உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    دہلی آبروریزی معاملہ کا سیاہ سچ: فحش فلمیں دیکھتا تھا ملزم پجاری، معصوم سے کرواتا تھا مالش

    Delhi Cant Rape Case: کرائم رپورٹ کی سونپی گئی رپورٹ سے پتہ چلا ہے کہ دلت نابالغ سے آبروریزی اور پھر اس کے قتل کے معاملے کے ملزمین نے جھوٹ بولا تھا۔ ماہرین کے ذریعہ کرائم سین کو ردعمل ظاہر کرنے پر واٹر کولر میں شارٹ سرکٹ کو کوئی نشان نہیں ملا۔

    Delhi Cant Rape Case: کرائم رپورٹ کی سونپی گئی رپورٹ سے پتہ چلا ہے کہ دلت نابالغ سے آبروریزی اور پھر اس کے قتل کے معاملے کے ملزمین نے جھوٹ بولا تھا۔ ماہرین کے ذریعہ کرائم سین کو ردعمل ظاہر کرنے پر واٹر کولر میں شارٹ سرکٹ کو کوئی نشان نہیں ملا۔

    Delhi Cant Rape Case: کرائم رپورٹ کی سونپی گئی رپورٹ سے پتہ چلا ہے کہ دلت نابالغ سے آبروریزی اور پھر اس کے قتل کے معاملے کے ملزمین نے جھوٹ بولا تھا۔ ماہرین کے ذریعہ کرائم سین کو ردعمل ظاہر کرنے پر واٹر کولر میں شارٹ سرکٹ کو کوئی نشان نہیں ملا۔

    • Share this:
      نئی دہلی: ملک کی راجدھانی دہلی کے کینٹ علاقے میں دلت نابالغ سے آبروریزی اور پھر اس کے قتل معاملے میں حیران کن انکشاف ہوا ہے۔ دہلی پولیس کے ذرائع نے بتایا کہ واٹر کولر میں شارٹ سرکٹ کا کوئی خدشہ نہیں ملا ہے۔ کولر کی صفائی بھی نہیں کی گئی تھی۔ دہلی کینٹ آبروریزی معاملہ میں (Delhi Cant Rape Case) اس بابت کرائم برانچ کی رپورٹ مل گئی ہے۔ واضح رہے کہ اہم ملزم رادھے شیام اور شمشان گھاٹ کے پجاری نے جانچ ٹیم کو گمراہ کرنے کی کوشش کرتے ہوئے کہا تھا کہ واٹر کولر سے بجلی کا جھٹکا لگتا تھا اور مرمت کے لئے ایک الیکٹریشین سے بھی رابطہ کیا گیا تھا۔

      کرائم رپورٹ کی سونپی گئی رپورٹ سے پتہ چلا ہے کہ دلت نابالغ سے آبروریزی اور پھر اس کے قتل کے معاملے کے ملزمین نے جھوٹ بولا تھا۔ ماہرین کے ذریعہ کرائم سین کو ردعمل ظاہر کرنے پر واٹر کولر میں شارٹ سرکٹ کو کوئی نشان نہیں ملا۔ واضح رہے کہ پوچھ گچھ کے ابتدائی مرحلے میں ملزمین نے پولیس کو بتایا تھا کہ متاثرہ کی موت کرنٹ لگنے سے ہوئی۔

      چارج شیٹ جلد

      ذرائع کی مانیں تو چاروں ملزمین کے خلاف جلد ہی دہلی پولیس چارج شیٹ داخل کرے گی۔ پولیس اس ماہ کے آخر تک چارج شیٹ داخل کر دے گی۔ ذرائع بتاتے ہیں کہ چاروں ملزمین میں سے کسی کو بھی کرائم برانچ کی ایس آئی ٹی نے کلین چٹ نہیں دی گئی ہے۔ جانچ ٹیم کے پاس بغیر پالی گراف ٹسٹ کے چاروں کو چارج شیٹ کرنے کے لئے مناسب ثبوت ہیں۔ اہم ملزمین نے ایس آئی ٹی ٹیم کو گمراہ کرنے کی کوشش کی۔

      الیکٹریشین بنا سرکاری گواہ

      اہم ملزم رادھے شیام اور شمشان گھاٹ کے پجاری نے ایس آئی ٹیم ٹیم کو گمراہ کرنے کی کوشش کرتے ہوئے کہا تھا کہ واٹر کولر سے بجلی کا جھٹکا لگتا تھا۔ اس کی مرمت کے لئے ایک الیکٹریشین سے بھی رابطہ کیا گیا تھا۔ شمشان گھاٹ کے بجلی مستری (جو اب پولیس جانچ میں اہم گواہ ہے) نے اہم ملزم کے ذریعہ کئے گئے اس دعوے کو مسترد کیا ہے۔ جانچ میں یہ بھی سامنے آیا کہ پجاری فحش فلمیں دیکھتا تھا اور مہلوک لڑکی سے مالش کرواتا تھا۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: