پیش کئے جانے کا مطالبہ بھی کیا۔

      انہوں نے کہا، ’وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال کے خلاف قابل اعتراض تبصرہ کے لئے بی جے پی کی دہلی یونٹ کے اسپیکر آدیش گپتا کے خلاف ایوان میں مذمتی قرار داد کی تجویز لائی جانی چاہئے۔ اپوزیشن کے لیڈر کو معافی مانگنی چاہئے‘۔ واضح رہے کہ دہلی میں 23 مارچ سے 29 مارچ تک اسمبلی میں بجٹ سیشن جاری ہے۔

       

       
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: