ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

Delhi Violence : گوکل پوری اور بھاگیرتھی وہار میں مزید تین لاشیں ملیں ، پولیس نے نالے سے کی برآمد

تشدد سے متاثرہ علاقوں میں بڑی تعداد میں پولیس اور نیم فوجی دستوں کی تعیناتی کی گئی ہے۔ فرقہ وارانہ ہم آہنگی برقرار رکھنے کے لئے سیکورٹی فورس کے اہلکار باقاعدگی سے مقامی لوگوں سے بات چیت کر رہے ہیں۔

  • UNI
  • Last Updated: Mar 01, 2020 09:34 PM IST
  • Share this:
Delhi Violence : گوکل پوری اور بھاگیرتھی وہار میں مزید تین لاشیں ملیں ، پولیس نے نالے سے کی برآمد
دہلی تشدد کے بعد فلیگ مارچ کی فائل فوٹو ۔ پی ٹی آئی ۔

شمال مشرقی دہلی میں تشدد کے بعد اتوار کو نالوں میں مزید تین لاشوں کے ملنے سے ہلاکتوں کی تعداد 45 ہو گئی۔ تشدد سے متاثرہ گوكل پوری نالے سے ایک لاش اور بھاگیرتھی وہار کے نالے سے دو لاشیں برآمد کی گئی ہیں ۔ اس کے ساتھ تشدد میں اب تک مرنے والوں کی تعداد 45 پہنچ گئی ہے ۔ تاہم پولیس اس بات کی جانچ کر رہی ہے کہ جو تین لاشیں نالوں سے ملی ہیں ، ان کا تعلق دہلی فسادات سے ہے یا نہیں ۔ پولیس اس معاملہ کی جانچ کر رہی ہے۔


تشدد سے متاثرہ علاقوں میں بڑی تعداد میں پولیس اور نیم فوجی دستوں کی تعیناتی کی گئی ہے۔ فرقہ وارانہ ہم آہنگی برقرار رکھنے کے لئے سیکورٹی فورس کے اہلکار باقاعدگی سے مقامی لوگوں سے بات چیت کر رہے ہیں۔  پولیس کے ایک افسر نے بتایا کہ حالات اب کنٹرول میں ہے۔ تمام علاقوں میں کافی سیکورٹی فورس تعینات ہیں ۔ مقامی لوگوں سے بات چيت کرکے ان کا اعتماد بحال کرنے کی کوشش جاری ہے۔



غور طلب ہے کہ خفیہ محکمہ کے افسر انکت ورما کی لاش بھی ایک نالے سے ملی تھی ۔ فساد زدہ علاقوں میں آہستہ آہستہ معمولات زندگی پٹری پر واپس آنے کے ساتھ ہی پولیس نے فسادیوں پر نکیل كسنی شروع کر دی ہے اور اس سلسلے میں اب تک 167 ایف آئی آر درج کرکے 885 لوگوں کو پوچھ گچھ کے لئے حراست یا گرفتار کیا ہے۔ جعفرآباد ، موج پور ، چاند باغ ، گوکل پوری ، کھجوری سمیت کئی دیگر علاقوں میں تین دنوں تک ہونے والے فساد میں میں سینکڑوں زخمیوں کا مختلف اسپتالوں میں علاج چل رہا ہے۔
First published: Mar 01, 2020 09:33 PM IST