لوک سبھا الیکشن 2019: کانگریس لیڈرشکیل احمد پرگری گاج، پارٹی سے معطل کردیا گیا

ذرائع سے ملی اطلاعات کے مطابق شکیل احمد کو 6 سال کے لئے پارٹی سے باہرکا راستہ دکھایا گیا ہے۔

May 05, 2019 08:40 PM IST | Updated on: May 06, 2019 10:01 AM IST
لوک سبھا الیکشن 2019: کانگریس لیڈرشکیل احمد پرگری گاج، پارٹی سے معطل کردیا گیا

ڈاکٹر شکیل احمد کوکانگریس پارٹی سے 6 سال کے لئے معطل کردیا گیا ہے۔

پارٹی کوبغاوتی تیوردکھانا کانگریس لیڈرشکیل احمد کوبھاری پڑگیا۔ کانگریس نے پارٹی کے سینئرلیڈرڈاکٹرشکیل احمد کومعطل کرنےکا فیصلہ لیا ہے۔ ذرائع سے ملی اطلاعات کے مطابق شکیل احمد کو6 سال کےلئے پارٹی سے باہرکا راستہ دکھایا گیا ہے۔ شکیل احمد کے ساتھ پارٹی لیڈربھاونا جھا کوبھی پارٹی سے باہرکردیا گیا ہے۔ بھاونا جھا پرپارٹی مخالف سرگرمیوں میں شامل رہنےکا الزام لگتا رہا ہے۔ دونوں ہی لیڈروں کوباہرکرنے کا فیصلہ کانگریس ورکنگ کمیٹی نے لیا ہے۔

کانگریس پارٹی کےباغی لیڈرڈاکٹرشکیل احمد پربڑی کارروائی ہوئی ہے۔ شکیل احمد کی پارٹی رکنیت ختم کردی گئی ہے۔ بہارکےمدھوبنی سیٹ سے کانگریس پارٹی کا ٹکٹ نہ ملنے سے ناراض شکیل احمد نے آزاد الیکشن لڑنے کا فیصلہ کیا تھا اورانہوں نے پرچہ نامزدگی بھی داخل کی تھی۔ کانگریس کےاصول وضوابط کے مطابق پارٹی لائن سے باہرجاکر مدھوبنی سے آزاد امیدوارکے طورپرالیکشن لڑنے کی وجہ سےڈاکٹرشکیل احمد کو پارٹی سے باہرکیا گیا ہے۔

Loading...

اس کے ساتھ ہی انہوں نے یہ بھی واضح کیا کہ مدھوبنی سیٹ سےعظیم اتحاد نے وی آئی پی کےامیدوارکوٹکٹ دیا ہے، جسے کانگریس کی حمایت حاصل ہے۔ واضح رہے کہ شکیل احمد کوبہارمیں کانگریس کے ساتھ ہی اقلیتوں کا بھی بڑا چہرہ مانا جاتا ہے۔ انہوں نے پارٹی سے بغاوت کرنےکے بعد ٹکٹ کےمطالبے کولےکرالٹی میٹم بھی دیا تھا، جسے پارٹی نے نظراندازکردیا۔

Loading...