اپنا ضلع منتخب کریں۔

    مغری بنگال انتخابات : چوتھے مرحلے میں 78 فیصد پولنگ ، اپوزیشن جماعتوں کا اظہار اطمینان

    کلکتہ : مغربی بنگال میں چوتھے مرحلے میں 49 سیٹوں پر آج پرامن پولنگ ہوئی اور شام 6بجے تک 78فیصد افرادنے اپنے حق رائے دیہی کا استعمال کیا ۔

    کلکتہ : مغربی بنگال میں چوتھے مرحلے میں 49 سیٹوں پر آج پرامن پولنگ ہوئی اور شام 6بجے تک 78فیصد افرادنے اپنے حق رائے دیہی کا استعمال کیا ۔

    کلکتہ : مغربی بنگال میں چوتھے مرحلے میں 49 سیٹوں پر آج پرامن پولنگ ہوئی اور شام 6بجے تک 78فیصد افرادنے اپنے حق رائے دیہی کا استعمال کیا ۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      کلکتہ : مغربی بنگال میں چوتھے مرحلے میں 49سیٹوں پر آج پرامن پولنگ ہوئی اور شام 6بجے تک 78فیصد افرادنے اپنے حق رائے دیہی کا استعمال کیا ۔ تشدد کے اکا دکا واقعات کے علاوہ تمام حلقوں میں پرامن پولنگ ہوئی ہے ۔ اپوزیشن جماعتوں نے بھی الیکشن کمیشن کے انتظامات اور پرامن پولنگ پر اطمینان کا اظہار کیا ہے ۔
      شمالی 24پرگنہ کے بیجپور اسمبلی حلقے میں سی پی ایم کی حمایت کرنے والے خاندان کے ایک تین سالہ بچے کی مبینہ طور پر ترنمول کانگریس کے حامیوں کے ذریعہ پٹائی کا معاملہ سامنے آیا ہے ۔ تین سالہ ٹوٹو سمجاپتی کے ساتھ اس وقت غنڈوں نے بدسلوکی جب اس کے والدین ووٹ ڈالنے کیلئے جارہے تھے۔جب کہ اس والدین نے کہا کہ وہ بہرصورت اپنے حق رائے دہی کا استعمال کریں گے ۔بچے نے میڈیا اہلکاروں کو بتایا کہ ا س کے ہاتھ کو موڑدیا گیا تھا ۔
      خیال رہے کہ یہاں سے ترنمول کانگریس کے سینئر لیڈر مکل رائے کے بیٹے سبھرانگشو رائے ترنمول کانگریس کے ٹکٹ پر انتخاب لڑرہے ہیں ۔وہ یہاں کے موجودہ ممبر اسمبلی ہیں ۔ یہاں سے سی پی ایم کے رابن مکھرجی انتخاب لڑرہے ہیں ۔؂ایک دوسرے معاملے میں ایک طالب علم کوووٹ دینے پر مارپیٹ کی گئی ہے ۔طالب علم نے الزام عاید کیا کہ ترنمول کانگریس کے غنڈوں نے ان کے ساتھ مارپیٹ کی ہے ۔دمدم شمال سے سی پی ایم کے ٹکٹ پر انتخاب لڑرہے ہیں تنمے بھٹاچاریہ کے ساتھ بھی مار پیٹ کی ہے اور کی گاڑی کو توڑ دیا گیا ہے وہ اس حملے میں زخمی ہوگئے ہیں ۔
      یہاں سے ریاستی وزیر چندریما بھٹا چاریہ انتخاب لڑرہی ہیں ۔انہوں نے علاج کرانے سے انکار کردیتے ہوئے کہا ہے کہ جب تک ملزمین کی گرفتاری نہیں ہوجاتی ہے وہ اس وقت علاج نہیں کرائیں گے ۔ ِٖشمالی ہوڑہ سے بی جے پی امیدوار سابق اداکار روپا گنگولی کے خلاف پولنگ بوتھ پر ترنمول کانگریس کے ورکروں کے ساتھ ہاتھا پائی کرنے پر ایف آئی آر درج کیا گیا ہے ۔اداکاری سے سیاست میں آنے والی روپا گنگولی اپنے حلقہ انتخاب جہاں آج چوتھے مرحلے کی پولنگ ہورہی ہے وہاں کا دورہ کررہی تھی ۔
      ایک پوتھ پر انہیں بحث مباحثہ کرنے کے بعد ترنمول کانگریس کے ورکروں کو دھکا دیتے ہوئے دکھلایا گیا ہے ۔انہوں نے آبزرور سے پولنگ بوتھ کو جام کرنے کی شکایت کی تھی ۔انہوں نے الزام عاید کیا کہ کئی بوتھوں کو جام کردیا گیا ہے ۔ سی پی ایم کے ریاستی سیکریٹری سوریہ کانت مشرا نے آج کہا ہے کہ یہ حکمراں جماعت نے عوام کو چیلنج کیا تھا مگر عوام نے بے خطر ووٹ ڈالا ہے۔
      پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے سوریہ کانت مشرا نے کہا کہ حکمراں جماعت ے لوگوں کو ووٹ نہیں ڈالنے دینے کیلئے چیلنج کیا تھا ۔لوگوں نے اس چیلنج کو قبول کیا اور اس کا انہوں نے جواب دیا ہے ۔ سوریہ کانت مشرا جو سی پی ایم اور کانگریس کی مشترکہ مہم کی قیادت کررہے ہیں نے کہا کہ اس مرحلے میں مرکزی سیکورٹی فورسیس کا رول دیگر مرحلوں کے مقابلے بہتر تھا۔عوام نے جوش و حروش کے ساتھ ووٹ دیا ہے ۔مشرا نے کہا کہ تاہم مختلف بوتھوں اور سی پی ایم کے امیدواروں پر حکمراں جماعت کے ورکروں نے مارپیٹ کی ہے ۔
      اس درمیان ساڑھے تین سالہ بچے کی پٹائی کا بھی معاملہ سامنے آیا ہے۔ترنمول کانگریس کے ورکروں نے اس بچے کی پٹائی اس لیے کیا کہ اس کے والد ہمارے حامی ہیں ۔اس معاملے کے ملزمین کے خلاف کارروائی ضروری ہے۔
      First published: