ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

شہنشاہ جذبات کی رحلت سے بھوپال سوگوار، دلیپ کمار کو بھارت رتن دینے کا مطالبہ

شہنشاہ جذبات دلیپ کمار کے سانحہ ارتحال کے موقعہ پر مدھیہ پردیش کے ادیبوں اور دانشوروں نے حکومت ہند سے بعد از مرگ دلیپ کمار کو بھارت رتن دینے کا مطالبہ کیا ہے۔

  • Share this:
شہنشاہ جذبات کی رحلت سے بھوپال سوگوار، دلیپ کمار کو بھارت رتن دینے کا مطالبہ
شہنشاہ جذبات دلیپ کمار کو بھارت رتن دینے کا مطالبہ

بھوپال: شہنشاہ جذبات دلیپ کمار کے سانحہ ارتحال کے موقعہ پر مدھیہ پردیش کے ادیبوں اور دانشوروں نے حکومت ہند سے بعد از مرگ دلیپ کمار کو بھارت رتن دینے کا مطالبہ کیا ہے۔ دانشوروں اور سماجی کارکنان کا ماننا ہے کہ دلیپ کمار نے نہ صرف فلموں میں کام کیا بلکہ ہندوستان کی گنگا جمنی تہذیب کے فروغ میں نمایاں کردار ادا کیا ہے اور دلیپ کمار جیسی شخصیات صدیوں میں کسی ملک میں پیدا ہوتی ہیں۔

شہشناہ جذبات دلیپ کمار کے سانحہ ارتحال کی خبر جیسے ہی بھوپال پہنچی، پورے بھوپال کی فضا سوگوارہوگئی۔ بھوپال سے دلیپ کمار کا گہرا تعلق تھا اور دلیپ کمار اپنی حیات میں متعدد بار یہاں آئے تھے۔ دلیپ کمار سے بھوپال کے خاص لگاؤ کے سبب ہی جیسے ان کے انتقال کی خبر بھوپال پہنچی کیا ادیب، کیا شاعر، کیا عام انسان سبھی گہرے صدمے میں ڈوب گئے۔ مولانا برکت اللہ بھوپال ایجوکیشن اینڈ کلچرل سو سائٹی کے زیر اہتمام تعزیتی جلسہ کا انعقاد کیا گیا۔ پہلے قران خوانی کی گئی اس کے بعد دانشوروں نے اپنے خیالات کا اظہار کیا۔


شہشناہ جذبات دلیپ کمار کے سانحہ ارتحال کی خبر جیسے ہی بھوپال پہنچی پورے بھوپال کی فضا سوگوار ہوگئی۔
شہشناہ جذبات دلیپ کمار کے سانحہ ارتحال کی خبر جیسے ہی بھوپال پہنچی پورے بھوپال کی فضا سوگوار ہوگئی۔


مولانا برکت اللہ بھوپالی ایجوکیشن سو سائٹی کے صدر حاجی محمد ہارون کہتے ہیں کہ محمد یوسف خان عرف دلیپ کمار سے کئی بار کی ملاقتیں رہی ہیں۔ انہوں نے ممبئی فسادات کے بعد جس طرح سے بلا تفریق مذہب و ملت کام کیا وہ بے مثل ہے۔ اللہ سے دعا ہے کہ انہیں جوار رحمت اعلی مقام عطا فرمائے۔
چھتیس گڑھ کے سابق ڈی جی پی اے ڈبلیو نے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں فخر ہے کہ دلیپ کمار جیسا عظیم فنکار ہمارے ملک کی مشترکہ تہذیب کا امین تھا۔ ہم حکومت ہند سے مطالبہ کرتے ہیں کہ دلیپ کمارکی عظیم قربانیوں کو ذہن میں رکھتے ہوئے انہیں بعد از مرگ بھارت رتن سے سرفراز کیا جائے۔ یہی ان کے لئے سب سے بڑا اورسچا ملک کا خراج عقیدت ہوگا۔
بھوپال کے مشہور شاعر اور فلم اداکار بدر واسطی نے دلیپ کمار کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ دلیپ کمار خود میں ایک انجمن تھے۔ دلیپ کمار کے ذکر کے بغیر ہندوستانی سنیما کی تاریخ نا مکمل ہے۔ دلیپ کمار سے پہلے اور بعد میں بہت سے اداکار آئے ہیں اور آتے رہیں گے، لیکن دلیپ کمار ثانی کوئی نہیں بن سکا۔ اللہ ان کے درجات کو بلند کرے اور جوار رحمت میں اعلی مقام عطا فرمائے۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Jul 07, 2021 11:59 PM IST