ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

جھارکھنڈ کے وزیر پارلیمانی امور عالمگیر عالم سے مومن کانفرنس کے ایک وفد نے کی ملاقات

رانچی ضلع مومن کانفرنس کا ایک نمائندہ وفد جھارکھنڈ کے وزیر پارلیمانی امور عالمگیر عالم سے ملاقات کی ۔ ضلع صدر شمیم اختر آزاد کی قیادت میں وفد نے وزیر عالمگیر عالم سے ان کے رہائشی دفتر میں ملاقات کے دوران مسلم معاشرے کے مختلف مسائل اور مطالبات سے متعلق 17 نکاتی میمورنڈم پیش کیا۔

  • Share this:
جھارکھنڈ کے وزیر پارلیمانی امور عالمگیر عالم سے مومن کانفرنس کے ایک وفد نے کی ملاقات
رانچی ضلع مومن کانفرنس کا ایک نمائندہ وفد جھارکھنڈ کے وزیر پارلیمانی امور عالمگیر عالم سے ملاقات کی

رانچی ضلع مومن کانفرنس کا ایک نمائندہ وفد جھارکھنڈ کے وزیر پارلیمانی امور عالمگیر عالم سے ملاقات کی ۔ ضلع صدر شمیم اختر آزاد کی قیادت میں وفد نے وزیر عالمگیر عالم سے ان کے رہائشی دفتر میں ملاقات کے دوران مسلم معاشرے کے مختلف مسائل اور مطالبات سے متعلق 17 نکاتی میمورنڈم پیش کیا۔ وفد نے وزیر عالمگیر عالم کو مسلم معاشرے کے مسائل سے واقف کرایا اور مطالبہ کیا کہ جھارکھنڈ میں سچر کمیٹی کی سفارشات پر عمل درآمد کیا جائے ، ماب لنچنگ کے خلاف سخت قانون بنائی جائے ساتھ ہی ماب لنچنگ کے شکار لوگوں کے اہل خانہ کو 25 لاکھ روپیہ بطور معاوضہ دیا جائے ساتھ ہی مسلم مویشی پروروں کے مفادات کے تحفظ کے لئے مناسب انتظامات کیے جائیں۔ وفد نے مسلمانوں کی آبادی کی بنیاد پر معاشی ، تعلیمی اور سیاسی شرکت کو یقینی بنائے جانے کا مطالبہ کیا ساتھ ہی مومنوں کو پسماندہ طبقے کے تحت 10 فیصد ریزرویشن کا فائدہ دیئے جانے کا بھی مطالبہ کیا ۔


اس کے‌ علاوہ جھارکھنڈ میں بنکر ترقیات کمیشن کا قیام ، پسماندہ طبقہ بی سی۔1 اور بی سی۔ 2 کے مسلم برادری کو سی این ٹی اور ایس پی ٹی ایکٹ کے دائرے میں لائے جانے کا بھی مطالبہ کیا گیا ۔ وفد نے وزیر موصوف سے دارالحکومت رانچی کے چوک چوراہوں کا نام جھارکھنڈ کے شہداء کے نام پر رکھے جانے کے ساتھ ہی مجاہد آزادی شہید شیخ بھکاری اور ٹکیت امراؤ سنگھ کے شہید استھل "چٹوپالو"کو سیاحتی مقام کے طور پر فروغ دینے ، جونہا واٹر فال کا نام شہید شیخ بھکاری فال اور دشم واٹر فال کا نام ٹکیت امراؤ سنگھ فال رکھے جانے کا مطالبہ کیا۔


مومن کانفرنس نے اردو زبان کی ترقی اور تحفظ کیلئے اردو اساتذہ کی خصوصی تقرری مہم شروع کرنے اور تمام سرکاری اور امداد یافتہ پرائمری اور ہائی اسکولوں میں اردو ٹیچروں کی بحالی کئے جانے کا مطالبہ کیا ۔ اسکے علاوہ بہار کی طرز پر جھارکھنڈ میں بھی مدرسہ بورڈ ، اقلیتی کمیشن ، اقلیتی مالیاتی ترقیات کارپوریشن ، پسماندہ طبقات کمیشن ، حج کمیٹی ، 15 نکاتی اور 20 نکاسی سیل کی تشکیل نو کرتے ہوئے مومنوں کی شرکت کو یقینی بنائے جانے ساتھ ہی تمام سرکاری دفاتر کے نیم پلیٹ اردو میں لگانے کا مطالبہ کیا۔


وزیر عالمگیر عالم نے وفد کی باتوں کو توجہ سے سننے کے بعد کہا کہ ہماری حکومت تمام معاشرے کی ترقی و فروغ کے لئے پرعزم ہے ۔انہوں نے وفد کے مطالبات پر سنجیدگی سے غور کرتے ہوئے مثبت اقدامات اٹھانے کا یقین دلایا۔وفد میں مومن کانفرنس رانچی ضلع کے پرنسپل جنرل سکریٹری مختار انصاری ، جنرل سکریٹری ظفر امام انصاری ، آل انڈیا مومن کانفرنس کے سکریٹری ذاکر حسین ، صغیر انصاری ، محمد اورنگزیب ، اشفاق انصاری ، مولانا انوار الحق ، شجاع الدین انصاری ، بلال انصاری وغیرہ شامل تھے۔
Published by: sana Naeem
First published: Dec 06, 2020 03:53 PM IST