உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Delhi News: نئی دہلی میں اردو ادب میں ہندوستانیت کے موضوع پر سیمینار کا انعقاد

    Delhi News: نئی دہلی میں اردو ادب میں ہندوستانیت کے موضوع پر سیمینار کا انعقاد

    Delhi News: نئی دہلی میں اردو ادب میں ہندوستانیت کے موضوع پر سیمینار کا انعقاد

    Delhi News: ایکشن فار ڈیویلپمنٹ اینڈ ویلفیئر آف سوسائٹی اینڈ انوارنمنٹ (ایفڈاس) نئی دہلی کے زیر اہتمام اور قومی کونسل برائے فروغ اردو زبان نئی دہلی کے اشتراک سے یک روزہ سیمینار بعنوان " اردو ادب میں ہندوستانیت'' اوکھلا میں منعقد ہوا ۔

    • Share this:
      نئی دہلی : ایکشن فار ڈیویلپمنٹ اینڈ ویلفیئر آف سوسائٹی اینڈ انوارنمنٹ (ایفڈاس) نئی دہلی کے زیر اہتمام اور قومی کونسل برائے فروغ اردو زبان نئی دہلی کے اشتراک سے یک روزہ سیمینار بعنوان " اردو ادب میں ہندوستانیت'' اوکھلا میں منعقد ہوا ۔ سیمینار کی صدارت ڈاکٹر واحد نظیر ، اسسٹنٹ پروفیسر اکادمی برائے فروغ استعداد اردو میڈیم اساتذہ ، جامعہ ملیہ اسلامیہ نے کی۔ انہوں نے اپنے صدارتی خطبے میں کہا کہ ' اردو ایک جدید ہند آریائی زبان ہے اور ہندوستانیت اس کا جوہر جس کے بغیر اردو کا تصور ممکن نہیں ، اس کی تعمیر و تشکیل سے لیکر اس کی نشو نما اور شعراء ادباء کی کوششوں سے اس ہندوستانیت کی آبیاری ہوئی ہے۔

       

      یہ بھی پڑھئے: ادھو ٹھاکرے نے ٹھکرایا اسد الدین اویسی کی پارٹی AIMIM کا آفر، ہندتوا ایجنڈہ پر بی جے پی کو گھیرا


      انہوں نے مزید کہا کہ نعت اور مرثیہ جیسی غیر ہندوستانی پس منظر والی اصناف ادب میں بھی ہندوستانیت کے گہرے نقوش دکھائی دیتے ہیں ۔ سیمینار کے متعلق ڈاکٹر نظیر نے کہا کہ ایسے حالات میں جب اردو کو کسی خاص قوم اور عقیدہ کے ماننے والوں کی زبان بتا کر اس کی حیثیت کو مشکوک کرنے کی کوشش ہو رہی ہوں ، وہاں ایسے موضوع کے انتخاب کے لئے ایفڈاس کے عہدیداران کو مبارکباد پیش کی۔

      ایفڈاس کےجنرل سکریٹری محمد جان نے صدر جلسہ ، مقالہ نگاران شرکائے سیمینار کا خیر مقدم کرتے ہوئے تنظیم کے اغراض و مقاصد پر تفصیل سے روشنی ڈالی۔ انہوں نے کہا کہ تنظیم پسماندہ طبقہ کی ترقی و بہبود کے لیے متواتر کوشش کرتی رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایفڈاس نے گزشتہ برسوں میں مختلف ادبی موضوعات پر سیمینار کا انعقاد کیا ہے ۔ جن میں جنگ آزادی میں اردو صحافت کا کردار، ہندوستانی سنیما اور اردو ادب،  اردو ادب میں ہندوستانی اساطیر قابل ذکر ہیں۔ اس سیمینار کی نظامت کے فرائض ڈاکٹر خان محمد رضوان نے انجام دی ۔

       

      یہ بھی پڑھئے:  محبوبہ مفتی اور غلام نبی آزاد نے بی جے پی پر سادھا نشانہ ، لگایا یہ بڑا الزام


      سیمینار میں مقالہ نگاران نے اپنے اپنے مقالے پڑھے جن میں ڈاکٹر حنا آفرین نے سید محمد اشرف کے ناول آخری سواریاں میں ہندوستانی تہذیب، ڈاکٹر نوشاد عالم ہندوستان کی سماجی وا تہذیبی زندگی کا اہم شعری حوالہ شہر آشوب، ڈاکٹر سعود عالم دکنی قصائد میں ہندوستانی تہذیب و ثقافت، ڈاکٹر قرۃ العین، آغا حشر کاشمیری کے ڈراموں میں ہندوستانی تہذیب کی عکاسی، ڈاکٹر عبد الرزاق زیادی نظیر اکبر آبادی کی شاعری میں ہندوستانی تہذیب و ثقافت شامل ہیں۔

      ڈاکٹر واحد نظیر نے اپنے صدارتی خطبے میں پڑھے گئے مضامین پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ سارے مقالات انتہائی محنت سے لکھے گئے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ اردو میں بڑی تعداد میں ایسی شعری و نثری تخلیقات ہیں ، جن میں ہندوستانیت کے حوالے راست اور بالواسطہ طور پر ملتے ہیں۔ اس لئے گاہے بگاہے ان کی شناخت تفہیم اور بازیافت کی کوشش ضروری ہے۔

      سیمینار کی کنوینر محمد جان کے شکریہ کے ساتھ سیمینار کا اختتام ہوا۔ سیمینار میں جن اہم شخصیات نے شرکت کی ان میں ڈاکٹر نوشاد منظر، ڈاکٹر صادق اختر، ڈاکٹر واثق الخیر، محمد نور اشرف، محمد عمار خان و واثق صدیقی خاص تھے ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: