ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

دہلی این سی آر میں 4.6 شدت کا زلزلہ ، روہتک میں زمین کی سطح سے صرف پانچ کلو میٹر گہرائی میں تھا مرکز

لاک ڈاون کے دوران 50 دنوں کے دوران چار مرتبہ دہلی زلزلہ کے جھٹکوں سے ہل چکی ہے ۔ حالانکہ ریکٹر پیما پر اس کی شدت کم تھی ، اس کے باوجود دہلی کے کچھ علاقوں میں اس کا خطرہ ابھی ٹلا نہیں ہے ۔

  • Share this:
دہلی این سی آر میں 4.6 شدت کا زلزلہ ، روہتک میں زمین کی سطح سے صرف پانچ کلو میٹر گہرائی میں تھا مرکز
دہلی این سی آر میں 4.6 شدت کا زلزلہ ، روہتک میں زمین کی سطح سے صرف پانچ کلو میٹر گہرائی میں تھا مرکز

قومی دارالحکومت خطہ میں آج درمیانی شدت کے زلزلہ کے جھٹکے محسوس کئے گئے ۔  قومی زلزلہ مرکز کے مطابق ریختر پیمانہ پر اس کی شدت 4.6 درج کی گئی ۔ زلزلہ کے جھٹکے رات نو بجکر آٹھ منٹ پر محسوس کئے گئے ۔ زلزلہ کا مرکز ہریانہ کے روہتک سے 14 کلومیٹر جنوب مشرق میں زمین کی سطح سے پانچ کلومیٹر گہرائی میں تھا ۔ زلزلہ 28.8 ڈگری طول البلد اور عرض البلد 76.7 ڈگری پر درج کیا گیا ۔


اس سے پہلے لاک ڈاون کے دوران 50 دنوں کے دوران چار مرتبہ دہلی زلزلہ کے جھٹکوں سے ہل چکی ہے ۔ حالانکہ ریکٹر پیما پر اس کی شدت کم تھی ، اس کے باوجود دہلی کے کچھ علاقوں میں اس کا خطرہ ابھی ٹلا نہیں ہے ، ماہرین بتاتے ہیں کہ ابھی دہلی کو مزید زلزلے کے جھٹکے برداشت کرنے پڑیں گے ۔ لیتھوسفیئر کی پلیٹس آپس میں رگڑا کھارہی ہیں ۔


ملک کے کئی حصوں میں آندھی، ہلکی بارش


فائل فوٹو ۔ اے این آئی ۔
فائل فوٹو ۔ اے این آئی ۔


ادھرملک کے شمال مغربی اور وسطی حصوں میں مغربی خلل کی وجہ سے جمعہ کو کئی علاقوں میں آندھی چلی اور ہلکی بارش ہونے سے لوگو ں کو گرمی سے راحت ملی ۔ راجدھانی دہلی اور آسا پاس کے علاقوں میں بھی آندھی اور تیز ہوائیں چلیں نیز ہلکی بارش ہوئی ۔ دہلی میں زیادہ سے زیادہ درجہ حرات 40.3 ڈگری سیلسیس اور کم از کم درجہ حرارت 22.6 ڈگری سیلسیس درج کیا گیا۔ ہوا کا کوالٹی انڈیکس 112مائیکرو گرام فی کیوبک میٹر ’اطمینان بخش‘ زمرہ میں رہا۔

محکمہ موسمیات کے مطابق جموں و کشمیر، لداخ ، گلگت ۔ بلتستان اور مظفر آباد ، ہماچل پردیش اور اتراکھنڈ ، مغربی ہمالیائی علاقوں میں گرج کے ساتھ بارش ہونے کے آثار ہے اور تین دنوں جمعرات سے شمال مغربی میدانی علاقوں میں بارش ہورہی ہے ۔ اسی عرصہ کے دوران مدھیہ پردیش کے مختلف حصوں میں بارش یا گرج کے ساتھ چھینٹے پڑنے کے آثار ہیں ۔

نیوز ایجنسی یو این آئی کے ان پٹ کے ساتھ ۔ 
First published: May 29, 2020 11:33 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading