உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    دردناک واقعہ: ماں کے بعد بیٹی بھی ہار گئی زندگی کی جنگ، گھر میں گھس کر شخص نے کی تھی یہ شرمناک حرکت

    شہر کی اس بیٹی کی موت سے غم کا موحول ہے

    شہر کی اس بیٹی کی موت سے غم کا موحول ہے

    مولانا نے کبھی خواب میں بھی نہیں سوچا تھا کہ بیٹی کے لے آئے شادی کے رشتے کو ٹھکرانا ان کے لئے اتنا مہنگا پڑے گا جبکہ شخص نے تھانے میں خود سپردگی کردی ہے۔ اس حادثے سے پورے شہر میں غم کا ماحول ہے لوگوں نے آج پرنم آنکھوں سے جنازے کو کاندھا دیا۔

    • Share this:
    کولکاتہ: شہر کے اقبال پور علاقے میں دن کے اجالے میں ایک شخص نے مولانا کے مکان میں گھس کر گھر میں موجود ان کی اہلیہ اور دو بیٹیوں پر جان لیوا حملہ کردیا تھا۔ گزشتہ جمعہ کی نماز کے لئے شہر کے بیشتر علاقوں میں سناٹا رہتا ہے، لوگ نماز کی ادائیگی کے لئے مسجد میں جاتے ہیں اسی کا فاٸدہ اٹھا کر ملزم نے آج یعنی جمعے کے دن کا فاٸدہ اٹھایا اور اقبال پور علاقے کے سدھیر باسو روڈ میں واقع ایک عمارت کی چوتھی منزل پر مولانا ہارون رشید کے فلیٹ میں داخل ہوکر تیز دھار ہتھیار سے گھر میں موجود خواتین پر حملہ کیا تھا۔ مولانا اس وقت مسجد میں تھے اور ان کے دونوں بیٹے بھی گھر میں نہیں تھے۔ اس وقت مولانا کی اہلیہ اور دو بیٹیاں گھر پر تھیں جو اس جان لیوا حملے کے بعد زندگی و موت کی جنگ لڑ رہی تھیں۔
    یہ بیٹی مولانا کے گھر میں سب سے چھوٹی تھی۔ گھر والے اسے پیار سے بابو پکارا کرتے تھے۔ لیکن گھر والوں کی یہ لاڈلی ماں باپ کی دلاری تیرہ سالہ معصوم طیبہ اس دنیا کو الوداع کہہ چکی ہے۔ کولکاتہ کے اقبال پور میں گزشتہ دنوں ہوئے دردناک واقعے میں والدہ کے بعد چھوٹی بیٹی بھی دم توڑ چکی ہے۔ بیٹی کے لیے آئے رشتے کو قبول نہ کرنے کی وجہ سے شہر کے ٹیپو سلطان مسجد کے نائب امام مولانا ہارون رشید کی فیملی پر ڈھایا گیا تھا۔

    کولکاتا میں واقع ٹیپو سلطان مسجد کے نائب امام مولانا ہارون رشید نے اپنی بیٹی کی شادی کیلئے قریبی رشتے دار سے آئے رشتے سے انکار کردیا تھا۔ لیکن رشتہ ٹھکرانا لڑکے والوں پر اتنا ناگوار گزرا کے لڑکے نے امام کی فیملی کو سبق سکھانے کا فیصلہ کرلیا اور انتقام اتنا شدید تھا کہ امام ہارون رشید اور ان کی فیملی آج بکھر چکی ہے۔ یہ بھی پڑھیں: بیٹی کی شادی کیلئے آئے رشتے سے والدین نے کیا انکار تو شخص نے گھر میں گھس کر ماں۔بیٹی کے ساتھ کی وحشیانہ حرکت، ہر کوئی رہ گیا حیران


    گزشتہ جمعہ کو دن کے اجالے مولانا ہارون رشید کے گھر میں داخل ہوکر جنونی شخص نے گھر میں موجود ان کی اہلیہ اور دو بیٹیوں پر جان لیوا حملہ کردیا۔ حملہ اتنا شدید تھا اور اس طریقے سے انجام دیا گیا کہ پڑوسیوں کو اس کی بھنک بھی نہ ملی۔ بہت دیر کے بعد پڑوسیوں کا احساس ہوا کہ اس گھر میں کچھ گڑ بڑ ہے دروازہ کھولا گیا تو ہولناک منظر سامنے تھا مولانا کی دونوں بیٹیاں اور ان کی اہلیہ خون میں لت پت پڑی تھیں۔ تینوں کو اسپتال لے جایا گیا اہلیہ کی اسی دن موٹ ہوگئی جبکہ آج چھوٹی بیٹی بھی زندگی کی جنگ ہار گئی۔ مولانا کا ہنستا مسکراتا کنبہ بکھر چکا ہے جبکہ تیسری بیٹی اسپتال میں زیر علاج ہے۔ مولانا نے کبھی خواب میں بھی نہیں سوچا تھا کہ بیٹی کے لے آئے شادی کے رشتے کو ٹھکرانا ان کے لئے اتنا مہنگا پڑے گا جبکہ شخص نے تھانے میں خود سپردگی کردی ہے۔ اس حادثے سے پورے شہر میں غم کا ماحول ہے لوگوں نے آج پرنم آنکھوں سے جنازے کو کاندھا دیا۔
    Published by:Sana Naeem
    First published: