روی داس مندرکے انہدام کے خلاف احتجاج کا معاملہ : بھیم سینا کے چیف چندرشیکھر سمیت 96 افرادعدالتی تحویل میں

روی داس مندر گرائے جانے کے خلاف ہوئے احتجاج کے بعد بھیم سینا کے چیف چندرشیکھرسمیت 96 لوگوں کو پولیس نے گرفتار کر لیا ہے۔ان لوگوں پرماحول بگاڑنے۔مارپیٹ کرنے کے علاوہ دیگرالزامات عائد کیے گئے ہیں۔

Aug 23, 2019 01:23 PM IST | Updated on: Aug 23, 2019 01:23 PM IST
روی داس مندرکے انہدام کے خلاف احتجاج کا معاملہ : بھیم سینا کے چیف چندرشیکھر سمیت 96 افرادعدالتی تحویل میں

روی داس مندرکے انہدام کے خلاف احتجاج کا معاملہ: بھیم سینا کے چیف چندرشیکھرسمیت 96افرادعدالتی تحویل میں۔(تصویر:نیوز18اردو)۔

روی داس مندر گرائے جانے کے خلاف ہوئے احتجاج کے بعد بھیم سینا کے چیف چندرشیکھرسمیت 96 لوگوں کو پولیس نے گرفتار کر لیا ہے۔ان لوگوں پرماحول بگاڑنے۔مارپیٹ کرنے کے علاوہ دیگرالزامات عائد کیے گئے ہیں ۔کورٹ نے ا ن لوگوں کو 14 دنوں کی عدالتی تحویل میں بھیج دیا ہے۔بھیم سینا کے چیف چندر شیکھر کا کہنا ہے کہ ان کے ساتھ سازش ہوئی ہے۔انہوں نے کہا کہ ہم قانون کے پاسدار ہیں اور اسی نہج پر پر امن احتجاج کیا جا رہا ۔

وہیں ان کے حامیوں نے بھی الزام عائد کیا ہے کہ شرپسندوں نے ماحول بگاڑنے کی کوشش کی ہے ہم پرامن احتجاج کررہے تھے اسی بیچ شر پسندوں نے بھیڑ کا حصہ بن کر توڑ پھوڑ کی ہیں۔چندرشیکھر کے حامیوں نے انتظامیہ پر جانب داری کا الزام عائد کیا ہے۔لوگوں کا کہنا ہے کہ پولیس نے گرفتار شدگان کو سخت اذیتیں دی ہیں اوران کا علاج بھی نہیں کرایا گیا ہے

Loading...

Loading...