ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

میرٹھ: گنگا جمنی تہذیب کی مثال تاریخی نوچندي میلے کے انعقاد پر منڈرائے کورونا کے بادل

میرٹھ کے قدیم نوچندی میلے کی سینکڑوں برس پرانی تہذیبی اور ثقافتی روایت آج خطرے میں ہے۔ میرٹھ کا نوچندی میلہ ہندوستان کی گنگا جمنی تہذیب کی مثال رہا ہے۔

  • Share this:
میرٹھ: گنگا جمنی تہذیب کی مثال تاریخی نوچندي میلے کے انعقاد پر منڈرائے کورونا کے بادل
گنگا جمنی تہذیب کی مثال تاریخی نوچندي میلے کے انعقاد پر منڈرائے کورونا کے بادل

میرٹھ: کورونا انفیکشن کے بڑھتے خطرات کا سایہ اب میرٹھ کے تاریخی نوچندی میلے کے انعقاد پر بھی پڑتا ہوا نظر آ رہا ہے۔میرٹھ کی میئر سنیتا ورما کی ڈی ایم سے اس سال بھی میلہ منسوخ کر دیئے جانے کی تجویز پرحضرت بالے میاں درگاہ کے منتظمین اورچنڈی مندر انتظامیہ کمیٹی سے لےکر مقامی کارپوریٹ تک ناراضگی ظاہر کرتے ہوئے احتیاطی اقدامات کے ساتھ اس تاریخی روایت کو برقرار رکھنے کی اپیل کر رہے ہیں۔


میرٹھ کا نوچندی میلہ ہندوستان کی گنگا جمنی تہذیب کی مثال رہا ہے۔ میلے کی قدیم روایت یہاں موجود چنڈی دیوی مندر اور حضرت بالے میاں درگاہ سے وابستہ ہے۔
میرٹھ کا نوچندی میلہ ہندوستان کی گنگا جمنی تہذیب کی مثال رہا ہے۔ میلے کی قدیم روایت یہاں موجود چنڈی دیوی مندر اور حضرت بالے میاں درگاہ سے وابستہ ہے۔


میرٹھ کے قدیم نوچندی میلے کی سینکڑوں برس پرانی تہذیبی اور ثقافتی روایت آج خطرے میں ہے۔ میرٹھ کا نوچندی میلہ ہندوستان کی گنگا جمنی تہذیب کی مثال رہا ہے۔ میلے کی قدیم روایت یہاں موجود چنڈی دیوی مندر اور حضرت بالے میاں درگاہ سے وابستہ ہے، لیکن گزشتہ سال لاک ڈاؤن کے سبب اس تاریخی میلے کا انعقاد نہیں ہو سکا اور اس سال بھی کورونا انفیکشن کے بڑھتے خطرے کے اثرات میلے کے انعقاد پرنظر آنے لگے ہیں۔

تاہم میلہ کمیٹی کے رکن حضرت بالے میاں درگاہ کے متولی اور چنڈی دیوی مندرکے مہنت میئرکی اس تجویز سے نا اتفاقی ظاہر کرتے ہوئے میلہ لگائے جانے کی دلیل پیش کر رہے ہیں۔ وہیں مقامی لوگوں اور کارپوریٹروں کا بھی ماننا ہے کہ میلے کا انعقاد نہ ہونے سے جہاں ایک تاریخی روایت کا سلسلہ ختم ہوگا۔ وہیں لاک ڈاؤن کے بعد دوبارہ پٹری پر لوٹ رہےکاروبار اور معمول زندگی پر بھی اس کا اثر پڑے گا۔

کورونا انفیکشن کے بڑھتے خطرات کا سایہ اب میرٹھ کے تاریخی نوچندی میلے کے انعقاد پر بھی پڑتا ہوا نظر آ رہا ہے۔
کورونا انفیکشن کے بڑھتے خطرات کا سایہ اب میرٹھ کے تاریخی نوچندی میلے کے انعقاد پر بھی پڑتا ہوا نظر آ رہا ہے۔


حکومت نے اس تاریخی میلے کی ریاستی میلے کی حیثیت سے اب میلے کے انعقاد اور انتظامات کی ساری ذمہ داری ضلع انتظامیہ کے سپرد کر دی ہے اور ضلع انتظامیہ کو طے کرنا ہے کہ اس سال میلے کا انعقاد کیا جائے یا نہیں۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Apr 03, 2021 11:59 PM IST