بہار میں بارش کا قہر ، وزیر اعلی نے بلائی ایمرجنسی میٹنگ ، تعلیمی ادارے بند ، لوگوں کو گھروں میں رہنے کا مشورہ

بہار میں گذشتہ چوبیس گھنٹوں سے قہر بن کر برسنے والی موسلا دھار بارش ، دارالحکومت پٹنہ سمیت 16 سے زائد اضلاع کے لوگوں کی زندگی کو متاثر کیا ہے۔

Sep 28, 2019 08:27 PM IST | Updated on: Sep 28, 2019 08:27 PM IST
بہار میں بارش کا قہر ، وزیر اعلی نے بلائی ایمرجنسی میٹنگ ، تعلیمی ادارے بند ، لوگوں کو گھروں میں رہنے کا مشورہ

پٹنہ کے چاندماری روڈ کی تصویر ۔

بہار میں گذشتہ چوبیس گھنٹوں سے قہر بن کر برسنے والی موسلا دھار بارش ، دارالحکومت پٹنہ سمیت 16 سے زائد اضلاع کے لوگوں کی زندگی کو متاثر کیا ہے۔ پٹنہ کے بورنگ روڈ ، بیلی روڈ ، پاٹلی پترا کالونی ، کنکرباغ ، راجندر نگر ، پٹنہ یونیورسٹی ، مہیندرو ، گاندھی میدان ، ڈاک بنگلہ چوراہے سمیت تقریبا تمام علاقوں میں شدید بارشوں کی وجہ سے جمع ہونے والا پانی نے لوگوں کی زندگی کو درہم برہم کردیا ہے۔ راجندر نگر میں نائب وزیر اعلی سشیل کمار مودی کی رہائش گاہ میں بھی پانی داخل ہوگیا ہے۔

لوگوں کا گھر سے نکلنا مشکل ہوگیا ہے۔ سڑکوں پر دو سے تین فٹ پانی جمع ہوگیا ہے۔ بہت سے علاقوں میں گاڑیوں کی آمد رفت مکمل بند ہے۔ بجلی کی فراہمی ، ٹیلیفون اور انٹرنیٹ سروس میں خلل پڑا ہے۔ پٹنہ سٹی کے علاقے میں بارش کا پانی نالندہ میڈیکل کالج اسپتال (این ایم سی ایچ ) میں داخل ہوگیا ہے۔ مریضوں کو کسی اور جگہ بھیجا جارہا ہے۔

Loading...

बिहार में भारी बारिश से आम जनजीवन पर असर, पटना समेत 15 जिलों में अलर्ट

ڈیزاسٹر منیجمنٹ ڈیپارٹمنٹ کے پرنسپل سکریٹری پرتیہ امرت نے بتایا کہ دارالحکومت پٹنہ کے لوگوں کو جب تک ضروری نہ ہو تب تک گھر سے باہر نہیں نکلنا چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ شدید بارشوں کی وجہ سے نشیبی علاقے میں جمع پانی کو نکالنے کے لئے گذشتہ رات سے تمام پمپ ہاؤس سرگرم عمل ہیں۔ مسٹر امرت نے کہا کہ لوگوں کو محفوظ مقامات پر لے جانے کے لئے خاطر خواہ انتظامات کیے گئے ہیں۔ اگر بارش میں پھنسا ہوا کوئی فرد کسی رشتے دار سے ملنا چاہتا ہے ، تو ان کے لئے ٹریکٹر اور بسوں کا انتظام کیا گیا ہے۔

پٹنہ کے ضلع مجسٹریٹ کمار روی نے شدید بارش کے باعث ضلع میں تمام سرکاری اور نجی تعلیمی اداروں کو 30 ستمبر تک بند رکھنے کا حکم دیا ہے۔ اسی کے ساتھ ہی کسی بھی ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کے لئے ، نیشنل ڈیزاسٹر ریسپانس فورس (این ڈی آر ایف) کی ایک ٹیم کو پٹنہ میں اور ایک دوسرے ٹیم کو دوسرے 18 اضلاع میں تعینات کیا گیا ہے۔ ضلع انتظامیہ نے عوام کی مدد کے لئے کنٹرول روم ٹیلیفون نمبر 0612-19810 ، 2294204 اور 2294205 جاری کیا ہے۔ دریں اثنا وزیر اعلی نتیش کمار نے بارش کی خوفناک صورتحال کے پیش نظر ڈیزاسٹر مینجمنٹ ڈیپارٹمنٹ کا ہنگامی اجلاس طلب کیا ہے۔

Nitish Kumar

مسلسل ہونے والی بھاری بارش نے سیلاب کی زد میں آنے والے بھاگلپور، مونگیر ، چھپرا ، دربھنگہ ، مدھوبنی سمیت متعدد اضلاع میں صورتحال کو مزید خراب کردیا ہے۔ ان اضلاع کے سیکڑوں گاؤں زیر آب ہوگئے ہیں ۔ سیلاب کا پانی بلاک اور تھانہ میں بھی داخل ہوگیا ہے ۔ شدید بارش کی وجہ سے گنگا سمیت متعدد ندیوں کے پانی کی سطح میں مزید اضافہ ہوگیا ہے۔ اس بارش نے کل سے شروع ہونے والی نوراترا میں ریاست بھر میں درگا کی بننے والی مورتی اور پنڈالوں کے لئے بھی مشکلات پیدا کردی ہیں ۔ جگہ جگہ پر پہلے ہی بننے والے پوجا پنڈال میں پانی داخل ہوگیا ہے۔

Loading...