اپنا ضلع منتخب کریں۔

    مغربی بنگال اسمبلی الیکشن : دوسرے مرحلے میں 80 فیصد ووٹنگ

    کولکاتہ :  مغربی بنگال میں اسمبلی انتخابات کے دوسرے مرحلے میں تشدد کے ایکا د وکا واقعات کے درمیان آج 56 سیٹوں پر تقریبا 80 فیصد پولنگ ہوئی۔

    کولکاتہ : مغربی بنگال میں اسمبلی انتخابات کے دوسرے مرحلے میں تشدد کے ایکا د وکا واقعات کے درمیان آج 56 سیٹوں پر تقریبا 80 فیصد پولنگ ہوئی۔

    کولکاتہ : مغربی بنگال میں اسمبلی انتخابات کے دوسرے مرحلے میں تشدد کے ایکا د وکا واقعات کے درمیان آج 56 سیٹوں پر تقریبا 80 فیصد پولنگ ہوئی۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      کولکاتہ :  مغربی بنگال میں اسمبلی انتخابات کے دوسرے مرحلے میں تشدد کے ایکا د وکا واقعات کے درمیان آج 56 سیٹوں پر تقریبا 80 فیصد پولنگ ہوئی۔  الیکٹورل آفیسر نے بتایا کہ ووٹنگ شام چھ بجے ختم ہوئي۔ الیکشن کمیشن کے دفتر نے بتایا کہ شام تین بجے تک اگرچہ 70.82 پولنگ ہوئی تھی۔ دوسرے مرحلے میں سات اضلاع کی 56 سیٹوں پر ووٹ ڈالے گئے۔
      الیکشن دفتر نے بتایا کہ تمام اطلاعات دستیاب ہونے کے بعد پولنگ تقریبا 80 فیصد پہنچنے کی امید ہے۔ حکام نے بتایا کہ تشدد کے چند ایک واقعات کو چھوڑ کر پولنگ مجموعی طور پر پرامن طریقے سے انجام پائی۔ ریاست کے مختلف مقامات پر جھڑپوں میں کم از کم 13 افراد زخمی ہو گئے۔
      الیکٹورل آفیسر نے بتایا کہ الیکشن کمیشن ترنمول کانگریس کی بیربھوم ضلع یونٹ کے صدر انوبرت منڈل کے خلاف ووٹنگ کے دوران پارٹی کی لوگو والی شرٹ پہننے کے لئے سخت کارروائی کر سکتا ہے۔ بی جے پی لیڈر لاکٹ چٹرجی نے الزام لگایا کہ ميوریشور میں فرضی ووٹنگ کرنے کی اجازت دی گئی۔ الیکشن کمیشن کو شام تین بجے تک ریاست کے مختلف حصوں سے 939 شکایتیں ملیں۔
      بیربھوم ضلع میں ریکارڈ 73.59، علی پور دوار میں 73.65 فیصد، جلپائي گڑي میں 67.93، دارجلنگ میں سب سے کم 63.73، شمالی دیناج پور 70.30، جنوبی دیناج پور میں 74.37 اور مالدہ میں 68.67 پولنگ ہوئی۔ دریں اثناء، بھارتیہ جنتا پارٹی نے بیربھوم ضلع کی تمام 11 سیٹوں پر دوبارہ پولنگ کرانے کا مطالبہ کیا ہے۔ پولس نے بتایا کہ بیربھوم ضلع کے دمروت گاؤں میں ترنمول کانگریس اور بی جے پی کارکنوں کے درمیان جھڑپ میں آٹھ افراد زخمی ہو ئے ہیں۔
      First published: