உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    گروگرام کے مشہور ریسٹورنٹ نے معذور خاتون کو نہیں دی Entry، کہا-وہیل چیئر سے دوسروں کو ہوگی پریشانی

    معذور خاتون سریشتی پانڈے کو گروگرام کے ریستوراں نے داخلے سے منع کر دیا تھا۔

    معذور خاتون سریشتی پانڈے کو گروگرام کے ریستوراں نے داخلے سے منع کر دیا تھا۔

    راستا ریسٹورنٹ کے بانی پارٹنر گوتمیش سنگھ نے اپنی ایک پوسٹ میں کہا، ’’ہمیں جمعہ کی شام راستا گڑگاؤں میں پیش آنے والے واقعے کے لیے بہت افسوس ہے۔ ہم سب کو ساتھ لے کر چلنے کے لیے کھڑے ہیں اور کبھی نہیں چاہتے کہ کوئی کسی بھی وجہ سے تنہا محسوس کرے۔

    • Share this:
      روگرام:گروگرام کے ایک مشہور ریستوراں کے مالک نے جمعہ کی رات مبینہ طور پر ایک معذور خاتون کو داخلے سے منع کر دیا کیونکہ اس سے ’دوسرے گاہکوں کو پریشانی ہوگی۔‘ سریشٹی پانڈے نے اپنے ساتھ یہ خوفناک تجربہ اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ پر شیئر کیا ہے، جس پر لوگوں نے اپنے غصے کا اظہار بھی کیا۔

      انہوں نے ایک کے بعد ایک ٹویٹ کر کے اس پورے واقعے کو تفصیل سے سب کے سامنے رکھا ہے۔ خاتون نے بتایا کہ وہ جمعہ کے روز اپنے بہترین دوست اور اہل خانہ کے ساتھ اس جگہ سے طویل عرصے کے بعد پہلی بار باہر نکلی تھی، لیکن فرنٹ ڈیسک پر اسے داخلے سے منع کر دیا گیا۔

      ’وہیل چیئر سے دوسروں کو پریشانی ہوگی‘
      معذور خاتون سرشٹی پانڈے نے ٹوئٹ میں لکھا، میں نے اپنے بہترین دوست اور اس کے اہل خانہ کے ساتھ باہر جانے کا فیصلہ کیا، ہم سائبر ہب کے گڑگاؤں راستے گئے اور 4 لوگوں کے لیے ایک میز منگوائی۔ مینیجر نے ہمیں دو بار نظر انداز کیا، لیکن بعد میں کہا کہ وہیل چیئر اندر نہیں جائے گی، کیونکہ اس سے دوسرے گاہک پریشان ہوں گے۔‘

      ’پہلے بھی کئی مقامات پر مجھے جانے سے روکا گیا ہے‘
      خاتون نے ایک اور ٹویٹ میں کہا کہ ’یہ سن کر مجھے بہت صدمہ ہوا، میں نے اس کے بعد ایک لفظ بھی نہیں کہا، میں صرف اسے ترتیب دینے کی کوشش کر رہی تھی کہ کیا ہو رہا ہے۔ ہم نے اس طرح کے رویے کی اتنی اچھی جگہ سے توقع نہیں کی تھی۔‘ انہوں نے مزید کہا، ’یہ پہلی بار نہیں ہے۔ مجھے اسکولوں اور تعلیمی اداروں میں عمومی طور پر، بہت سی دوسری جگہوں اور اب اس ریستوراں میں بھی داخلے سے منع کیا گیا ہے۔ ایسا لگتا ہے کہ کوئی مجھے بالکل نہیں چاہتا۔‘

      گروگرام کے ڈی ایل ایف سائبر ہب میں ریسٹورنٹ نے حال ہی میں اس واقعہ کے لئے معافی مانگی تھی اور کہا تھا کہ وہ اپنے ملازمین کے لئے ’جذبات اور رحمدلی بڑھانے‘ کے لے اندرونی طو رپر قدم اٹھارہے تھے۔

      راستا ریسٹورنٹ کے بانی پارٹنر گوتمیش سنگھ نے اپنی ایک پوسٹ میں کہا، ’’ہمیں جمعہ کی شام راستا گڑگاؤں میں پیش آنے والے واقعے کے لیے بہت افسوس ہے۔ ہم سب کو ساتھ لے کر چلنے کے لیے کھڑے ہیں اور کبھی نہیں چاہتے کہ کوئی کسی بھی وجہ سے تنہا محسوس کرے۔ ہماری کوششوں کے ایک حصے کے طور پر، ہم پہلے ہی متاثرہ تک پہنچ چکے ہیں اور ذاتی طور پر معافی مانگ چکے ہیں۔ ہم اپنے ملازمین کے لیے حساسیت اور ہمدردی بڑھانے کے لیے اندرونی طور پر بھی اقدامات کر رہے ہیں تاکہ یہ یقینی بنایا جا سکے کہ ایسا دوبارہ نہ ہو۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: