உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    وزیراعظم نریندر مودی نے دیوگھر ریسکیو آپریشن میں شامل جوانوں سے کی بات، کہا-حادثے سے ملے کئی سبق

    دیوگھر حادثے پر پی ایم مودی نے کی بات۔

    دیوگھر حادثے پر پی ایم مودی نے کی بات۔

    جھارکھنڈ کے دیوگھر میں تری کوٹ پہاڑ پر سیاحوں کے لیے بنائے گئے روپ وے کی کیبل کاریں 10 اپریل کی شام کو آپس میں ٹکرا گئیں۔ اس کے بعد کئی لوگ 1500 سے 2000 فٹ کی بلندی پر 25 کیبل کاروں میں پھنس گئے تھے۔

    • Share this:
      نئی دہلی: وزیر اعظم نریندر مودی نے فضائیہ، فوج، این ڈی آر ایف، آئی ٹی بی پی اور مقامی انتظامیہ کے عہدیداروں اور سماجی تنظیموں کے ارکان سے بات کی جو جھارکھنڈ کے دیوگھر میں روپ وے حادثے کے بعد بچاؤ آپریشن میں شامل تھے۔ روپ وے حادثے کے بعد دیوگھر میں تقریباً 46 گھنٹے تک ریسکیو آپریشن کیا گیا، جس میں 56 سیاحوں کی جان بچائی گئی۔

      دُکھ ہے کہ کئی ساتھیوں کو نہیں بچاسکے-پی ایم
      اس اہم ریسکیو آپریشن میں شامل افسران اور جوانوں سے بات کرتے ہوئے پی ایم مودی نے کہا کہ آپ لوگوں نے تین دن تک 24 گھنٹے لگا کر ایک مشکل ریسکیو آپریشن مکمل کیا اور کئی ہم وطنوں کی جان بچائی۔ پورے ملک نے آپ کی ہمت کو سراہا ہے۔ میں بابا ویدیا ناتھ جی کا آشیرواد مانتا ہوں، حالانکہ مجھے دکھ ہے کہ ہم بہت سے ساتھیوں کی جان نہیں بچا سکے۔ کچھ لوگ زخمی بھی ہوئے ہیں۔ متاثرین کے اہل خانہ سے ہماری گہری تعزیت ہے اور زخمیوں کی جلد صحت یابی کی خواہش ہے۔

      ’اس حادثے سے ملے کئی سبق‘
      پی ایم مودی نے کہا کہ جس نے بھی اس آپریشن کو دیکھا وہ حیران تھا، پریشان تھا... آپ لوگ وہاں موجود تھے، اندازہ لگایا جا سکتا ہے کہ آپ کے لیے حالات کتنے مشکل رہے ہوں گے۔ لیکن ملک کو فخر ہے کہ اس کے پاس ہماری فوج، ہماری فضائیہ، ہمارے NDRF جوانوں، ITBP اور پولیس فورس کے جوانوں کی شکل میں ایسی ہنر مند فورس موجود ہے جو ملک کے لوگوں کو ہر بحران سے بحفاظت نکالنے کی صلاحیت رکھتی ہے۔ اس حادثے سے ہم نے بہت سے سبق بھی سیکھے ہیں۔ آپ کے تجربات مستقبل میں بہت کارآمد ثابت ہوں گے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      اب ایک ساتھ کرپائیں گے دو ڈگری کورس کی پڑھائی،UGCچیئرمین نے کہا-جلد جاری ہوں گی گائیڈلائنس

      اس دوران پی ایم مودی نے تمام افسروں اور جوانوں سے واقفیت حاصل کی کہ انہوں نے یہ ریسکیو آپریشن کیسے کیا۔ این ڈی آر ایف افسر نے بتایا کہ کس طرح وہ موقع پر پہنچے اور مقامی لوگوں کے ساتھ مل کر بچاؤ آپریشن شروع کیا۔ انہوں نے بتایا کہ ہمیں سب سے پہلے ایک زخمی خاتون ملی، جسے فوری طور پر ہسپتال لے جایا گیا۔

      یہ بھی پڑھیں:
      17 مہینوں کی انتہا پر مہنگائی، مارچ میں ریٹیل مہنگائی شرح 6.95 فیصد رہی

      دیوگھر میں کیا ہوا تھا؟
      بتادیں کہ جھارکھنڈ کے دیوگھر میں تری کوٹ پہاڑ پر سیاحوں کے لیے بنائے گئے روپ وے کی کیبل کاریں 10 اپریل کی شام کو آپس میں ٹکرا گئیں۔ اس کے بعد کئی لوگ 1500 سے 2000 فٹ کی بلندی پر 25 کیبل کاروں میں پھنس گئے۔ انہیں نکالنے کے لیے ریسکیو آپریشن شروع کر دیا گیا۔ اس کے بعد تقریباً 46 گھنٹے کے ریسکیو آپریشن کے بعد فضائیہ، انڈو تبت بارڈر پولیس (آئی ٹی بی پی)، نیشنل ڈیزاسٹر رسپانس فورس (این ڈی آر ایف) اور فوج کے جوانوں نے ایم آئی 17 ہیلی کاپٹروں کی مدد سے پھنسے ہوئے لوگوں کو بچایا، جب کہ 3 لوگوں کی موت ہوگئی اور 12 دیگر زخمی ہو گئے۔ ہیلی کاپٹر سے بچاتے ہوئے دو افراد نیچے گرجانے سے ہلاک ہوگئے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: