உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Terrorist Attack Input:کانوڑ یاترا کے راستے پر پہلی بار ڈرون سے رکھی جائے گی نظر، دہلی پولیس کی تیاریاں مکمل

    کانوڑیوں کی یاترا کو لے کر سیکورٹی کی جارہی ہے انتہائی سخت۔

    کانوڑیوں کی یاترا کو لے کر سیکورٹی کی جارہی ہے انتہائی سخت۔

    Terrorist Attack Input:کانوڑیوں کی معلومات رجسٹر میں درج کی جائیں گی۔ تمام پوائنٹس کی سی سی ٹی وی اور ڈرون کے ذریعے نگرانی کی جائے گی۔ پولیس کی جانب سے میڈیکل کیمپ لگائے جائیں گے۔

    • Share this:
      Terrorist Attack Input:پہلی بار دہلی پولیس کانوڑ یاترا کی ڈرون سے نگرانی کرے گی۔ سفر کے دوران تمام راستوں پر ڈرون نظر آئیں گے۔ اس کے ساتھ ضرورت پڑنے پر پولیس کو فوری طور پر فعال کر دیا جائے گا۔ اس کے ساتھ ہی کانوڑ روٹ پر 1925 ٹریفک پولیس اہلکار تعینات ہوں گے۔ اس کے علاوہ روٹ پر تقریباً 56 کرینیں لگائی جائیں گی۔ کانوڑ روٹ پر پولیس بائک کے ذریعے گشت بھی کرے گی۔ کانوڑیے جب سڑک کو کراس کریں گی تو اس وقت ٹریفک روک دی جائے گی۔ فرقہ وارانہ فسادات کی جگہوں پر امن کمیٹیاں بن رہی ہیں۔ دہلی پولیس ایپ کے ذریعے کانوڑیوں کا رجسٹریشن کر رہی ہے۔

      دہلی پولیس کی ایڈیشنل کمشنر گیتا رانی ورما نے کہا کہ 14 جولائی سے 26 جولائی تک ٹریفک کی روانی کو یقینی بنانے کے لیے 1925 ٹریفک پولیس اہلکاروں کو تعینات کیا گیا ہے۔ یہ ٹریفک پولیس اہلکار تین شفٹوں میں کام کریں گے۔ اس بار حکومت نے 172 کیمپوں کو اجازت دی ہے۔ ان میں نو سیکورٹی کیمپ اور 157 پرائیویٹ کیمپ شامل ہیں۔ انہوں نے عوام اور کانوڑیوں سے ٹریفک قوانین پر عمل کرنے کی اپیل کی۔

      فساد متاثرہ مقامات پر سیکورٹی رہے گی سخت
      شمال مشرقی ضلع کے ڈی سی پی سنجے سین نے کہا کہ دہشت گردانہ حملے کے پیش نظر تمام تیاریاں کر لی گئی ہیں۔ دہشت گردی کے واقعات کی روک تھام کے لیے اقدامات کیے جا رہے ہیں۔ پہلی بار کانوڑیوں کا ایپ کے ذریعے رجسٹریشن کیا جا رہا ہے۔ شمال مشرقی ضلع میں 37 کیمپ لگائے جائیں گے۔ یہاں آنے اور جانے کے لیے دو پوائنٹ بنائے جائیں گے۔ دو ہزار ٹریفک پولیس اہلکاروں کے ساتھ مقامی پولیس بھی ضلع میں سیکیورٹی کے لیے تعینات کی جائے گی۔

      یہ بھی پڑھیں:

      Mohammad Zubair:سیتاپورکیس میں محمد زبیرکی عبوری ضمانت میں توسیع،7ستمبرکو ہوگی حتمی سماعت

      یہ بھی پڑھیں:
      Gujarat Fake IPL:گجرات کے گاؤں میں’جعلیIPL‘کا پردہ فاش، رشین سٹہ بازوں کو بناتے تھے نشانہ

      غازی پور اور مہاراج پور بارڈر پر سیکورٹی ہوگی سخت
      مشرقی ضلع کی ڈی سی پی پرینکا کشیپ نے کہا کہ مشرقی ضلع میں 16 کیمپ لگائے جائیں گے۔ غازی پور اور مہاراج پور بارڈر پر چیکنگ پوائنٹس بنائے جائیں گے۔ جگہ جگہ رکاوٹیں کھڑی کی جائیں گی۔ کانوڑیوں کی معلومات رجسٹر میں درج کی جائیں گی۔ تمام پوائنٹس کی سی سی ٹی وی اور ڈرون کے ذریعے نگرانی کی جائے گی۔ پولیس کی جانب سے میڈیکل کیمپ لگائے جائیں گے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: