உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ’حیدرآباد میں منور فاروقی کے شو کو نہ دیں اجازت، نہیں تو سڑکوں پر اُتریں گے ہندو‘، بی جے پی ایم ایل اے نے DGP کو لکھا خط

    حیدرآباد میں منور فاروقی کے شو کو لے کر بی جے پی ایم ایل اے راجہ سنگھ نے دی دھمکی۔

    حیدرآباد میں منور فاروقی کے شو کو لے کر بی جے پی ایم ایل اے راجہ سنگھ نے دی دھمکی۔

    ایم ایل اے نے وارننگ دیتے ہوئے کہا کہ اگر پروگرام ہوا تو ہندو سڑکوں پر اُتریں گے اور احتجاجی مظاہرہ کریں گے۔ یہ بیان تلنگانہ کے بی جے پی رکن پارلیمنٹ اروند دھرم پوری کی جانب سے منور فاروقی کا استقبال کرنے کے لئے وزیر کے ٹی آر (کے ٹی راما راو) کی تنقید کرنے کے ایک دن بعد سامنے آیا ہے۔

    • Share this:
      حیدرآباد: تلنگانہ (Telangana) کے بی جےپی ایم ایل اے ٹی راجہ سنگھ (BJP MLA Raja Singh) نے ہفتہ کو تلنگانہ کے ڈی جی پی کو خط لکھ کر درخواست کی ہے کہ وہ کامیڈین منور فاروقی (Comedian Munawar Faruqui) کو 9 جنوری کو حیدرآباد میں اپنا مقررہ پروگرام منعقد کرنے کی اجازت نہ دیں۔ انہوں نے خط میں لکھا کہ منور فاروقی ہندو دیوی دیوتاوں کے خلاف نفرت پھیلاتے ہیں۔ ہم نہیں چاہتے کہ کسی بھی طرح سے حیدرآباد کے امن میں خلل پیدا ہو۔

      ایم ایل اے نے وارننگ دیتے ہوئے کہا کہ اگر پروگرام ہوا تو ہندو سڑکوں پر اُتریں گے اور احتجاجی مظاہرہ کریں گے۔ یہ بیان تلنگانہ کے بی جے پی رکن پارلیمنٹ اروند دھرم پوری کی جانب سے منور فاروقی کا استقبال کرنے کے لئے وزیر کے ٹی آر (کے ٹی راما راو) کی تنقید کرنے کے ایک دن بعد سامنے آیا ہے۔


      بی جے پی رکن پارلیمنٹ اروند دھرم پوری نے جمعہ کو کہاتھا کہ کیا آپ جانتے ہیں کہ منور فاروقی کون ہیں؟ انہوں نے دیوی سیتا پر جوکس سنائے ہیں، جن کی اکثریتی طبقے ہندووں کی جانب سے پوجا کی جاتی ہے۔ کرناٹک جیسی ریاست نے اُن پر پابندی لگادی ہے، کے ٹی آر نے کامیڈی کرنے کے لئے تلنگانہ میں اُن کا ویلکم کیا ہے۔ کیا ہندو سماج ان باپ بیٹے کے لئے کامیڈی بن گیا ہے؟

      ضمانت پر چھوٹنے کے بعد منور فاروقی کے کئی شو ہوئے کینسل
      ڈی جی پی کو لکھے اپنے خط میں ٹی راجہ سنگھ نے منور، اُن کی گرفتاری اور ضمانت کی تفصیل دی اور کہا کہ جوکر نے اپنے کئی تقریروں میں سی اے اے ایکٹ، گودھرا کے واقعات اور کار سیوکوں کی موت کے خلاف بھی بات کی۔ ضمانت پر چھوٹنے کے بعد منور فاروقی پھر سے سرخیوں میں آگئے ہیں، کیونکہ اُن کے کئی حالیہ شو کینسل ہوگئے ہیں۔

      نومبر میں الگ الگ رائٹ ونگ آرگنائزیشنس کی شکایت کے بعد بنگلورو میں ایک شو کینسل ہونے کے بعد منور فاروقی نے ایک جذباتی پوسٹ سوشل میڈیا پر ڈالا، جس میں انہوں ن ے کہا کہ نفرت کی جیت ہوئی۔ اُس وقت تلنگانہ کے منسٹر کے ٹی آر نے کرناٹک کی بی جے پی حکومت پر طنز کرتے ہوئے کہا تھا کہ حیدرآباد حقیقت میں ایک میٹروپولیٹن شہرہے اور منور فاروقی اور کنال کامرا جیسے اسٹینڈاپ کامیڈین کا استقبال ہے۔

      قومی، بین الاقوامی اور جموں وکشمیر کی تازہ ترین خبروں کےعلاوہ تعلیم و روزگار اور بزنس کی خبروں کے لیے نیوز18 اردو کو ٹویٹر اور فیس بک پر فالو کریں ۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: