உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Malali Mosque Controversy:کرناٹک میں ملالی مسجد انتظامیہ کی وی ایچ پی کی اپیل خارج کرنے کی مانگ، جانیے کیا ہے پورا تنازعہ

    کرناٹک کی ملالی مسجد کا کیا ہے تنازعہ۔

    کرناٹک کی ملالی مسجد کا کیا ہے تنازعہ۔

    Malali Mosque Controversy: ملک میں مسجدیں بنانے کے لیے مندر گرائے گئے لیکن ہم اس واقعے کے گواہ نہیں ہیں۔ شوبھا نے کہا کہ ہمارے آبا و اجداد کے زمانے میں بھیانک غلطیاں ہوئیں۔ تاریخ دانوں اور آثار قدیمہ کے ماہرین کو حقائق کا پتہ لگا کر بتانا چاہیے کہ کیا غلط ہے اور کیا صحیح۔

    • Share this:
      Malali Mosque Controversy:اوڈپی: جنوبی کنڑ ضلع میں ملالی مسجد تنازعہ نے نیا موڑ لے لیا ہے۔ مسجد انتظامیہ نے منگل کے روز مقامی عدالت میں وشو ہندو پریشد (وی ایچ پی) کے مطالبے کو مسترد کرنے کا مطالبہ کیا۔ وی ایچ پی نے عدالت سے درخواست کی ہے کہ منگلورو کے قریب ملالی قصبے میں جمعہ مسجد کا سروے کرنے کے لیے کورٹ کمشنر کا تقرر کیا جائے۔

      تنازعہ کے بعد عدالت نے مسجد انتظامیہ کو کام روکنے کا دیا حکم
      جنوبی کنڑ ضلع میں ملالی مسجد تنازعہ نے نیا موڑ لے لیا ہے۔ مسجد انتظامیہ نے منگل کے روز مقامی عدالت میں وشو ہندو پریشد (وی ایچ پی) کے مطالبے کو مسترد کرنے کا مطالبہ کیا۔ وی ایچ پی نے عدالت سے درخواست کی ہے کہ منگلورو کے قریب ملالی قصبے میں جمعہ مسجد کا سروے کرنے کے لیے کورٹ کمشنر کا تقرر کیا جائے۔

      مرکزی وزیر نے کہا،’ملک میں تاریخی غلطیوں کو سدھارنا ضروری
      زراعت اور کسانوں کی بہبود کی مرکزی وزیر مملکت شوبھا کرندلاجے نے منگل کو کہا کہ ملک میں تاریخی غلطیوں کو سدھارنا ضروری ہے۔ ملالی مسجد تنازعہ پر انہوں نے کہا کہ مرکزی وزارت داخلہ اس سے متعلق پیش رفت پر نظر رکھے ہوئے ہے۔ اس پر بحث ہونی چاہیے کہ کون سی عمارت ہندوؤں کی ہے۔ اس سمت میں سب سوچیں گے تو سب متحد ہو جائیں گے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      Owaisi on Gyanvapi:’ہم نے ایک بابری مسجد کھودی، اب دوسری مسجد کھونے نہیں دیں گے‘:اویسی

      یہ بھی پڑھیں:
      Shahi Idgah: متھراکی شاہی عیدگاہ مسجدکے ابتدائی سروےکی مانگ، ضلعی عدالت میں ایک اورعرضی

      ملک میں مسجدیں بنانے کے لیے مندر گرائے گئے لیکن ہم اس واقعے کے گواہ نہیں ہیں۔ شوبھا نے کہا کہ ہمارے آبا و اجداد کے زمانے میں بھیانک غلطیاں ہوئیں۔ تاریخ دانوں اور آثار قدیمہ کے ماہرین کو حقائق کا پتہ لگا کر بتانا چاہیے کہ کیا غلط ہے اور کیا صحیح۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: