ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

Bihar Assembly Elections 2020 : پہلے مرحلہ کی 71 سیٹوں پر 53.54 فیصد ووٹنگ

وزیر اعظم نریندر مودی ، راہل گاندھی ، نتیش کمار اور تیجسوی یادو سمیت کئی بڑے لیڈروں نے زیادہ سے زیادہ ووٹ دینے کی اپیل کی ہے ۔ پہلے مرحلہ میں 71 سیٹوں پر کل 1066 امیدوار میدان میں ہیں ، جن میں 114 خواتین امیدوار شامل ہیں ۔

  • Share this:
Bihar Assembly Elections 2020 : پہلے مرحلہ کی 71 سیٹوں پر 53.54 فیصد ووٹنگ
Bihar Assembly Elections 2020 : پہلے مرحلہ کی 71 سیٹوں پر ووٹنگ جاری ، صبح 10 بجے تک 7.35 فیصد ووٹنگ

بہار میں سخت حفاظتی انتظامات کے مابین اسمبلی کے پہلے مرحلہ کے لئے آج پرامن طریقے سے ووٹنگ ختم ہوگئی جس میں 53.54 فیصد ووٹروں نے 1066 امیدواروں کی قسمت کا فیصلہ الیکٹرانک ووٹنگ مشین ( ای وی ایم ) میں قید کر دیا ۔ ریاستی الیکشن دفتر کے مطابق بدھ کو 71 اسمبلی سیٹ کیلئے 31380 پولنگ مراکز پر صبح سات بجے سے ووٹنگ شروع ہوئی شام چھ بجے ختم ہوچکی ہے ۔ اس دوران 53.54 فیصد رائے دہندوں نے اپنے حق رائے دیہی کا استعمال کیا ۔ حالانکہ ابھی بھی کچھ پولنگ مراکز پر ووٹنگ چل رہی ہے اور کچھ مقامات سے آخری رپورٹ کا انتظار ہے ۔ شام چھ بجے تک جموئی ضلع میں سب سے زیادہ قریب 58 فیصد ووٹنگ ہوئی جبکہ مونگیر ضلع میں سب سے کم لگ بھگ 44 فیصد ووٹنگ ہوئی ۔


دریں اثنا بڑہرا سے راشٹریہ جنتادل ( آرجے ڈی ) امیدوار اور رخصت پذیر رکن اسمبلی سروج یادو نے آرہ کے پولنگ مرکز 115 پر اپنے اوپر حملہ ہونے کا دعویٰ کیا۔ انہوں نے کہاکہ کسی طرح بھاگ کر انہوںنے اپنی جان بچائی ہے ۔ حالانکہ انتظامیہ نے اس کی تصدیق نہیںکی ہے ۔ بتایاجارہاہے کہ سروج کی پہلے لوگوں نے مخالفت کی ۔ اس کے بعد بھیڑ سے کچھ لوگوں نے پتھراﺅ شروع کر دیا۔ اسی طرح بھوجپور ضلع کے شاہ پور اسمبلی حلقہ کے سہجولی گاﺅں میں آرجے ڈی امیدوار راہل تیواری اور آزاد امیدوار بٹیشور یادو کے حامیوں کے مابین بوتھ پر قبضے کو لیکر پرتشدد جھڑپ ہوئی جس میں دونوں فریق کے قریب 10 افراد زخی ہیں۔ زخمیوں میں خواتین بھی شامل ہیں۔


پہلے مرحلہ میں آر جے ڈی کے 42 تو جے ڈی یو کے 35 امیدواروں کے علاوہ بی جے پی کے 29 ، کانگریس کے 21 ، لیفٹ پارٹیوں کے آٹھ ، ہندوستانی عوامی مورچہ کے چھ اور وکاس شیل انسان پارٹی کے ایک امیدوار انتخابی میدان میں ہیں ۔ علاوہ ازیں ایل جے پی کے بھی 42 امیدواروں کی قسمت کا فیصلہ اس مرحلہ کی ووٹنگ میں طے ہوگا ۔


آج جن وزرا کی قسمت ای وی ایم میں بند ہوگی ، ان میں بہار کے وزیر زراعت اور بی جے پی لیڈر ڈٓاکٹر پریم کمار ، جے ڈی یو لیڈر اور بہار کے وزیر تعلیم کرشن نندن ورما ، بی جے پی لے لیڈر اور وزیر وجے کمار سنہا ، برج کشور بند، جے ڈی یو لیڈر سنتوش کمار نرالا ، جے ڈی یو لیڈر سیلیش کمار ، جے کمار سنگھ اور رام نارائن منڈل کے نام شامل ہیں ۔

بہار میں کل 7.29 کروڑ ووٹرس ہیں ۔ پہلے مرحلہ کی جن 71 سیٹوں پر آج ووٹنگ ہورہی ہے ، وہاں 2.14 کروڑ سے زیادہ ووٹرس ہیں ۔

 

بتادیں کہ بہار کے انتخابی دنگل میں این ڈی اے اتحاد کا مہاگٹھ بندھن سے براہ راست مقابلہ ہے ۔ این ڈی اے میں بی جے پی ، جے ڈی یو ، ہندوستانی عوام مورچہ ، وکاس شیل انسان پارٹی شامل ہیں ۔ وہیں مہاگٹھ بندھن میں راشٹریہ جنتادل ، کانگریس اور لیفٹ پارٹیاں شامل ہیں ۔ مرکز میں این ڈی اے کی ساتھی لوک جن شکتی پارٹی بہار میں الگ ہوکر الیکشن لڑ رہی ہے ۔

یو این آئی کے ان پٹ کے ساتھ ۔ 
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Oct 28, 2020 07:36 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading