ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

کورونا وائرس کے باعث شادیوں کا رنگ پڑا پھیکا ، بینڈ باجے شادیوں سے ہوئے غائب

بینڈ کاروبار سے وابستہ محمد اکرم نے بتایا کہ ان کا کاروبار بالکل ٹھپ ہے اور یہ ایک ایسا کاروبار جس کے بارے میں بات کرنے و سوچنے والا بھی کوئی نہیں ہے ۔

  • Share this:
کورونا وائرس کے باعث شادیوں کا رنگ پڑا پھیکا ، بینڈ باجے شادیوں سے ہوئے غائب
کورونا وائرس کے باعث شادیوں کا رنگ پڑا پھیکا ، بینڈ باجے شادیوں سے ہوئے غاٸب

کورونا وائرس کے بڑھتے قہر اور اس سے بچاو کیلئے ملک بھر میں لاگو کئے گئے طویل لاک ڈاون نے لوگوں کو معاشی طور پر کمزور کردیا ہے ۔ کولکاتہ کا بینڈ بزنس بھی پوری طرح برباد ہوگیا ہے ۔ شادی بیاہ و دیگر سیاسی و سماجی تقریبات میں  بینڈ باجے کے ساتھ دھوم دھام سے شروع ہونے والی تقریبات کی روایت ان دنوں بالکل ختم ہوگئی اور اس  پیشہ سے وابستہ لوگ معاشی بدحالی کے شکار ہیں ۔


ان لاک کے ساتھ لاک ڈاون کے دوران جہاں بازار اور دفاتر میں کام کاج کے ساتھ سماجی تقریبات کی بھی اجازت ملی ہے وہیں بنگال میں شادی کے لئے پچاس لوگوں کی اجازت دی گئی ہے ۔ لیکن کسی بھی طرح کی دھوم دھام کی اجازت نہیں ہے ۔ یہی وجہ ہے کے شادیاں تو ہورہی ہیں ، لیکن سادگی سے ، جس کی وجہ سے بینڈ باجے کا کاروبار جو شادی بیاہ کی رونق سمجھے جاتے تھے ، بالکل ٹھپ پڑا ہے ۔ لوگ بے روزگار ہوگئے ہیں ۔


بینڈ کاروبار سے وابستہ محمد اکرم نے بتایا کہ ان کا کاروبار بالکل ٹھپ ہے اور یہ ایک ایسا کاروبار جس کے بارے میں بات کرنے و سوچنے والا  بھی کوئی نہیں ہے ۔ ان کے مطابق لاک ڈان کے بعد زندگی کسمپرسی میں گزررہی ہے ۔ کاروبار کھل رہے ہیں ، لیکن وہ لوگ بھی ایک کاروبار سے جڑے ہیں ، یہ سمجھنے والا کوئی نہیں ہے ۔


کولکاتہ کے سینٹرل اوینیو میں بینڈ باجا کا پرانا کاروبار ہے ، بڑی تعداد میں لوگ اس سے وابستہ ہیں ، ان لاک کے ساتھ یہاں بھی دکانیں کھلی ہیں ، لیکن ان کے پاس کوئی کام نہیں ہے ۔ یہ لوگ حکومت سے مدد کی اپیل کررہے ہیں ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Jul 07, 2020 08:15 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading