உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Delhi News : دہلی میں ایک مرتبہ پھر ملا مشتبہ بیگ، بڑی سازش کا اندیشہ!

    Delhi News : دہلی کے سیماپوری علاقہ میں ایک مشتبہ بیگ کے ملنے کے بعد ہنگامہ مچ گیا ۔ پورے علاقہ میں دہشت کا ماحول ہے ۔ فورا اس بارے میں دہلی پولیس کو اطلاع دی گئی ۔

    Delhi News : دہلی کے سیماپوری علاقہ میں ایک مشتبہ بیگ کے ملنے کے بعد ہنگامہ مچ گیا ۔ پورے علاقہ میں دہشت کا ماحول ہے ۔ فورا اس بارے میں دہلی پولیس کو اطلاع دی گئی ۔

    Delhi News : دہلی کے سیماپوری علاقہ میں ایک مشتبہ بیگ کے ملنے کے بعد ہنگامہ مچ گیا ۔ پورے علاقہ میں دہشت کا ماحول ہے ۔ فورا اس بارے میں دہلی پولیس کو اطلاع دی گئی ۔

    • Share this:
      نئی دہلی : دہلی کے سیماپوری علاقہ میں ایک مشتبہ بیگ کے ملنے کے بعد ہنگامہ مچ گیا ۔ پورے علاقہ میں دہشت کا ماحول ہے ۔ فورا اس بارے میں دہلی پولیس کو اطلاع دی گئی ۔ جائے واقع پر پہنچ کر پولیس نے حالات کو سنبھالا اور وہاں موجود لوگوں کو مشتبہ بیگ سے دور سے کرکے این ایس جی کو مطلع کیا گیا ۔ جانکاری کے مطابق بم ناکارہ بنانے والے دستہ کو بھی اس کی اطلاع دی گئی ہے ۔ لاوارث بیگ کی اطلاع کے ساتھ جائے واقعہ پر بھاڑی بھیڑ جمع ہوگئی ۔ پولیس نے بھیڑ کو قابو کرنے کیلئے علاقہ کی گھیرا بندکی ۔ اب بیگ کی جانچ کی ہے ۔

      وہیں ذرائع کا کہنا ہے کہ پولیس کو اس بات کا شک ہے کہ بیگ میں دھماکہ خیز مواد ہوسکتا ہے ، جس کے پیش نظر احتیاط کے طور پر علاقہ کو خالی کروانے کا کام شروع کردیا گیا ہے ۔ بتایا جارہا ہے کہ بم ناکارہ بنانے والے دستے کی ٹیم جائے واقعہ پر پہنچ گئی ہے اور مشتبہ بیگ کو موقع سے ہٹایا جارہا ہے ۔ اسی کے ساتھ اب روبوٹ پہلے اس کی جانچ کریں گے ۔

      قابل ذکر ہے کہ اس سے پہلے جنوری میں دہلی میں دو مرتبہ ایسے مشتبہ بیگ ملے تھے ۔ مشرقی دہلی کے غازی پور پھول منڈی کے گیٹ پر نمبر دو کے باہر ایک لاوارث بیگ ملا تھا ۔ اس بیگ کو کھولنے پر اندر سے بم ملا تھا ، جس کو پہلے بم ناکارہ بنانے والے دستہ نے ناکارہ بنانے کی کوشش کی ، لیکن بعد میں اس کو ایک گڑھے میں ڈال کر ناکارہ بنایا گیا ۔

      دہلی پولیس کے ایڈیشنل ڈی سی پی ونیت کمار نے بتایا تھا کہ لاوارث بیگ میں بم کی اطلاع پر پولیس اور این ایس جی کی ٹیم فورا جائے واقع پر پہنچ گئی تھی اور علاقہ کو سیل کردیا گیا تھا ۔ لوگوں کی سیکورٹی کو دھیان میں رکھ کر پھول منڈی کو بھی خالی کروا دیا گیا تھا ۔

      وہیں دوسرا بیگ کچھ دنوں کے بعد ہی ایک میٹرو اسٹیشن کے پاس ملا تھا ، جس میں کچھ بھی نہ ملنے پر سبھی نے راحت کی سانس لی تھی ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: